Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 05:13 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

امریکہ اور چین کی پہل قابل تقلید:جاوڈیکر

 

جاوڈیکر نے طلبہ کو بجلی بچانے کی نصیحت کی

نئی دہلی،14نومبر(یو این ائی) ماحولیات ، جنگلات اور ا ب و ہوا تبدیلی کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے دنیا میں گرین ہاؤس گیسوں کے سب سے زیادہ استعمال کرنے والے دو ملکوں چین اور امریکہ کے درمیان اس کے استعمال میں کٹوتی کے سلسلے میں ہوئے معاہدے کا خیر مقدم کیا ہے۔ مسٹر جاوڈیکر نے ا ج یہاں وزارت کے ہیڈ کوارٹر اندرا پریاورن بھون میں نامہ نگاروں سے کہا کہ گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج میں کٹوتی کے لئے چین اور امریکہ میں جو سمجھوتہ ہوا ہے وہ قابل تقلید عمل ہے اور ہم اس کا خیر مقدم کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ امریکہ نے فوری طور سے اس کے اخراج میں کمی کاارادہ کرنے اعلان کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کیوٹو پروٹوکول کا حصہ نہیں تھا اور وہ اس کے شرطوں سے ا زاد تھا اس کے باوجود اگر امریکہ اپنی خواہش سے گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج میں کٹوتی کے راستے پر چلتا ہے تو یہ بہت اچھی پہل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب دیکھنا یہ ہے کہ وہ اپنے اس اعلان پر کس حد تک عمل کرتا ہے۔مسٹر جاوڈیکر نے کہا کہ جہاں تک چین کا سوال ہے تو اس نے کہا ہے کہ وہ 2030تک اس کے اخراج میں کمی نہیں کرسکتا لیکن اس کے بعد وہ اس کے اخراج میں کمی کر دے گا۔انہوں نے کہا کہ جہاں تک ہندوستان کا سوال ہے تو ہمارے یہاں غریبی ہیاور ایک تہائی افراد اب بھی بجلی سے محروم ہیں۔ ہم بھی اس کا جائزہ لیں گے کہ ہمارے یہاں سب سے زیادہ اخراج کب تک ہو سکتا ہے پھر ہم بھی اس میں کٹوتی کرنے کی پوری کوشش کریں گے۔غور طلب ہے کہ چین اور امریکہ نے حال ہی میں بیجنگ میں ایپک تجارتی چوٹی کانفرنس کے اختتام کے بعد ماحولیاتی تبدیلی کے معاہدے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے مطابق امریکہ 2025تک اپنے کاربن کے اخراج میں 26سے 28فیصد تک کٹوتی کرے گا جبکہ چین میں گرین ہاؤس گیسوں کا اخراج 2030تک بڑھے گا۔
دوسری جانب ماحولیات ، جنگلات اور ا ب و ہوا تبدیلی کے وزیر پرکاش جاوڈیکر نے یو م اطفال کے موقع پر ا ج یہاں ٹیچر کے رول میں نظر ا ئے اور انہوں نے طلبہ کو بجلی بچانے کا سبق دیا۔مسٹر جاوڈیکر نے وزارت کے ہیڈ کوارٹر اندرا پریاورن بھون دیکھنے ا ئے چوگلے پبلک اسکول اور یوجنا و واستو کلا ودیالیہ کے طلبہ کو ماحولیات کا تحفظ کرنے اور بجلی بچانے کا سبق دیا۔ انہوں نے کہا کہ چھوٹی چھوٹی پہل ہم توانائی بچا سکتے ہیں۔ اسے ہمیں اپنے عادت میں شامل کرنے کی ضرورت ہے۔ ہمیں قدرت کے ساتھ رہنے اور اس کا تحفظ کرنے کی عادت ڈالنی چاہئے۔بعد میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے مسٹر جاوڈیکر نے کہا کہ توانائی کے استعمال سے کاربن ڈائی ا کسائیڈ کا اخراج ہوتا ہے جس سے زمین کے درجہ حرارت میں اضافہ ہو رہا ہے اور ماحولیات میں بڑی تیزی سے تبدیلی ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام لوگوں اور نئی نسل کو اس سلسلے میں بیدار کر نے کی ازحد ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے ملک کے اولین وزیر اعظم پنڈت جواہر لعل نہرو کی یوم پیدائش اور یو م اطفال پر یہ پہل شروع کی ہے۔ اس کے تحت ہر دن مختلف اسکولوں کے 200300طلبہ یہاں ا ئیں گے۔ ہم طلبہ اور عام لوگوں کو یہ عمارت دکھائیں گے تاکہ لوگوں میں بجلی اور پانی کی بچت اور ماحولیات کی حفاظت کے تئیں بیداری پیدا کی جا سکے۔اس موقع پر وزارت ماحولیات کے سکریٹری اشوک لواسہ نے کہا کہ اس عمارت میں قدرت کی تمام چیزوں کو رکھا گیا ہے ۔ خاص کر اس میں ہوا اور پانی کی بچت پر زور دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ہوا اور پانی کی اہمیت کا پتہ نہیں ہے اور ہم اسے برباد کر رہے ہیں۔ اس عمارت میں ماحولیات کے تحفظ پر خاص خیال رکھا گیا ہے اور یہ ایک قابل تقلید کوشش ہے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment