Today: Wednesday, September, 20, 2017 Last Update: 04:35 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

KERALA

KERALA

یمن میں سعودی عرب کی بمباری، ہندوستانیوں کیلئے بہت جلدروانہ ہوں گی کشتیاں

ترواننتاپورم ۔27۔ مارچ (یو این آئی) یمن میں خانہ جنگی اور سعودی عرب کی بمباری کے پیش نظر وہاں کام کرنے والے ہندوستانیوں کا تخلیہ کرنے کے لئے مرکز بہت جلد دو کشتیاں روانہ کرے گا۔ وزیراعلی کیرل اومن چنڈی کو وزیرخارجہ سشما سوراج نے یہ اطلاع دی۔ چونکہ یمن میں تمام ائیرپورٹوں کو بند کردیا گیا ہے اس لئے وہاں پھنسے ہوئے ہندوستانیوں کو کشتیوں کے ذریعہ منتقل کیا جائے گا پھر وہاں سے بذریعہ طیارہ ہندوستان لایا جائے گا۔یہاں جاری کردہ ایک نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ جنہیں کشتیوں کے ذریعہ لانے میں دشواری ہے اُنہیں ذریعہ سڑک سعودی عرب منتقل کرکے وہاں سے وطن واپس لایا جائے گا۔ یمن میں رہنے والے کیرل کے باشندوں نے اومن چانڈی کو فون کرکے بتایا کہ جو لوگ اسپتالوں میں کام کررہے ہیں اُن کے پاسپورٹس اور دیگر دستاویزات ضبط کرلئے گئے ہیں جس کی وجہ سے اُنہیں وطن واپسی میں دشواریاں پیدا ہورہی ہیں۔اومن چنڈی نے یمن میں موجود ہندوستانی سفیر پر زور دیا کہ وہ فوری مداخلت کرتے ہوئے اس معاملہ کو حل کرائیں۔ اومن چنڈی نے خواہش کی کہ جو لوگ واپس آنا چاہتے ہیں وہ سفارتخانہ سے رابطہ قائم کریں۔

 

کیرل اسمبلی سے پانچ رکن اسمبلی موجودہ سیشن کیلئے معطل

تروننت پورم، 16 مارچ (یو این آئی) کیرالہ اسمبلی کے صدر این سکتھن نے گزشتہ 13 مارچ کو ایوان میں ہنگامے اور توڑ پھوڑ کے واقعہ پر کارروائی کرتے ہوئے آج اپوزیشن کے پانچ ارکان اسمبلی کو اسمبلی کے موجودہ سیشن کے لئے معطل کر دیا۔مسٹر سکتھن نے پانچ اراکین اسمبلی کے کنجاحمد ، ای پی جے نرائن ، کے اجیتھ ، کے ٹی جلیل اور وی شیوان کٹی کو اسمبلی کے موجودہ سیشن کے لئے معطل کر دیا ہے ۔ انہیں معطل کرنے کے لئے وزیر اعلی اومن چانڈی نے ایوان میں قرارداد پیش کیا تھا۔اسمبلی کے صدر نے کہا کہ یہ واقعہ بے حد شرمناک ہے اور اس سے ریاست کی بے عزتی ہوئی ہے ۔ مسٹر سکتھن نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کے اراکین اسمبلی نے ریاست کی شبیہ کو نقصان پہنچایا اور دنیا کے دیگر ممالک میں رہنے والے ملیالی لوگوں کی شبیہ کو خراب کیا ہے ۔ اس واقعہ کے لئے اراکین اسمبلی کو یہاں کے عوام سے معافی مانگنی چاہئے ۔وزیر اعلی چانڈی نے ایوان میں ایل ڈی ایف کے ممبران اسمبلی کے خلاف کارروائی کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کا واقعہ اسمبلی کی تاریخ میں کبھی نہیں ہوا ہے ۔ جمہوریت میں سب کو احتجاج کرنے کا حق ہے لیکن اس کی ایک حد ہونی چاہئے ۔ اپوزیشن اگر اپنے حامیوں سے بھی اس طرح کے واقعہ کے صحیح یا غلط کے بارے میں پوچھے گی تو وہ لوگ بھی اسے قبول نہیں کریں گے ۔مسٹر سکتھن نے جیسے ہی اراکین اسمبلی پر کارروائی کا اعلان کیا ویسے ہی اپوزیشن جماعتوں کے رکن ایوان کے بیچوں بیچ آکر صدر اور وزیر خزانہ کے خلاف نعرے بازی کرنے لگے اور ان پر جانبدارانہ کارروائی کرنے کا الزام لگایا۔ ہنگامے کو دیکھتے ہوئے ایوان کی کارروائی 22 مارچ تک کے لئے ملتوی کر دی گئی ہے ۔واضح رہے کہ گزشتہ 13 مارچ کو کیرل اسمبلی میں بجٹ پیش کرنے کے لئے وزیر خزانہ کے ایم منی کے ایوان میں داخل ہوتے ہی اپوزیشن جماعتوں نے جم کر ہنگامہ کیا اور توڑ پھوڑ کی جس میں 12 ملازمین اور تین رکن اسمبلی زخمی ہو گئے تھے ۔

 

ہندو مسلم نے بیف کھا کر کی پابندی کی مخالفت کی،رکن اسمبلی کی بھی شرکت

تریوندرم پورم11مارچ(آئی این ایس انڈیا)کیرالہ میں ایک انوکھے جشن کا نظارہ دیکھنے کو ملا جہاں کھلے باورچی خانے میں بیف (گائے کا گوشت)پکایا گیا۔اتنا ہی نہیں، ہندوؤں اور مسلمانوں نے ساتھ بیٹھ کر بیف کھایا بھی۔اس جشن میں آئے لوگ مہاراشٹر میں بیف پر لگائی گئی پابندی کی مخالفت کر رہے تھے۔کیرل میں بیف کا مطلب گائے اور بھینس دونوں کا گوشت ہے اور یہاں بیف کھانا کوئی مذہب سے منسلک مسئلہ بھی نہیں ہے۔کیرالا میں بہت سے ہندو ایسے ہیں جو نہ صرف بیف کھاتے ہیں بلکہ یہ لوگوں کا پسندیدہ گوشت بھی سمجھا جاتا ہے۔کیرالہ سی پی ایم یوتھ ونگ کے اجیت پی نے کہا کہ میں ایک ہندو ہوں،میں بھی بیف کھاتا ہوں۔ ،مجھے اپنی پسند کی چیزیں کھانے کی آزادی ملنی چاہئے،اس لئے میں یہاں مظاہرہ کرنے آیا ہوں۔اجیت اپنی ڈش محمد کے ساتھ شیئر بھی کر رہے تھے۔محمد نے کہا کہ ہم دونوں کو ہی بیف کھانے سے کوئی مسئلہ نہیں ہے،یہ کیرل کا کلچر ہے،ہم اگر کچھ کھانا چاہتے ہیں تو کوئی ہمیں کیسے روک سکتا ہے؟۔بیف کھاتے ہوئے سی پی ایم رکن اسمبلی پی شری را م کرشن نے کہا کہ میں بیف کھاؤں گا اور کیرالہ کے بہت سے لوگ بھی،کچھ تبدیل ہونے والا نہیں ہے۔گزشتہ ہفتے مہاراشٹر حکومت نے بیف کی فروخت اور تجارت پر پابندی لگا دی تھی،کوئی اگر بیف کھاتا یا فروخت کرتا ہوا پکڑا گیا تو اسے پانچ سال کی جیل اور 10000روپے کا جرمانہ ہو سکتا ہے۔اس فیصلے کے بعد مہاراشٹر کے ہزاروں بیف تاجروں پر بے روزگاری کا خطرہ منڈلا رہا ہے۔بیف پابندی کے خلاف سوشل میڈیا پر جم کر تنقید ہوئی ہے،بالی ووڈ کے بھی کئی شخصیات نے اس فیصلے کے خلاف مظاہرہ کیا تھا۔

 

کیرالہ اسمبلی کے اسپیکرجی کارتھیان کا انتقال

بنگلور، 7 مارچ (یو این آئی)آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آءي سی سی) کے ممبر اور کیرالہ اسمبلی کے اسپیکر جی کارتھکیان (66) کا آج یہاں ایک پرائیویٹ اسپتال میں مختصر علالت کے بعد انتقال ہوگیا۔ کیرالہ کے ارویکارہ حلقہ سے چھ مرتبہ رکن اسمبلی منتخب ہونے والے مسٹر جی کارتکیان کو طبی جانچ میں کڈنی کے کینسر میں مبتلا پایا گیا تھا جس کے لئے بنگلور کے بی سی جی اسپتال میں پچھلے ایک ہفتہ سے زیر علاج تھے اور ان کی حالت نازک ہونے کے سبب پچھلے ہفتہ سے انہیں وینٹیلیٹر پر رکھا گیاتھا۔ ایچ سی بی اسپتال کے کنسلٹنٹ ڈاکٹر پی ایس سری دھر نے ایک بیان کہا کہ علاج معالجہ کے بندوبست کے باوجود بھی کی حالت میں کوءي سدھار نہیں ہوا اور آج صبح ان کا انتقال ہوگیا۔ انہوں نے بتایا کہ مسٹر جی کارتھکیان کو شہر کے ایچ سی جی کینسر سینٹر میں داخل کرایا گیا تھا جہاں ان کے کڈنی کے کینسر کا علاج کیا جارہا تھا ، مگر علاج کے باوجود ان کی حالت نہیں بدلی اور آج صبح ساڑھے دس بجے ان کا انتقال ہوگیا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ مسٹر کارتھکیان کڈنی کے کینسر کے علاوہ کڈنی کے پرانے مرض سے بھی متاثر تھے اور وہ یہاں خصوصی معالجہ کے لئے آئے تھے ۔ اسپتال میں ماہرین کی ایک ملٹی ڈسپلنری ٹیم کا دیکھ ریکھ کر رہی تھی۔ ان کی کڈنی خراب ہوچکی تھی اس لئے ان کو ایڈوانسڈ لیور سپورٹ سسٹم پر رکھا گیا تھا جس کے بعد ان کی حالت میں کچھ بہتری دیکھی گئی تھی۔ ڈاکٹر سریدھر نے بتایا کہ متعدد اعضاء کی خرابی کے سبب ان کی حالت مزید بگڑگءي تھی، جس کی وجہ سے ڈاکٹروں کی کوششوں کے باوجود انہیں بچایا نہیں جاسکا۔

کوچی میں لینڈنگ کے دوران طیارہ کا ٹائر پھٹا
کوچی 26فروری(یو این آئی)ایرانڈیا کا 161مسافرین کو لے جانے والا طیارہ اس وقت بڑے حادثہ سے کرشماتی طور پر محفوظ رہا جب یہاں آج صبح نیدوبماسارے ایرپورٹ پر لینڈنگ کے دوران اس کا پچھلا ٹائر پھٹ پڑا۔ایرپورٹ کے ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ ایرانڈیا کی فلائٹ نمبر467 جس میں ممبئی سے آرہے 161مسافرین سوار تھے ،نے محفوظ طور پر لینڈنگ کی ۔ یہ فلائٹ 9.30بجے صبح شارجہ کے لیے پرواز کرنے والی تھی تاہم شارجہ جانے والے 138 مسافرین کوہونے والی پریشانی کے سبب اس فلائٹ کو منسوخ کر دیا گیا ۔اس فلائٹ کے ٹائر کو تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ٹائر تبدیل کرنے کے بعد ہی اس فلائٹ کو روانہ کیا جائے گا۔

 

کیرالہ نے فلپ کارٹ پر 47کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا
ترواننتھا پورم۔ 24جنوری (یو این آئی) آن لائن کاروبار کرنے والی کمپنی فلپ کارٹ سمیت چار کمپنیوں پر کیرالہ کے محکمہ خزانہ نے غیرقانونی طریقہ سے کاروبار کرنے کے الزام میں 53.63کروڑ روپے کا جرمانہ عائد کیا ہے ۔ریاستی حکومت کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ جرمانہ سالہ 2012-13اور 2013-14میں غیرقانونی طریقے سے کاروبار کرنے کے الزام میں لگایا گیا ہے ۔بیان کے مطابق فلپ کارٹ کو 47.15کروڑ روپے ، جبانگ ڈاٹ کام کو 3.89کرو ڑ روپے ، ویکٹر ای کامرس کو 2.23کروڑ روپے اور روب مال اپیرلس کو 36 لاکھ روپے کا جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔

اچیوتانندن نے کیرالہ کے وزیر خزانہ سے استعفی کا مطالبہ کیا
ترواننت پورم، 21 جنوری (یو این آئی) کیرالہ اسمبلی میں اپوزیشن کے لیڈر وی ایس اچیوتانندن نے یہاں جاری ایک ریلیز میں کہا کہ بار ہوٹل مالکوں اور جوہریوں سے رشوت لینے والے مسٹر منی کو اسمبلی میں سالانہ بجٹ پیش کرنے کا کوئی اختیار نہیں ہے ۔ یہ عام آدمی کے مفاد کا سودا کرکے پیسہ کمانے جیسا ہے ۔انہوں نے کہا کہ کیرالہ کے عوام مسٹر منی کو بجٹ پیش نہیں کرنے دیں گے ۔ انہوں نے سرکاری چیف وہپ پی سی جارج اور کیرالہ کانگریس کے لیڈر آر بالاکرشنن پلے سے مطالبہ کیا کہ وہ یہ انکشاف کریں کہ مسٹر منی نے رشوت لی ہے ۔ مسٹر منی کا کابینہ میں برقرار رہنا آئین کو راست چیلنج کرنا ہے ۔
 

کالی کٹ مرکز میں وادی کشمیر کے تحت منعقدہ دو روزہ ’زہرہ ‘میلاد فسٹ اختتام پذیر
کالی کٹ(پریس ریلیز)کالی کٹ جامعہ مرکز میں کشمیری ھوم کے زیر اہتمام دوروزہ ’زہرہ ‘‘میلاد فسٹ بعنوان تعلیمی مسابقہ کا شاندار اختتام ہوا۔دوروزہ جاری تعلیمی مسابقہ میں کل۱۵۰؍بچے ۴؍گروپ میں شریک مسابقہ رہے ۔جنکے اسما وادی ریحان ،وادی عرفان ،وادی فُرقان،وادی چمنستان ہیں ۔ ۲۰؍سے زائد مضامین یعنی پروگرام کے تحت دو دو ججوں کا انتخاب تھا ۔قابل ذکر پروگرا م قرأت،ا ذان، بردہ، مولود، دستکاری،خطوط نویسی،اردو تقریر ،عربی تقریر ،انگلش تقریر ،نعت،اردو کوئز وغیرہ ہیں ۔اس موقع پر اختتامیہ سیشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا موسی ثقافی نے بچوں کی حوصلہ افزائی کی ۔انہوں نے کہاکہ میلاد کے موقع پر ہم نے تعلیمی مسابقہ کا انعقاد کیا اس سے طلباؤں کے اندر چھپی ہوئی صلاحیت اُجاگر ہوتی ہے ۔اس موقع پر انہوں نے ممتاز اور اعلی نمبرات حاصل کرنے والوں کے اسماء کا اعلان کیا۔ اس موقع پر بچوں نے اپنی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں شمال میں اس طرح کے پروگرامس نہیں ملتے ہیں ۔جامعہ مرکز میں تعلیم وٹریننگ کے ساتھ ہمیں مسابقہ کا جوہنر سکھایا جاتا ہے وہ بہت اچھا ہے ۔اردو تقریر میں ممتاز نمبر لانے والے ثاقب علی جموں نے بات چیت کے موقع پر خوشی کا اظہار کیا ۔واضح رہے کہ جتنے والے گروپ اور انفرادی حیثیت سے ممتاز نمبرات حاصل کرنے والوں کو قیمتی انعامات سے نوازا جائیگا ۔

 

گستاخ فرانسیسی اخبار کی اسلام دشمنی نا قابل برداشت :دکتور حسین ثقافی
کالی کٹ مرکز نگر (ٖپریس ریلیز) ملک کی عظیم شہرت یافتہ عالمی درسگاہ جامعہ مرکز الثقافۃ السنیہ کالی کٹ کے زیر اہتمام چل رہے مرکز کشمیری ہوم کے تحت ماہ ربیع النور کی مناسبت سے تعلیمی ادبی مسابقہ ‘‘بعنوان زہرہ میلاد فیسٹ کا انعقاد نہایت ہی تزک واحتشام کے ساتھ ہوا۔پروگرام کا افتتاح معروف عالم دین ڈاکٹر حسین ثقافی نے کیا۔اس موقع پر انہوں نے اپنے خطاب میں گستاخ فرانسیسی اخبار کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاکہ مغربی اور اسرائیلی اخبارات میں توہین رسالت صلی اللہ علیہ وسلم پر مبنی گستاخانہ کارٹون کی اشاعت مذہبی دہشت گردی ہے اسکا مقصد صرف مسلمانوں کی دل آزاری ہے جو ناقابل برداشت ہے ۔انہوں نے اخبار پر پابندی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ ہم قاتلانہ حملہ کی شدید مذمت کرتے ہیں لیکن آزادی رائے کی آڑ میں کسی کو بھی یہ حق نہیں ہے کہ وہ کسی کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہونچائے ۔انہوں نے کہاکہ مسلمان ایسے سلگتے ماحول میں صبر وتحمل سے کام لیں یہود ونصاری ہمیں منتشر کرنے کی ناپاک کوشش کرتے ہیں ۔ڈاکٹر حسین نے کہاکہ پوری دنیا میں وہابی دہشت گردی چھائی ہوئی ہے ۔ضرورت ہے دنیا کے سامنے سچے اسلام کو پیش کرنے کی ۔نام نہاد اسلامی تنظیمیں اسلام کی شبیہ کو خراب کرہے ہیں ۔انہوں نے اس موقع پر طلبہ سے مخاطب ہوکر کہاکہ تعلیم ہی امن وامان کا پیغام دیتی ہے ۔عزیز بچوں تعلیم اور تہذیب کو ہتھیار بنالواسی میں مسلمانوں کی کامیابی ہے ۔اجلاس کا آغاز تلاوت قرآن سے محمود جموں نے کیا جبکہ خیر مقدمی کلمات مولانا موسی ثقافی نے پیش کیا۔اس موقع پر اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا شمس تبریز ثقافی نے کہاکہ تعلیمی مسابقہ سے طلبہ کی چھپی ہوئی صلاحیت ظاہر ہوتی ہے ۔جو بہت ضرروی ہے ۔انہوں نے کہاکہ طلبہ تعلیمی مقابلہ سے اپنے مستقبل کی ہنر ازمائی کریں ۔
اجلاس سے مولانا عبدالکریم امجدی،جاوید اقبال ثقافی ،شمشیر ثقافی ،عبدالرحمن مصباحی سمیت کئی دیگر اہم شرکاء نے بھی خطاب کیا۔ غور طلب ہے کہ مرکز کشمیری ھوم کے طلبہ نے میلاد فیسٹ بعنوان زہرہ ‘تعلیمی مسابقہ کا اہتمام کیا ہے جس میں کل ۴؍گروپ کے تحت ۲۰؍سے زائد مضامین پر تحریر وتقریر مسابقہ ہوگا ۔دوروزہ تعلیمی مسابقہ بیحد دلچسپ ہے جس میں کامیاب ترین گروپ کو قیمتی انعامات سے نوازاجائیگا۔
فوٹوکیپشن : مرکز کشمیری ھوم کے تحت ’’زہرہ‘‘میلاد فیسٹ کا افتتاح کرتے ہوئے معروف عالم دین ڈاکٹر حسین ثقافی ۔ تصویر میں دیگر اہم شرکاء کو بھی دیکھا جا

 

مودی سرکار کی توجہ صرف ترقی پر مرکوز: پاسوان
کوچی، 10 جنوری (یو این آئی) خوراک و عوامی تقسیم کے مرکزی وزیر اور لوک جن شکتی (ایل جے پی) کے سربراہ مسٹر رام ولاس پاسوان نے کہاہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی اصل توجہ ملک کی ترقی اور نشو ونما پر مرکوز ہے۔گزشتہ شب میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسٹر نریندر مودی کسی بھی طورپر ترقی کے ایجنڈے سے اپنی توجہ ہٹانا نہیں چاہتے ہیں۔مختلف مذہبی تنظیموں اور لیڈروں کی طرف سے تبدیلی مذہب کے بارے میں متنازعہ تبصروں کے سوال پر انہوں نے کہا کہ ہرفرد اور تنظیم کو اپنے خیالات و نظریات کا اظہار کرنے کی آزادی حاصل ہے اور یہ ان کے انفرادی تاثرات ہیں۔ راشٹر جنتادل (آر جے ڈی) اور دوسری پارٹیوں کے وسیع اتحاد کے بارے میں انہوں نے کہا کہ یہ اتحاد کوئی کامیابی حاصل نہیں کرسکے گا۔ جب ان کی توجہ کشمیر میں بی جے پیپی ڈی پی حکومت کی تشکیل میں تاخیر کے مسئلے پر دلائی گئی تو انہوں نیکہا کہ اب یہ بات ہر کسی پر عیاں ہے کہ بی جے پی اب کسی کے لئے بھی اچھوت نہیں رہ گئی ہے اور کشمیر میں نیشنل کانفرنس اور پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی دونوں ہی اس بھگوا پارٹی کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لئے تیار تھیں۔

 

جبراً تبدیلی مذہب دستورہندکے بھی خلاف:شیخ ابوبکر
جامعہ مرکزکالی کٹ میں منعقدہ مرکز عالمی کانفرنس اختتام پذیر،درجنوں ممالک کے سفراء،علماء وعمائداور لاکھوں فرزندان توحید شریک

کالی کٹ،25دسمبر (پریس ریلیز)اسلام میں زورززبردستی نہیں۔یہ اسلام کی آفاقیت ہے کہ تعلیمات نبویؐ سے متاثرہوکر لوگ جوق درجوق حلقۂ بگوش اسلام ہوتے گئے۔ آج دنیاکاکوئی ایساگوشہ نہیں جہاں اسلام کے ماننے والے لوگ موجودنہ ہوں۔لیکن اسلام دشمنوں کو یہ باتیں ہضم نہیں ہوتیں،اسی وجہ سے آئے دن اسلام کے متعلق غلط پروپیگنڈے کئے جاتے ہیں،دورافتادہ علاقوں کے غریب مسلمانوں کو بہلاپھسلاکر ان کامذہب تبدیل کرانے کی کوشش کی جاتی ہے۔گھرواپسی کے نام پرمذہب تبدیل کرانے کیلئے جو میلہ لگایاجارہاہے وہ ایک منصوبہ بندسازش کا حصہ ہے۔کالی کٹ میں منعقدہ ورلڈاسلامک کانفرنس میں لاکھوں فرزندان توحیدکے ایک عظیم اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے جامعہ مرکزالثقافۃ السنیہ کے چانسلرشیخ ابوبکراحمدنے کہاکہ کل تک جو لوگ جبراً تبدیلئ مذہب کے خلاف قانون سازی کامطالبہ کررہے تھے آج وہی لوگ مذہب تبدیل کرانے کیلئے میلے لگارہے ہیں۔ حکومت ہندکو اس سلسلہ میں سنجیدگی سے اقدام کی ضرورت ہے۔ یہ نہ صرف اسلام کے خلاف ایک سازش ہے بلکہ یہ دستورہندکے بھی خلاف ہے۔شیخ ابوبکراحمدنے کہاکہ جولوگ بھی اس میں ملوث ہیں انہیں چاہئے کہ وہ تعدادکے بجائے معیارپردھیان دیں۔شیخ ابوبکرنے حکومت کیرلاکے سامنے ایک بارپھراپنے مطالبات دہراتے ہوئے کہاکہ ریاست کو شراب سے پاک بنانے کیلئے پوری ریاست میں شراب کی فروخت پرپابندی عائد کرنی چاہئے۔ کیونکہ شراب نوشی کی وجہ سے عائلی مسائل کھڑے ہورہے ہیں،خانگی زندگی میں ناگفتہ بہ حالات پیش آرہے ہیں۔ ان مسائل سے نجات کیلئے ضروری ہے کہ ریاست کو شراب سے پاک کیاجائے۔ انہوں نے پشاوردہشت گردانہ حملے کوبزدلانہ قراردیتے ہوئے کہاکہ اگران درندوں میں ہمت ہوتی تو وہ معصوموں کے بجائے جوانوں کے مقابل آتے۔مٹھی بھر لوگوں نے جہادکے نام پر اسلام کو بدنام کیاہے،اسلام کو اپنے ہاتھوں کا کھلونا بنالیا ہے۔انہیں معلوم ہوناچاہئے کہ اسلام میں سب سے اہم جہاد یہ ہے کہ دوسروں کی بھوک مٹائی جائے۔اسلام میں قتل وغارت گری کی کوئی گنجائش نہیں اور جولوگ بھی خون خرابہ کرتے ہیں ان کااسلام سے کوئی تعلق نہیں۔شیخ نے کہاکہ اسلام انسانیت کامذہب ہے اور انسانیت کی خدمت ہی سب سے بڑی عبادت ہے۔اس موقع پر ورلڈمسلم لیگ مکہ مکرمہ کے اڈوائزر ڈاکٹر ہاشم محمد المہدی نے کہاکہ اسلام کی تعلیمات کا بنیادی مقصد اخوت ومحبت اور آپسی بھائی چارگی ہے ۔مذہب اسلام ہی امن وسلامتی کا ضامن ہے ۔جسکے پیروکار صحابہ کرام وتابعین رہے ہیں ۔ہمیں انہیں کے نقش قدم پر چلنا چاہئے ۔مذہب اسلام برائیوں کا خاتمہ کرتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ دین کا پیغام نصیحت اور سیدھا راستہ ہے ۔اس میں کسی طرح کی کوئی تخریب کاری جائز نہیں ۔فتویٰ بورڈ عمان کے سکریٹری شیخ الفلاح الخلیلی نے کہاکہ امت مسلمہ کا اختلاف اس دور کی سب سے بڑی ناکامی ہے ۔ہم سب ایک پیغمبرؐ کے پیروکار ہیں ۔ہمیں کلمہ طیبہ کی بنیادپرمتحدہوناچاہئے۔انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی ملیشیاکے ناظم تعلیمات ڈاکٹر پروفیسر احمد بشیر بن ابراہیم نے جامعہ مرکزکی تعلیمی خدمات کی سراہناکرتے ہوئے کہاکہ ترقی کیلئے حصول علم انتہائی ضروری ہے۔
جامعہ مرکز اور انٹر نیشنل اسلامک یونیورسٹی ملیشیاء کے درمیان گہرا ربط ہے ۔ہم یہاں کے فارغین کیلئے خصوصی مواقع فراہم کرتے ہیں ۔ہم چاہتے ہیں کہ قوم کے بچے تعلیم کے ہتھیارسے لیس ہوں اور پوری دنیامیں اسلام کے آفاقی پیغام کوعام کریں اور اسلام کے متعلق دنیامیں پائی جانے والی غلط فہمیوں کو دورکرنے کی سعی کریں۔ازبکستان کے مفتی اعظم محمد یوسف محمد صادق نے کہاکہ مسلمان اگردنیاوآخرت میں سرخروئی چاہتے ہیں تو انہیں اسوۂ حسنہ پرعمل پیراہوناہوگا۔اچھے اخلاق کامظاہرہ کرناہوگا۔انہوں نے کہاکہ میں نے دنیاکے مختلف ممالک میں ہونے والی اسلامک کانفرنسز میں شرکت کی سعادت حاصل کی ہے لیکن کالی کٹ میں ہونے والی اس عظیم الشان اسلامک کانفرنس کے جیسامنظر کہیں اور نہیں دیکھا۔میری نظرمیں مکہ مکرمہ کے بعد یہ مسلمانوں کاسب سے بڑااجتماع ہے۔ڈاکٹر فائز العابدین( اسپیشل ایڈوائزر ،شہزادہ سعودبن مسعود بن عبدالعزیزسعودیہ عربیہ )نے کہاکہ اسلام نے امن کادرس دیا۔ عالمی امن واتحاد کی بدولت ہی دنیاکوترقیات کی طرف گامزن کیاجاسکتاہے۔ ۔دنیا میں اچھائی ،برائی دو راستے ہیں ۔لیکن امن وامان صرف اچھے راستے سے ہی حاصل کیاجاسکتاہے ۔انہوں نے کہاکہ اگرہم غلط راستے پر چلیں گے تو رب کوبھول جائیں گے اور یہی رب سے دوری ہماری بربادی کاسبب بنے گی۔ انہوں نے کہاکہ اسلام اورمسلمانوں کے نام پرمعرض وجودمیں آنے والے ایک ملک میں اسلام کے نام پرہی معصوم بچوں کاخون کیاجارہاہے۔ایسے لوگوں کومعلوم ہوناچاہئے کہ ان کی ان حرکات کی وجہ سے اسلام کی شبیہ اغیارمیں بگڑرہی ہے۔اسلام میں خون خرابہ کی کوئی جگہ نہیں۔اللہ کے رسولؐ نے خون ناحق کوپوری انسانیت کاقتل قراردیاہے۔جامع مسجد بغدادکے خطیب شیخ انس محمود خلف نے کہاکہ انسانیت کی خدمت سب سے بڑی عبادت ہے۔جامعہ مرکزکے جنرل منیجرسی محمد فیضی نے تعلیم نسواں پرزوردیتے ہوئے کہاکہ اگربچیاں تعلیم سے آراستہ ہوں گی توپوری ایک نسل کو وہ تعلیم سے لیس کرسکیں گی ۔انہوں نے کہاکہ تعلیم کے ساتھ آج ہنرمندی کی بھی ضرورت ہے تاکہ ہم کسی کے محتاج نہ رہیں بلکہ خود کفیل ہوں۔ ورلڈاسلامک کانفرنس سے شیخ عبداللہ العبیدی مکہ،شیخ ہاشم بن احمدمکہ،ڈاکٹر ہالہ بن عبداللہ ملک دبئی،سی ایم ابراہیم بنگلوراور منصورحاجی چنئی نے بھی خطاب کیا۔کانفرنس کی صدارت بزرگ عالم دین مولانا ایم اے عبدالقادرصدر سنی جمعیۃ العلماء کیرالہ نے کی جبکہ نظامت کے فرائض جامعہ کے ڈائرکٹرڈاکٹرعبدالحکیم ازہری نے کی۔ اس موقع پر درجنوں ممالک کے مندوبین اورسفراء سمیت لاکھوں کی تعدادمیں فرزندان توحید موجودتھے۔

 

سیکولر شادی کیلئے سی پی ایم نے لانچ کی ویب سائٹ
لانچنگ کے دوسرے دن ہی ویب سائٹ ہیک ، ویب سائٹ کو لانچ کرنے سے پہلے مجھے دھمکیاں ملی تھیں : ایم سوراج

ترو انت پورم ،18دسمبر( ایجنسیاں ) سی پی آئی۔ایم کی یوتھ ونگ ڈیموکریٹک یوتھ فیڈریشن آف انڈیا نے خاص طور پر ’سیکولر‘ شادیوں کو فروغ دینے کیلئے ایک میٹری مونیل ویب سائٹ شروع کی ہے۔www.secularmarriage.com نام کے اس ویب سائٹ کو بنانے کے پیچھے لبرل سوچ کے لوگوں کو ذات اور مذہب سے پرے ہو کر اپنے پارٹنر کی تلاش کرنے کیلئے ایک پلیٹ فار م دینا ہے۔سلیبر ٹی کپل ڈائریکٹر عاشق ابو اورادا کارہ ر یما کلنگل نے اس ویب سائٹ کو بدھ کو لانچ کیا تھا۔ اگرچہ کچھ شرارتی عناصر نے اس سائٹ کو جمعرات کی صبح ہیک کر لیا۔ ڈیموکریٹک یوتھ فیڈریشن آف انڈیاکے کیرالہ اسٹیٹ سکریٹری ایم سوراج نے کہا کہ آج ہی اسے ٹھیک کرنے کی کوشش کی جا رہے ہیں۔ خبر لکھے جانے تک ویب سائٹ پ...


Advertisment

Advertisment