Today: Wednesday, September, 20, 2017 Last Update: 04:28 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

RAJASTHAN

RAJASTHAN

کسان مخالف بل پر کانگریس نہیں جھکے گی: جے رام رمیش
جے پور، 28 مارچ (یو این آئی) کانگریس ایم پی اور سابق مرکزی وزیر جے رام رمیش نے آج یہاں کہاکہ کسان مخالف تحویل آراضی بل کے سلسلہ میں کانگریس کوئی مفاہمت نہیں کرے گی اور اسے راجیہ سبھا میں منظور کرانا ناممکن ہے ۔مسٹر رمیش نے آج یہاں نامہ نگاروں کی بتایا کہ 18 ماہ پہلے ہی بی جے پی کی سمترا مہاجن کی سربراہی میں قائم اسٹینڈنگ کمیٹی کی سبھی سفارشات کو منظور کرتے ہوئے بھارتئی جنتاپارٹی سمیت 14 سیاسی جماعتوں کی مکمل رضامندی سے ترقی پسند اتحاد حکومت سال 2013 میں بہت پرانے قانون کی جگہ پر نیا تحویل آراضی قانون لائی تھی جس میں کسانوں کے مفادات پوری طرح محفوظ تھے۔انہوں نے بتایا کہ آٹھ مہینے کے بعد ہی بی جے پی کی نریندر مودی حکومت نے ایک دم اپنا موقف تبدیل کرتے ہوئے انتخابات میں وسائل اور دیگر طریقوں سے مدد کرنے والے کچھ سرمایہ داروں اور بڑے بلڈروں کو فائدہ پہنچانے کے لئے نیا تحویل اراضی بل لارہی ہے جس میں کسانوں کے مفادات پر زبردست حملے کئے گئے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اب مودی حکومت کو کسان مخالف کہا جانے لگا ہے ۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت نے اس بل کو لوک سبھ میں تو پاس کرالیا ہے لیکن راجیہ سبھا میں اس کو منظور کرنا ناممکن ہوگا کیونکہ کانگریس کے ساتھ ساتھ دیگر سیاسی جماعتیں سماج وادی پارٹی، بہوجن سماج پارٹی، جنتادل (متحدہ)، ترنمول کانگریس، این سی پی، بائی بازو کی جماعتیں اور قومی جمہوری اتحاد میں شامل کئی دھڑے اس کے مخالفت کررہے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ بی جے پی کی کئی کسان تنظیمیں۔ اراکین پارلیمنٹ ، آر ایس ایس کے رہنما بھی اس کے مخالفت میں بول نہیں پارہے ہیں۔

 

راجستھان کے سریسکا ٹائیگر میں شیرنی نے بچے دیئے
میسورو ۔25 ؍ مارچ (یو این آئی) انسپکٹر جنرل فارسٹس’ نیشنل ٹائیگر کنزرویشن اتھارٹی (این ٹی سی اے ) ریجنل آفس بنگلور پی ایس سوما شیکھر نے کہا کہ راجستھان کا سریسکا ٹائیگر ریزروکی صورتحال میں بہتری ہوئی ہے ۔اس ریزرو میں شیروں کے لاپتہ ہونے کا معاملہ سامنے آیا تھا۔ میسور کے زو میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے انھوں نے دعویٰ کیا کہ اس ریزرو میں دو شیرنیوں نے چاربچے دیئے جس سے سریسکا میں شیروں کی آبادی میں اضافہ ہوا۔ سریسکا کے شیروں کے غائب ہونے کا ایک بڑا مسئلہ بن گیا تھا جس کے نتیجہ میں اس وقت کے وزیر اعظم کو مداخلت کرنی پڑی تھی۔ شیروں کے غائب ہونے کا معاملہ سی بی آئی کے حوالے کیا گیا تھا جس نے 4 سال تک اس معاملہ کی جانچ کی اور اس نتیجہ پر پہنچی کہ شکار کی وجہ سے شیر غائب ہوگئے ۔ 2 مادہ شیر ان 8 شیروں میں شامل ہیں جنھیں 2008ء کو سریسکا ٹائیگر ریزور میں چھوڑگیا۔ان شیروں نے بچے دیئے اور وہاں لگائے گئے کیمروں سے شیروں کے بچوں کی موجودگی کی تصدیق ہوئی۔ شیرنی کو 4 جولائی 2008ء میں چھوڑا گیا تھا جس نے 2012ء میں 2 بچے دیئے جبکہ ایک اور شیرنی نے 2014ء میں 2 بچے دیئے ۔انھوں نے کہا کہ رنتھمبور ٹائیگر ریزرو سے سریسکا میں شیروں کو دوبارہ چھوڑنا’ شیروں کو بچانے کی تاریخ کا ایک سب سے برا چیلنج رہا۔ سریسکا میں اس طرح کی پہلے کسی کوشش کا سابقہ تجربہ نہ ہونے کے باوجود کامیابی کے ساتھ ان شیروں کو سریسکا میں چھوڑا گیا۔
 

سنیل امبوانی نے راجستھان ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کا حلف لیا

جے پور، 24مارچ (یو این آئی) راجستھان کے کارگزار چیف جسٹس سنیل امبوانی نے آج اسی عہدہ کیلئے چیف جسٹس کا حلف لیا۔گورنر کلیان سنگھ نے مسٹر امبوانی کو حلف دلایا۔ انہوں نے انگریزی میں حلف لیا۔قبل ازیں چیف سکریٹری سی ایس راجن نے صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا تقرری نامہ پڑھ کر سنایا۔وزیر اعلی وسندھرا راجے ، کابینی وزرا، سابق گورنر انشومن سنگھ، ہائی کورٹ کے جج اور دیگر اہم شخصیات اس موقع پر موجود تھیں۔

سونیا گاندھی کسانوں کو ہوئے نقصان کا جائزہ لینے راجستھان جائیں گی

جے پور، 18 مارچ (یو این آئی) کانگریس کی صدر سونیا گاندھی راجستھان میں بے موسم بارش اور ژالہ باری سے فصلوں کو ہوئے زبردست نقصان کا جائزہ لینے کے لئے جمعہ کو راجستھان جائیں گی۔پارٹی کے ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ محترمہ گاندھی کے دورے کے لئے تیاریاں جاری ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ وہ کوٹہ زون کا دورہ کریں گی اور فصلوں کو ہوئے نقصان کا جائزہ لیں گی۔ اس دوران وہ متاثرہ کسانوں سے بھی ملاقات کریں گی۔

 

چھت منہدم ہونے سے عورت اور دو بچیاں ہلاک

بیکانیر، 16 مارچ (یو این آئی) راجستھان میں ضلع گنگا نگر کے پدم پور تھانہ علاقے میں آج ایک مکان کی چھت منہدم ہوجانے سے ایک عورت اور دو بچیاں ہلاک ہوگئیں۔ اس حادثہ میں تین دیگر عورتیں زخمی ہوگئی ہیں۔پولیس کے مطابق دو بہنیں اندو اور جیوتی اپنے بچوں سمیت اپنی ماں کے پاس آئی تھیں۔ کل رات وہ ایک ہی کمرے میں سو رہی تھیں کہ صبح تقریباً چھ بجے مکان کے اسی کمرے کی چھت نمی کے سبب منہدم ہوگئی ۔ اس سے دونوں بہنیں اور دیگر ملبے میں دب گئیں ۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ بغل کے کمرے میں سو رہے اندو کے شوہر اور دیگر نے گاؤں والوں کی مدد سے انہیں ملبے سے نکالا تب تک اندو (30)، اس کی بیٹی اجول (ڈھائی سال) اور جیوتی کی بیٹی (3) ہلاک ہوگئیں۔ اس حادثہ میں جیوتی ، اس کی بیٹی سونو اور ماں ریشما شدید طور پر زخمی ہوگئیں۔ پولیس کے مطابق زخمیوں میں ریشما کو علاج کیلئے گنگا نگر اور جیوتی اور سونو کو پدم پور کے سرکاری اسپتال داخل کرایا گیا ہے ۔ گھر والوں نے لاشیں پوسٹ مارٹم کروانے سے انکار کردیا۔ واضح رہے کہ علاقے میں گزشتہ کچھ دنوں سے بے وقت کی بارش ہو رہی ہے ۔

 

کانگریس نے آج بھی راجستھان اسمبلی کی کارروائی کا بائیکاٹ کیا

جے پور، 11؍مارچ(آئی این ایس انڈیا ) کانگریس کارکنوں پر پولیس لاٹھی چارج کے معاملے پر راجستھان اسمبلی میں آج تیسرے دن بھی برسراقتدار بی جے پی اور اپوزیشن کے درمیان تعطل جاری رہا اور کانگریس نے لاٹھی چارج کے لئے ذمہ دار پولیس افسران کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے آج بھی ایوان کی کارروائی کا بائیکاٹ کیا۔کانگریس ممبران اسمبلی نے وقفہ سوال میں حصہ نہیں لیا۔پارلیمانی امور کے وزیر راجندر راٹھوڑ نے وقفہ سوال ختم ہونے کے فورا بعد حزب اختلاف کے لیڈر رامیشور ڈوڈی سینئر کانگریسی ممبر اسمبلی پردیو من سنگھ اور مہندر سنگھ مالویہ سے تعطل کو ختم کرنے کے لئے صدر کے چیمبر میں ہوئی بات چیت کی معلومات دی۔ انہوں نے کہا کہ حزب کو ایوان کی کارروائی میں حصہ لینا چاہئے۔وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریہ نے کہا کہ میں نے 3 ؍مارچ کے مبینہ لاٹھی چارج کے فوٹیج کو مختلف ٹی وی چینلوں سے منگوا کر دیکھا ہے ۔کسی بھی فوٹیج میں ایک بھی لاٹھی ریاستی کانگریس صدر سچن پائلٹ کو نہیں لگی ہے۔کسی بھی پولیس اہلکار نے اس دوران لاٹھی تک نہیں اٹھائی۔7 ؍خواتین پولیس اہلکار کارکنوں کی کھینچ تان میں زخمی ہو گئیں ۔انہوں نے کہا کہ پولیس نے تحمل سے کام لیا ۔ اور صرف چند سیکنڈ لاٹھی پٹکی جس سے مظاہرین بھاگ کھڑے ہوئے۔

 

کانگریس نے راجستھان اسمبلی کی کارروائی کا آج دوسرے دن بھی بائیکاٹ کیا

جے پور، 10؍مارچ(آئی این ایس انڈیا )3 ؍مارچ کو راجستھان اسمبلی کے سامنے مظاہرہ کر رہے کانگریسی کارکنوں پر لاٹھی چارج کرنے والے پولیس افسران کے خلاف کارروائی اور 9 اراکین اسمبلی کی معطلی کو واپس لینے کے مطا لبہ کو لے کر کانگریس کے ممبران اسمبلی نے آج مسلسل دوسرے دن بھی ایوان کی کارروائی کا بائیکاٹ کیا۔ایوان کی کارروائی شروع ہوتے ہی اپوزیشن لیڈر رامیشور ڈوڈی نے اسمبلی کے صدر کیلاش میگھوال سے کانگریس کارکنوں پر لاٹھی چارج کرنے والے پولیس اہلکاروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔اس مسئلہ کو لے کر کچھ دیر تک شور شرابہ ہوا۔میگھوال نے ڈوڈی سے وقفہ سوال ختم ہونے کے بعد معاملہ اٹھانے کے لئے کہا لیکن وہ اس بات سے متفق نہیں تھے۔اس کے بعد کانگریس کے ممبران اسمبلی ایوان سے وا ک آؤٹ کر گئے۔وقفہ سوال کی کاروائی کانگریس ممبران اسمبلی کی غیر موجو وگی میں ہوئی ۔وقفہ سوال ختم ہونے کے بعد وزیر داخلہ گلاب چند کٹاریہ نے کارروائی کا بائیکاٹ کر رہے کانگریسی ارکین اسمبلی سے بائیکاٹ کو ختم کر کے کارروائی میں حصہ لینے کی اپیل کی اور کہا کہ وہ اس وقت کے ویڈیو فوٹیج کو دیکھیں گے اور اگر پولیس اہلکار مجرم پائے گئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔

 

راجستھان میں جیپ کی ٹکر سے 4 افراد ہلاک، 3 زخمی

بیکانیر،9 ، مارچ ( یو ا ین آئی) راجستھان کے ہنو مان گڑھ ضلع کے راوت سر تھانہ علاقے میں آج ایک جیپ کی ٹکر سے ایک عورت اور ایک لڑکا سمیت چار افراد ہلاک اور تین دیگر زخمی ہوگئے ۔پولیس ذرائع نے بتایا کہ راوت سر نوہر سڑک پر بالڑکا گاؤں میں بس اڈے پر صبح تقریباً پونے 10 بجے سڑک کنارے کچھ لوگ بس کے انتظار میں کھڑے تھے کہ راوت سر سے نوہر کی جانب سے تیزی سے جا رہی جیپ انہیں کچلتے ہوئے نکل گئی جس سے پپو عرف رادھا کرشن (40) موقع پر ہی ہلاک جبکہ اس کا باپ ہنومان داس (85)، ایک عورت کلاوتی (40) اور ہمانشو (ایک سال) نے اسپتال لے جاتے وقت راستے میں دم توڑ دیا۔ذرائع نے بتایا کہ اس واقعہ میں تین دیگر زخمی ہوگئے ۔ حادثے کے بعد علاقے میں کشیدگی پھیل گئی ہے ۔ مشتعل گاؤں والے ہمانشو کی لاش کے ساتھ راوت سر نوہر سڑک پر دھڑنے پر بیٹھ گئے ۔

نہ چین سے بیٹھیں گے نہ بیٹھنے دیں گے!

مودی سرکار کوسچن پائلٹ کی کھلی وارننگ ، تحویل اراضی آرڈی نینس واپس لینے کی اپیل

جے پور؍راجستھان،4مارچ (ایجنسیاں) تحویل اراضی بل کو لیکر راجستھان میں بھی کانگریس کی طرف سے مخالفت کی جا رہی ہے۔ مخالفت کے چلتے کانگریسی اسمبلی کا گھیراؤ کرنے کیلئے نکلے تھے لیکن درمیان میں ہی پولیس نے کانگریسیوں کو روکا، لیکن جب کانگریسی نہیں مانے تو پولیس نے لاٹھیاں برساتے ہوئے پانی کی پھواریں بھی چھوڑیں۔ خبروں کے مطابق پولیس لاٹھی چارج میں پردیش کانگریس صدر سچن پائلٹ، رکن اسمبلی اشوک چادنا، یوامورچہ صدر امریندر سنگھ اور دیگر کئی کانگریس لیڈران کو سنگین چوٹیں آئی ہیں۔ اگرچہ بعد میں پولیس نے ہی زخمی کانگریسیوں کواسپتال بھیجا، جہاں ان کا علاج جاری ہے۔160راجستھان پردیش کانگریس صدر سچن پائلٹ نے کہا کہ زمین تحویل قانون کسانوں کیخلاف ہے اور اس کا ہم احتجاج اس وقت تک کرتے رہیں گے جب تک مرکز کی حکومت اس قانون کو واپس نہیں لے لیتی ۔ انہوں نے کہا کہ بل واپس ہونے تک نہ تو ہم چین سے بیٹھیں گے اور نہ ہی مودی حکومت کو چین سے بیٹھنے دیں گے۔ پائلٹ نے کہا کہ مرکز کی مودی حکومت کسان مخالف فیصلے لے رہی ہے۔

عالمی پیمانے پر بی جے پی کا نظریہ ہندؤوں کے تئیں نرم

پاکستانی ہندوؤں کو حکومت دے رہی ہے ہندوستانی شہریت
باڑمیر23فروری(آئی این ایس انڈیا)7 ہزار پاکستانی مہاجر ہندوؤں کو ہندوستان کی مستقل شہریت دینے کا عمل آج سے شروع کر دیا گیا ہے۔یہ سارے مہاجرین کی طرح راجستھان کے مختلف علاقوں میں رہ رہے ہیں،اب ہندوستانی حکومت انہیں مستقل شہریت دے گی یا طویل وقت کے لئے ویزا فراہم کرے گی،اس کے لئے پہلا کیمپ آج باڑ میر میں لگایا گیا ہے۔جودھپور میں7 مہاجر کیمپ ہیں۔ان کیمپوں میں پاکستانی مہاجرین کے آنے کا سلسلہ کبھی تھمتا نہیں،ہر ہفتے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان چلنے والی ٹرین تھار لنک ایکسپریس کے ذریعہ پاکستان سے ہندو مہاجر ہندوستان میں پناہ لیتے ہیں،ان میں سے زیادہ تر لوگ کبھی واپس نہیں جاتے،اگرچہ ہندوستان میں بھی ہندو تارکین وطن کے لئے زندگی اتنی آسان نہیں ہے۔پاکستان سے آنے والے زیادہ تر ہندو درج فہرست ذات یا قبیلے سے تعلق رکھتے ہیں،شہر کے بیرونی علاقوں میں بنے کیمپ میں یہ اپنی زندگی بسر کرتے ہیں، ان کیمپوں میں بنیادی سہولیات بھی موجود نہیں ہیں،پانی سپلائی، تعلیم، صحت اور رہائش جیسی سہولیات یہاں نہ کے برابر ہیں۔
الکوثر نگر کیمپ میں تو ٹوائلٹ تک نہیں ہے جبکہ وزیر اعظم نریندر مودی کا ٹوائلٹ پر کافی زور ہے،یہاں باقاعدگی طور پر پانی کی سپلائی بھی نہیں ہے۔پاکستان سے حال میں راجستھان آئے ایک مہاجر نے کہا کہ ہم پاس کے مدرسے سے پانی لیتے ہیں، یہ مہاجر اپنی شناخت ظاہر نہیں کرنا چاہتا ہے،اسے ڈر ہے کہ شناخت ظاہر ہونے سے پاکستان کے کراچی میں رہ رہے اس کے خاندان والوں کو مسئلہ ہو جائے گا۔اس مہاجر نے کہا کہ ہمارے بچوں کو سرکاری اسکول میں داخلہ نہیں مل سکتا اور ہم پرائیویٹ اسکول کا خرچ برداشت نہیں کر سکتے،7 سالوں کے طویل انتظار کے بعد انہیں طویل وقت کے لئے ویزا ملاہے،اب یہ ہندوستانی شہریت کے لئے بھی درخواست کر سکتے ہیں،اس مہاجر نے کہا کہ یہ سب کچھ اتنا آسان نہیں ہے۔بڑی تعداد میں مہاجرین جو ہندوستان میں ہونے والی دقتوں کو برداشت نہیں کر پائے وہ واپس پاکستان چلے گئے لیکن پاکستان سے لوگوں کا آنا تھم نہیں رہا ہے۔سرکاری ایجنسیاں سیکورٹی وجوہات کا حوالہ دیتے ہوئے شہریت نہیں دینے کی بات کہتی ہیں،ان کا کہنا ہے کہ زیادہ تر لوگ غیر منقسم ہندوستانی ہیں،مہاجر سے ہندوستانی شہری بنے سودھا نے کہا کہ انہیں کم سے کم مہاجر کا اسٹیٹس تو مل ہی جانا چاہئے۔پاکستانی مہاجر راجستھان کے باڑ میر، جیسلمیر، بیکانیر اور جودھپور میں سب سے زیادہ آتے ہیں، کیونکہ ٹرین ان شہروں سے ہو کر گزرتی ہے۔بی جے پی حکومت والی ریاست مدھیہ پردیش نے بھی 20ہزار سے زیادہ پاکستانی ہندوؤں کو ہندوستانی شہریت دینے کا فیصلہ کیا تھا۔سوک پول کے دوران وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے ان تارکین وطن کو شہریت دینے کی یقین دہانی کرائی تھی۔انتخابات میں بی جے پی کی شاندار جیت بھی ہوئی،شیوراج سنگھ نے کہا تھا کہ کسی بھی پاکستانی ہندو کو ریاست میں رہنے کے لئے پوچھنے کی ضرورت نہیں ہے،ان پاکستانی ہندوؤں کو مستقل شہریت دینے کے لئے شیوراج سنگھ چوہان نے پی ایم مودی سے مداخلت کرنے کی اپیل کی تھی،چوہان نے یہ وعدہ اندور میں کیا تھا،مدھیہ پردیش کے اسی شہر میں سب سے زیادہ پاکستانی ہندو مہاجر ہیں۔مدھیہ پردیش کے بھوپال اور اندور میں وزارت خارجہ کی مدد سے ان تارکین وطن کے کیمپ بنائے جا رہے ہیں،مقامی انتظامیہ ان تارکین وطن کی سہولیات کو یقینی بنانے میں لگا ہے،ڈی ایم نے انہیں شہریت فراہم کرنے کی سفارش کی ہے،فائلیں وزارت داخلہ اور خارجہ کے پاس بھیجی گئی ہیں،جیسے ہی ان فائلوں پر دہلی سے مہر لگ جاتی ہے ان مہاجر پاکستانیوں کو ہندوستان کی مستقل شہریت مل جائے گی۔

ہند- پاکستان کے لوگوں کے درمیان ازدواجی رشتے قائم

جے پور، 20 فروری (یو این آئی) ہندستان اور پاکستان کی تقسیم کے باوجود دونوں ملکوں کے شہریوں کے مابین ازدواجی رشتے قائم ہیں۔دونوں ملکوں کے درمیان سیاسی رشتوں میں تلخی کی وجہ سے ان میں کچھ وقفہ کے لئے تعطل ضرور پیدا ہو ا لیکن پاکستان کے صوبے سندھ کے سوڈھا راجپوتوں اور راجستھان کے راجپوتوں کے مابین اپنے بچوں کی شادیاں کرانے کا سلسلہ آج بھی جاری ہے ۔انہیں رشتوں کو آگے بڑھاتے ہوئے سندھ کے رانا ہمیر سنگھ سوڈھا کے بیٹے کنور کرن سنگھ کی بارات آج یہاں پہنچ چکی ہے اور شام کو جے پور کے پاس کا نوتا ٹھکانے دارمان سنگھ کی بیٹی پدمنی کمار کے ساتھ ازدواجی زندگی میں منسلک ہوں گے ۔پاکستان سے تقریباً 100 باراتی یہاں مختلف ہوٹلوں میں قیام پزیر ہیں اور شام ساڑھے چار بجے بارات جے پور سے کانوتا جائے گی۔پاکستان میں سوڈھا راجپوتوں کا ایک ہی گوتر ہونے کی وجہ سے وہاں ازدواجی رشتے قائم کرنا مشکل ہوگیا ہے کیونکہ ہندومذہب میں ایک گوتر میں شادی کرتا ممنوع ہے ۔ پاکستان میں سوڈھا راجپوت کی تعداد بہت زیادہ ہے جس کی وجہ سے انہیں ازدواجی رشتہ قائم کرنے کے لیے ہندوستان آنا پڑتا ہے ، کئی راج گھرانوں سے ان کے ازدواجی رشتے رہے ہیں۔ سابق وزیراعظم وی پی سنگھ، بی جے پی کے قد آور لیڈر ہے جسونت سنگھ۔ سابق نائب صدر جمہوریہ بھیروں سنگھ شیخاوت کے ساتھ اس راج گھرانے کے گہرے رشتے رہے ہیں۔اس شادی میں کئی غیر ملکی مہمان بھی شرکت کررہے ہیں جن میں پاکستان سیاست کے بڑے چہرے اور معروف شخصیات بھی نظر آئیں گی۔ اس کے علاوہ ہندوستان کے کئی رجواڑے اور سیاسی ہستیاں بھی شیرک ہونگی۔ویسے تو پہلے بھی پاکستان سے کئی دلنیں ہندوستان آئیں اور کئی پاکستان گئیں لیکن اس بار شاہی شادی کا جشن کچھ خاص ہوگیا ہے کیونکہ دولہا۔ دلہن دونوں شاہی خاندان سے ہیں۔ دونوں ملکوں کی تقسیم کے بعد گذشتہ 70 برسوں سے سندھ کے ہندہ راجپوت خاندانوں کو کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ بڑے راجپوت خاندانوں کے لیے یہ پریشانی کوئی خاص نہیں ہے لیکن عام راجپوٹ خاندانوں میں ایسے کئی لوگ ہیں جن کی شادی ابھی نہیں ہوسکی ہے ۔ ایسے لوگوں کی تعداد بہت زیادہ ہے ۔تھر ایکسپریس کی وجہ سے ان کی پریشانیاں تھوڑی بہت کم ہوئی ہیں لیکن ویز ضابطوں کی وجہ سے انہیں اب بھی کئی مسائل کا سامنا ہے ۔باڑمیر، جیسلمیر کے سرحدی علاقوں میں پاکستانی شہریوں کو ویزا آسانی سے نہیں ملتا ایسی صورت میں انہیں غیر شادی شدہ زندگی بسرکرنی پڑتی ہے۔
کیونکہ ایک ہی گوتر میں شادی نہیں ہوسکتی۔واضح رہے کہ سندھ کا یہ علاقہ راجستھان کا حصہ تھا اور وہاں ہندو راجپوتوں کی اچھی خاضی تعداد تھی۔ ریگستان اور سندھ کی سرحد پر ہونے کی وجہ سے انگریزوں نے اسے سندھ میں شامل کردیا اور تقسیم کے بعد یہ پاکستان کا حصہ بن گیا۔

جودھپور میں سوائن فلو سے دو مریضوں کی موت

جے پور۔ 17فروری (یو این آئی) راجستھان میں سوائن فلو سے ہونے والی اموات کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے ۔ جودھپور میں آج ایک لڑکے اور بزرگ کی موت ہوجانے سے ریاست میں سوائن فلو سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 179ہوگئی ہے ۔محکمہ طب سے موصولہ اطلاعات کے مطابق جودھپور کے امید اسپتال میں سوائن فلو سے متاثرہ 10سالہ وکرم کی موت ہوگئی جبکہ ایم ڈی ایم اسپتال میں 72سالہ جے رام نے دم توڑ دیا۔ جودھپور میں سوائن فلو سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 49ہوگئی ہے ۔دوسری جانب ٹونک سعادت اسپتال میں کل رات سوائن فلو کی علامات والی ایک حاملہ خاتون کو آئسو لیشن وارڈ میں داخل کیا گیا جس کی علاج کے دوران موت ہوگئی۔ریاست میں سوائن فلو سے مرنے والوں کی تعداد اب تک 178ہوگئی ہے اور اسپتالوں میں سوائن فلو سے متاثر افراد کے پہنچنے کا سلسلہ رُکا نہیں ہے ۔

بدمعاش اے ٹی ایم سے 14لاکھ روپے چوری کرنے میں ناکام
ڈونگر پور، 17 فروری (یو این آئی) راجستھان میں ضلع ڈونگر پور کے صدر تھانہ علاقے میں واقع دیول قصبے میں بنک آف بڑودہ کے اے ٹی ایم میں آج علی الصبح دو نقاب پوش بدمعاشوں نے توڑ پھوڑ کی لیکن اے ٹی ایم میں رکھے 14لاکھ روپے چوری کرکے لے جانے میں وہ ناکام رہے ۔متعلقہ تھانہ کے افسرونود کمار نے بتایا کہ دیول قصبے میں پولیس چوکی سے تقریباً 300میٹر دور واقع بنک آف بڑودہ کے سے ٹی ایم میں علی الصبح تقریباً تین بجے نقاب پوش دو بدمعاش گھس گئے اور انہوں نے مشین کے اوپر حصے کو توڑ ڈالا لیکن وہ اندر رکھی رقم تک نہیں پہنچ سکے ۔انہوں نے بتایا کہ مقامی لوگوں کے بیدار ہوجانے کی وجہ سے اے ٹی ایم میں رکھے 14 لاکھ روپے چوری ہونے سے بچ گئے ۔انہوں نے بتایا کہ سی سی ٹی وی کیمرے میں دو نقاب پوش بدمعاش نظر آئے ہیں جنہیں تلاش کیا جارہا ہے ۔

کشتی پلٹنے کی وجہ سے تین لوگوں کی موت
بانسواڑہ،17فروری(یو این آئی) راجستھان میں بانسواڑہ ضلع میں امبا پورا تھانہ علاقے کے ماہی باندھ میں آج کشتی پلنے سے دو معصوم بچیوں سمیت تین لوگوں کی ڈوب کر موت ہو گئی۔ ایس پی راجیندر پرساد گوئل نے یواین آئی کو بتایا کہ یہ تینوں بانسواڑہ شہر میں کھاندو کالونی کے رہنے والے ہیں اور ماہی باندھ کے پانی والی علاقے میں واقع شوالہ میں درشن کرنے جارہے تھے ۔انھوں نے بتایا کہ مچھواروں کی اس کشتی میں 5سے 6لوگ سوار تھے اور اچانک توازن بگڑنے کی وجہ سے کشتی پلٹ گئی۔ اس حادثے میں آنچل سونی(27) ڈھائی سالہ رکشا سونی اور تشار سونی (تین سال) کی موت ہو گئی۔حادثہ کی اطلاع ملتے ہی امبا پورا تھانہ افسر شیو ناتھ سنگھ جائے حادثہ پر پہنچے اور غوطہ خوروں کی مدد سے آنچل سونی اور رکشا سونی کی لاش باہر نکالنے میں کامیاب ہوئے جبکہ تشار کی لاش کی تلاش جاری ہے ۔

 

ہوٹل میں آگ سے 3 ہلاک

الور: راجستھان میں الور ضلع کے نمرانہ علاقہ کے ایک ہوٹل میں آگ لگنے سے تین افراد ہلاک ہوگئے ۔پولیس کے مطابق علاقہ کے کیگ وے ہوٹل میں کل رات قریب دو بجے اچانک آگ لگ گئی جس کی زد میں آجانے اور دم گھٹنے سے تین افراد ہلاک ہوگئے ۔پولیس نے بتایا کہ اس میں زخمی کچھ لوگوں کو ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔

دودو علاقہ میں غیرملکی خاتون کی عصمت دری
جے پور۔ 9فروری (یو این آئی) راجستھان کے ضلع جے پور میں دوود تھانہ کے تحت گزشتہ رات ایک غیرملکی خاتون کی عصمت دری کا معاملہ سامنے آیا ہے ۔پولیس ذرائع کے مطابق متاثرہ خاتون کا تعلق جاپان سے بتایا جارہا ہے ۔ یہ خاتون کل شام جے پور گھومنے کے لئے آئی تھی جس کے دوران چند نوجوانوں نے اسے نشہ آورا شیا کھلا کر اس کی عصمت دری کردی۔ دودو تھانہ میں معاملہ درج کرایا گیا ہے ۔پولیس معاملے کی تفتیش کررہی ہے اور ملزمین کی تلاش جاری ہے ۔

پل پر گوڈسے کے نام کی تختی لگانے والا ٹھیکیدار گرفتار
جے پور۔ 5فروری (یو این آئی) راجستھان کے ضلع الور میں ایک نوتعمیر شدہ پُل پر بابائے قوم مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کے نام کی تختی لگانے والے ٹھیکدار کو پولیس نے کل گرفتار کرلیا۔پولیس ذرائع نے آج بتایا کہ گرفتار ٹھیکیدار کا نام نیرج کمار شرما ہے اور وہ ایس آئی بی میں ٹھیکیداری کرتاتھا۔ اس معاملے میں اربن امپروومنٹ ٹرسٹ (یو آئی ٹی) کے حکام نے پولیس میں ایف آئی درج کرا ئی تھی۔ٹھیکیدار نے پولیس کو بتایا کہ اترپردیش میں بھارتیہ جنتا پار...


Advertisment

Advertisment