Today: Thursday, November, 23, 2017 Last Update: 03:45 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

ODISHA

ODISHA

اڈیشہ اردو اکادمی کی جانب سے جاجپور برہمبردامیں عظیم الشان کل ہند مشاعرہ منعقد
جاجپور؍اڈیشہ،26مارچ(پریس ریلیز) اڈیشہ کے شہر جاجپور سے لگ بھگ ۴۰ کلو مٹر دوری پر واقع گاؤں برہمبردا میں پہلی بار اڈیشہ اردو اکادمی کی جانب سے ایک عظیم الشان کل ہند مشاعرہ کا اہتمام کیا گیا ۔ اس مشاعرہ کی صدارت اسی گاؤں کے مشہور و معروف عالم دین حضرت ابراہیم قاسمی صاحب نے نبھائی اور نظامت کے فرائض حیدرآباد سے آئے ہوئے باکمال شاعر ریاض تنہاؔ نے اپنی منفرد لب و لہجہ کے ساتھ بحسن خوبی انجام دی۔ مہمانِ خصو صی کی حیثیت سے جاجپورکے ایس پی انوپ کمار ساہونے شرکت کی اور شعراء کرام کی شاعری سے بھر پور لطف اٹھایا ، ایس پی صاحب نے اپنے خطاب میں اردو اکادمی کے دبیر داؤدالرحمن صاحب کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ بہت خوشی کی بات ہے پہلی بار ہمارے گاؤں میں اردو مشاعرہ اردواکادمی کی جانب سے منعقد کیا گیا جس میں ہندوستان کے کو نے کو نے سے شعراء کرام آئے ہوہیں اور بہترین کلام پیش کررہے ہیں اس سے بھاچارگی میں اضافہ ہوگا، میری دلی خواہش ہے کہ ہر سال اس طرح کی مشاعرہ ہو تا رہے۔اس عظیم الشان کل ہند مشاعرہمیں شاعرحبیبؔ ہاشمی (کولکاتا)ش مشؔ جالنوی (مہارشٹر) شاہدؔ عدیلی (حیدرآباد)وحیدؔ پاشا(حیدرآباد)ارشادآرزو(کولکاتا)ضمیریوسف(کولکاتا)شاداب اعظمی (یوپی)ارشاد آرزوؔ ( کولکاتا) ساجد اثر ( کٹک) صلاالدین تسکین ؔ (کٹک) شوکت ؔ رشیدی(کٹک) ارشد جمیل (کٹک)عمران راقم ؔ (کو لکاتا)بالاسور سے نکلنے والا پندرہ روزہ اخبار’’ اپنا تر جما ن‘‘ کے سب ایڈیڑ نوجوان شاعرعظیم ؔ بالیسری نے شرکت کی اور سبھی شعراء کرام نے اپنے اپنے انداز میں اپنا اپنا کلام پیش کر سامعین سے خوب داد و تحسین حاصل کرتے رہے ۔ سب سے بڑی خوشی بات یہ رہی کہ اس علا قہ میں پہلی بار مشاعرہ کا انعقاد کیا گیا تھا لیکن سا معین آدابِ مشاعرہ سے بخوبی واقف نظر آرہے تھے ہر شاعر کو دل کھول کر داد پیش کر رہے تھے۔اس مشاعرہ کو ہر طرح سے کامیاب بنا نے میں بر ہمبردا کے سماجی کارکن شیخ ابو الکلام ، عبدا لدیا ن ، زکی عالم ،شیخ ابو سہمہ، ضیاء الحق،شیخ صابر ، شیخ ایوب علی ،برہمبردا کے نوجوان حضرات ، اکادمی کے رکن تنویر ربانی ، مجیب میکش ؔ ، اورکٹک سے آئے ہو شاعر سمیع الحق شاکرؔ نے دل و جان اپنا تعاون پیش کیا ۔برہمبرا کی سر پنچ محتر مہ سہرانہ بی بی نے بھی اس مشاعرہ کو کامیاب بنا نے میں ہر طرح سے تعاون پیش کیں ۔ مشاعرہ کامیابی کے ساتھ رات دو بجے اختتام ہوا۔

 

وشاکھاپٹنم میں جعلی آئی اے ایس آفیسر گرفتار
وشاکھاپٹنم21 مارچ (یو این آئی) سٹی پولیس نے آج یہاں ایک شخص کو جو خود کو آئی اے ایس آفیسر بتاتا تھا اور جس نے بے روزگار نوجوانوں کو نوکری کا جھانسا دے کر ٹھگ لیا تھا ، گرفتار کرلیا۔ ملزم پی رمیش نائیڈو (چالیس) شریکاکلم ضلع کا رہنے والا ہے اور آندھرا یونیورسٹی سے جغرافیا میں ایم اے ہے ، وہ اس پورٹ سٹی میں پچھلے کئی برسوں سے مقیم تھا ،اور اس نے بے روزگار نوجوانوں کو دھوکہ دے کر پیسے کمانے کا منصوبہ بنایا تھا۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس سی ایم ٹی ورما نے بتایا ۔کہ نائیڈو خود کو آئی اے ایس آفیسر بتاتا اور لوگوں سے کہتا تھا کہ وہ ریجنل ڈائرکٹر آف انڈسٹریز کے عہدے پر فائز ہے ۔ اس نے مبینہ طور پر بے روزگار نوجوانوں سے تقریباً تین کروڑ روپئے وصول کئے تھے ۔ ان نوجوانوں کا خیال تھا کہ وہ ان کو نوکری دلائے گا۔ ایک نواجون اے شیو کمار کی شکایت پر تھری ٹاون پولیس نے نائیڈو کے خلاف معاملہ درج کیا۔

 

اڈیشہ میں ہوائی اڈے کے باہر لگی آگ

بھونیشور، 13 مارچ (یو این آّئی) اڑیسہ میں کل بیجو پٹنائک بین الاقوامی ہوائی اڈے کے باہر آگ لگ گئی۔ہوائی اڈے کے ڈائرکٹر شرت کمار نے بتایا کہ آگ ہوائی اڈے کے آّپریشنل ایریا سے باہر لگی تھی اور اس کی وجہ سے طیاروں کی پرواز پر کوئی اثر نہیں پڑا ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ آگ احاطہ کے باہر دیواروں کے نزدیک جھاڑیوں میں لگی تھی اور فائر بریگیڈ کے عملے نے اسے بجھا دیا۔ مقامی حکام کو اس حادثہ کی اطلاع دے دی گئی ہے اور آنے والی گرمی کے مدنظر سکیورٹی کے لیے ضروری قدم اٹھانے کے لیے کہا گیا ہے ۔

 

اسمبلی کو گمراہ کرنے پر اڈیشہ کے وزیر کو مراعات شکنی نوٹس
بھوبنیشور، 13 مارچ (یو این آئی) اڈیشہ میں کانگریس کے رکن اسمبلی دیوندر شرما نے نامتاڑہ پولس فائرنگ واقعہ کے سلسلے میں ایوان کو گمراہ کرنے پر پارلیمانی امور کے وزیر وکرم کیشاری آروکھ کے خلاف مراعات شکنی نوٹس کی تحریک پیش کی ہے ۔ مسٹر دیوندر شرما نے کہا کہ مسٹر آروکھ نے جان بوجھ کر ایوان اسمبلی کو گمراہ کیا اور اسمبلی کی مراعات شکنی کا ارتکاب کیا ہے ، اس لئے انہیں سزا ملنی چاہئے ۔ واضح رہے کہ ریاستی پارلیمانی امور کے وزیر مسٹر آروکھ نے 11 مارچ کو ایوان میں نامتاڑہ پولس فائرنگ پر اپوزیشن کی طرف سے پیش کی گئی تحریک التواء کا جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ نامتاڑہ میں گزشتہ 8 مارچ کو پولس لوگوں کی بھیڑ کو منتشر کرنے کے لئے خالی فائرنگ کرنے پر مجبور ہوءي تھی۔انہوں نے بتایا تھا کہ اس واقعہ میں 9 لوگ زخمی ہوئے ہیں اور ایس سی بی میڈیکل کالج اسپتال میں زیر علاج ہیں ۔ ان میں سے کوءي بھی سنگین طورپر زخمی نہیں ہوا ہے ۔ مسٹر دیوندر شرما نے کہا کہ ریاستی وزیر نے جان بوجھ کر ایوان کو گمراہ کرنے کی کوشش کی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ بھوبنیشور سے شائع ہونے والے ایک اخبار نے آج کے شمارے میں ایک خبر شائع کی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ نامتاڑہ پولس فائرنگ میں چھ لوگوں کو گولیاں لگی تھیں اور تین دیگر افراد پولس کے لاٹھی چارج حملے میں سنگین طورپر زخمی ہوگئے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اخبار کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پولس نے لوگوں کی بھیڑ پر اندھادھند فائرنگ کی تھی۔ اس کے علاوہ ریاستی وزیر نے ایوان میں وزیر اعلی کی طرف سے جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ وزیر اعلی 11 مارچ کو سرکاری کام کاج کے لئے نئی دہلی گئے ہوئے ہیں۔ تاہم، وزیر اعلی کے دورے کی تفصیل سے اس بات کی بھی تصدیق نہیں ہوتی ہے ۔

 

جنگلی ہاتھی کے حملے میں ایک شخص ہلاک، دو زخمی

برہم پور5مارچ(آئی این ایس انڈیا)اڑیسہ کے گنجام ضلع کے ایک جنگلی علاقے میں ایک جنگلی ہاتھی کے حملے میں ایک 50سالہ شخص ہلاک ہو گیا اور دو دیگر زخمی ہو گئے۔محکمہ جنگلات کے افسران نے آج بتایا کہ دھرم پور گاؤں کے مضافات میں کل ایک ہاتھی نے ہدا ہیرو کے نام کے ایک مزدور کو روند ڈالا جس کے بعد اس کی موت ہو گئی۔منڈل جنگل افسر پرلاکھیمنڈی آر کے سنگھ نے بتایا کہ مزدور پر حملہ کرنے کے بعد ہاتھی نے کھیتوں میں کام کر رہے دوسرے لوگوں پر حملہ کر دیا جس میں سے دو زخمی ہو گئے۔زخمیوں کو یہاں ایم کے سی جی میڈیکل کالج اور ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا جن میں 75سالہ ایک شخص کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔واقعہ سے ناراض کئی لوگوں نے میت کے لواحقین کو فوری طور پر معاوضہ دینے اور زخمیوں کو طبی اخراجات دینے کا مطالبہ کیا۔اس کے علاوہ انہوں نے کھیتوں میں ہاتھیوں کی طرف سے برباد کی گئی دھان کی فصل کے لئے معاوضہ دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ڈی ایف او نے بتایا کہ میت کے لواحقین کو حکومت کی پالیسی کے مطابق تین لاکھ روپے دئے جائیں گے۔ اور زخمیوں کو بھی زخم کے مطابق معاوضہ دیا جائے گا۔

نیوکلیائی صلاحیت والے :بیلسٹک میزائل پرتھوی دوم کا کامیاب تجربہ

بالاسور، 19فروری (یو این آئی) نیوکلیائی صلاحیت والے درمیانہ دوری تک سطح سے سطح پر مار کرنے والے پرتھوی دو م میزائل کا آج چاندی پور ٹسٹنگ رینج سے کامیاب تجربہ کیا گیا۔حکام نے کہا ہے کہ پرتھوی دوم زمین سے زمین تک 350 کلومیٹر کی رینج میں کامیابی سے ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے ۔یہ میزائل 500 کلو گرام سے 1000کلو گرام تک دھماکا خیز مواد لے کر جا سکتا ہے ۔ میزائل میں 2 انجن ہیں جن سے یہ ہدف تک رسائی حاصل کرتا ہے ۔آئی ٹی آر (انٹی گریٹڈ ٹیسٹ رینج) کے ڈائریکٹر کے مطابق میزائل کا تجربہ اسٹریٹجک فورس کمانڈ (ایس ایف سی) نے کیا۔واضح رہے کہ 31 جنوری کو بھی اگنی۔پانچ ( Agni۔V) میزائل کا تجربہ کیا تھا۔ذرائع نے بتایا کہ تجربہ کے دوران تمام آلات اپنے مطلوبہ میعار کے مطابق پائے گئے ۔ تجربہ کے نتائج کا تجزیہ کیا جارہا ہے ۔

اڈیشہ چٹ فنڈ گھوٹالے میں سی بی آئی نے پہلی چارج شیٹ داخل کی

بھونیشور،12دسمبر(یو این آئی )اڈیشہ میں کروڑوں کے چٹ فنڈ گھوٹالے میں سی بی آئی نے بی جے ڈی ممبراسمبلی پربھات تری پنتھی اور سات کمپنیوں سمیت16لوگوں کے خلاف پہلی چارج شیٹ داخل کی ہے۔کل یہاں سی بی آئی کورٹ کے چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ کے سامنے ڈیڈ لائن ختم ہونے سے ایک دن پہلے چارج شیٹ داخل کی گئی تھی۔چارج شیٹ میں شامل اہم ناموں میں بی جے ڈی ممبر اسمبلی پربھات تری پتھی، سابق ریاستی ایڈوکیٹ جنرل اشوک مہنتی،اے ٹی گروپ کے سربراہ پردیپ سیٹھی، سواستک انڈیا کے سربراہ چیف رنجن داس ، ممبئی کی ماڈل پریتی بھاٹیا ،اسٹاک بروکر دیپک پاریکھ، میڈیا ہاؤس کے مالک بکاس سوائن، مدھو موہنتی اور منوج داس وغیرہ شامل ہیں۔ سابق ایڈوکیٹ جنرل سمیت چارج شیٹ میں شامل ان تمام 16افراد کو یہاں خصوصی جیل میں رکھا گیا ہے۔موہنتی کو خوردہ سیشن جج کورٹ نے ضمانت دے دی ہے۔سی بی آئی ذرائع نے کہا چٹ فنڈ معاملہ میں ملزمین کو تعزیرات ہند کی دفعہ 120(بی)، 406، 409، 411، 420، 468اور پرائز چٹس اور منی سرکولیشن اسکیم ایکٹ کے دفعہ 4، 5، 6کے تحت گرفتار کیا گیا ہے۔ چارج شیٹ میں آرتھ ٹٹوا (اے ٹی) گروپ کے ڈائریکٹر اور کچھ دیگر ریئل اسٹیٹ تاجروں کا نام بطور ملزم شامل کیا گیا ہے۔سی بی آئی کو ریاست میں معصوم سرمایہ کاروں سے کروڑوں کی ٹھگی کرنے والی 44چٹ فنڈ کمپنیوں کی تفتیش کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔سی بی آئی کو اس سال سپریم کورٹ کے حکم پر تفتیش کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔

 

چٹ فنڈ گھپلہ معاملہ میں ایم پی اور دو سابق ایم ایل اے کو 6 دنوں کیلئے سی بی آئی کی تحویل میں

بھوبنیشور، 5 نومبر (یو این آئی) چٹ فنڈ گھپلہ معاملے میں کل سی بی آئی کے ذریعہ گرفتار کئے گئے بی جے ڈی کے ایم پی رام چندر ہنسدا اور دو سابق ممبران اسمبلی کو مزید پوچھ گچھ کیلئے آج چھ دنوں کے لئے سی بی آئی کی تحویل میں دے دیا گیا۔ان تینوں سیاسی رہنماؤں کو سی بی آئی نے آج یہاں خصوصی چیف جوڈیشئل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا تھا۔ عدالت نے اس معاملے میں مزید پوچھ گچھ کے لئے ان تینوں رہنماؤں کو چھ دنوں کے لئے سی بی آئی کی تحویل میں دینے کی اجازت دے دی۔ ان میں سے دو حکمراں بیجو جنتا دل (بی جے ڈی) کے لیڈر ہیں۔واضح رہے کہ سی بی آئی نے کل میور بھنج لوک سبھا حلقہ کے بی جے ڈی کے ممبر پارلیمنٹ رام چندر ہنسدا ، بی جے ڈی کے سابق ممبر اسمبلی سْبرن نائک اور بی جے پی کے سابق ایم ایل اے ہتیش بگرتی کو چٹ فنڈ گھپلہ میں ملوث ہونے پر گرفتار کیا تھا۔

 

جنرل نے چٹ فنڈ گھوٹالے میں اپنی گرفتاری پر سی بی ا ئی کی تنقید کی

بھونیشور:27ستمبر(یو این ا ئی)اڑیسہ کے سابق ایڈوکیٹ جنرل اشوک مہنتی نے جنہیں کل خرد ضلع اور سیشن جج نے ضمانت دے دی ،کئی کروڑ کے چٹ فنڈ گھوٹالے معاملے کی تفتیش میں سی بی ا ئی کی ساکھ پر سوال کھڑا کیا ہے۔مسٹر موہنتی کو سی بی ا ئی نے گذشتہ 22ستمبر کو چٹ فند کمپنی اے ٹی گروپ سے بدانسی کٹک میں ایک گھر خریدنے کے لیے گروپ کے سربراہ پردیپ شیٹی جو اس وقت معصوم سرمایہ کاروں سے 500کروڑ روپے کی دھوکہ دھڑی کے الزام میں جیل میں ہیں ،سے رابطہ کرنے کے وجہ سے گرفتار کیا تھا۔ سی بی ا ئی کی نامزد عدالت نے اس سے قبل مسٹر موہنتی کو ضمانت دینے سے انکار کردیا تھا جس کے بعد25ستمبر کو انھوں نے اڑیسہ ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا۔ عدالت نے انھیں خرد ضلع اور سیشن جج کے پاس جانے کیلیے کہا اور کل سیشن کورٹ کو ان کے معاملے کی سماعت کرنے کے احکامات جاری کیے۔عدالت نے سماعت کے بعد سابق اے جی کو ایک لاکھ مچلکے اور دو ضمانتیوں کے عوض میں ضمانت پر رہا کردیا۔ عدالت نے سابق اے جی سے تفتیش میں سی بی ا ئی کا تعاون کرنے اور اس معاملے سے متعلق ہر اتوار کو سی بی ا ئی کے سامنے حاضر ہونے کے لیے بھی کہا ہے۔کل رات خصوصی جیل سے ضمانت پر رہا ہونے کے فوراً بعد انھوں نے سی بی ا ئی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ چٹ فنڈ گھوٹالے میں تفتیش کا یہ طریقہ غیر جانبدار اور شفاف نہیں ہے۔سابق اے جی نے مبینہ طور پر الزام لگایا کہ سی بی ا ئی نے ان کی گرفتاری کے بعد دستاویز تیار کیے ہیں ۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ وہ اپنی کوشش جاری رکھیں گے اور سی بی ا ئی کی حقیقت سامنے لائیں گے۔ انھوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ ریاستی حکومت کو بدنام کرنے کے لیے ان کی گرفتاری کے پیچھے کچھ لوگوں کا ہاتھ تھا۔اڑیسہ حکومت نے چٹ فنڈ گھوٹالے میں نام ا نے کے بعد سی بی ا ئی کے سامنے پیش ہونے سے قبل ہی مسٹر موہنتی کا استعفی قبول کرلیا تھا۔ دریں اثنا اڑیسہ ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن نے 25ستمبر سے سی بی ا ئی کے ذریعہ سابق اے جی کی گرفتاری کے خلاف مظاہرے کے طور پر بند کام دوبارہ شروع کردیا ہے ۔

 

 

مشتبہ ماؤ نوازو ں نے کانگریسی لیڈر کو گولی ماری

بھونیشور:27ستمبر(یو این ا ئی) مشتبہ ماؤ نواز نے کانگریسی لیڈر جیبن پٹنائک کواڑیسہ کے کوراپت ضلع میں واقع ان کے گاؤں سنکی میں کل رات گولی مار دی۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ علاقے کے مشہور کانگریسی لیڈر کو کل رات تین موٹرسائیکل سوار ماؤنوازوں نے ان کے گھر میں گولی مار دی۔پوتنگی بلاک کے سابق صدر کانگریسی رہنما اپنے گھر کے باہر کھڑے ہوئے تھے جب حملہ ا ور موٹر سائیکل پر سوار ہوکر ا ئے اور ان پربہت نزدیک سے فائرنگ کی۔ موقع پر ہی ان کی موت ہو گئی۔پولیس نے بتایا کہ یہ واقعہ تقریباً ساڑھے ا ٹھ بجے رات میں پیش ا یا۔ پولیس نے کہا کہ شرپسند جرم کرنے کے بعد فرار ہوگئے۔اعلی پولیس افسران جلد ہی موقع پر پہونچ گئے اور گنہگاروں کو تلاش کرنے کے لیے مہم شروع کردی۔ موقعہ واردات سے ماؤنوازوں کا سی طرح کا کوئی پرچہ نہیں ملا ہے۔ پولیس کو شبہ ہے کہ یہ سرخ باغیوں کا کام ہو۔پولیس نے اڑیسہ ا ندھرا پردیش بارڈر کو بند کردیا ہے اور قتل کے معاملے میں سیاسی دشمنی کے نکتے سے بھی تفتیش کررہی ہے۔ بہر حال ابھی تک کسی بھی ماؤ نواز گروپ نے کانگریسی لیڈر کو مارنے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔یہ واقعہ اس وقت پیش ا یا جب ماؤ نواز علاقے میں سی پی ا ئی(ماؤنواز) کے قیام کا جشن منا رہے تھے۔

...


Advertisment

Advertisment