Today: Thursday, November, 23, 2017 Last Update: 03:48 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

Breaking News

لبنان کے لیے روسی مسافر طیاروں کا روٹ تبدیل

  لبنان،22نومبر(ایجنسیاں)لبنان میں غیرملکی پروازوں کے راستوں کی تبدیلی سے متعلق پیدا ہونے والے تنازعہ مزید پیچیدہ ہوتا جا رہا ہے۔ خاص طور پر جب سے یہ اطلاعات آئی ہیں کی لبنان کے بعض ہوائی اڈوں کی طرف آنے والی پروازیں مکمل طور پر بند ہونے والی ہیں، لبنانی حکام نے معاملے کو سلجھانے کی مساعی تیز کر دی ہیں۔ دوسری جانب روس نے لبنان کے لیے اپنی مسافر پروازوں کا روٹ تین دن کے لیے تبدیل کر دیا ہے۔لبنان کی وزارت برائے پبلک ورکس و مواصلات کی جانب سے جمعہ کے روز جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا تھا کہ روسی حکومت کی طرف سے انہیں 20 نومبر کو جاری کردہ ایک برقی مراسلے میں 21،22اور 23 نومبر کو لبنان کے لیے آنے والی پروازوں کے روٹ تبدیل کرنے کے فیصلے سے آگاہ کیا ہے۔لبنانی حکام کا کہنا ہے کہ روسی مسافر جہازوں کے روٹ کی تبدیلی سے رفیق حریری بین الاقوامی ہوائی اڈے سے پروازوں کی لینڈنگ اور روانگی کا عمل متاثر ہو سکتا ہے۔ اس ضمن میں ہوائی اڈے کے حکام اور وزارت مواصلات ہنگامی پلان تیار کر رہے ہیں تاکہ مسافر طیاروں کی حفاظت وسلامتی کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ ان کی بروقت روانگی اور لینڈنگ کو یقینی بنایا جا سکے۔قبرصی اور لبنانی حکام کے درمیان بھی رابطوں کے بعد پرازوں کے سلسلے میں پیدا ہونے والا مسئلہ حل کرلیا گیا ہے۔ شام میں روس کی فوجی کارروائیوں کے بعد مسافر بردار طیاروں کو جنوبی لبنان کے صیدا اور صرفند شہروں کی فضاء سے گذر کر بیروت کے ہوائی اڈے تک پہنچنے کی اجازت دی گئی ہے۔ یہ روٹ تین دن تک استعمال کیا جائے گا۔لبنانی اور قبرصی حکام کے درمیان بیروت کے لیے آنے والے طیاروں کے روٹ تبدیل کرنے بارے بات چیت کے دوران یہ وضاحت بھی کی گئی ہے کہ روٹ کی تبدیلی سے فضائی کمپنیوں کو اضافی وقت اور اخراجات بھی برداشت کرنا ہوں گے۔بعض غیرملکی فضائی کمپنیوں نے حالات کے پیش نظر لبنان کے لیے اپنی پروازیں روکنے کا بھی عندیہ دیا ہے۔ پیش آئند ایام میں غیرملکی پراوزیں متاثر ہونے کا اندیشہ موجود ہے۔


Advertisment

Advertisment