Today: Friday, November, 17, 2017 Last Update: 11:05 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

DELHI

DELHI

کانگریس سربراہ کے عہدے پر بنی رہ سکتی ہیں سونیا گاندھی

نئی دہلی، یکم اپریل (آئی این ایس انڈیا )راہل گاندھی کو جلد کانگریس کی باگ ڈور سونپے جانے کی قیاس آرائیوں کے درمیان پارٹی کے ترجمان’ کانگریس سندیش ‘میں سونیا گاندھی کی قیادت پر اعتماد کا اظہار کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ سونیا گاندھی کی قیادت میں ہی پارٹی اپنا پرانا وقار حاصل کرے گی۔’کانگریس سندیش‘ کے تازہ شمارے میں کہا گیا ہے کہ ایک بار پھر وہ حکومت مخالف لہر اور پروپیگنڈے کے خلاف جنگ میں پارٹی کی قیادت کریں گی تاکہ پارٹی کو صحیح احترام مل سکے۔سونیا گاندھی نے 12؍مارچ کو کانگریس صدر کے طور پر 17سال کی مدت پوری کرلی ہے ۔پارٹی کا یہ پیغام اس لئے بھی اہم ہے کیونکہ اس بات کو لے کر گزشتہ کئی ہفتوں سے قیاس آرائیوں کا بازار گرم تھا کہ راہل گاندھی چھٹی سے لوٹنے کے بعد پارٹی کی کمان سنبھال سکتے ہیں۔واضح رہے کہ جولائی میں کانگریس پارٹی کااجلاس عام ہونا ہے۔کہا جا رہا ہے کہ اسی سال کسی وقت راہل گاندھی کوصدر کے عہدے کی ذمہ داری دی جاسکتی ہے، لیکن راہل کو صدر کا عہدہ دیئے جانے پر اندیشہ یہ ہے کہ پارٹی میں پرانے لیڈروں کی ان دیکھی ہوگی اور پارٹی داخلی انتشار کی شکار ہو جائے گی ۔کیونکہ ایسا مانا جاتا ہے کہ راہل گاندھی کئی پرانے لیڈروں کو پسند نہیں کرتے ہیں اور ان کو الگ تھلگ کرنا چاہتے ہیں۔ایسے میں سونیا کی قیادت ہی واحد متبادل ہے جس میں کانگریس متحد رہ سکتی ہے۔اس لئے جب راہل چھٹی پر ہیں تو سونیا نے پارٹی قیادت کے کام کو بخوبی انجام دیا ہے اور سونیا کی پارٹی کے باہر بھی مقبو لیت ہے۔

یوجی سی کا وجود خطرے میں !
نئی دہلی،یکم اپریل ( ایس ٹی بیورو) مرکزی وزارت برائے فروغ انسانی وسائل کی طرف سے قائم ایک کمیٹی نے یو جی سی کے کام کاج پر سوال کھڑے کر دئے ہیں۔ دراصل کمیٹی نے یو جی سی کے طریقہ کار کو تحلیل کرنے کی سفارش کی ہے۔کمیٹی کی مانیں تو یو جی سی خود کے بنائے ہدف کو ہی پانے میں ناکام ثابت رہی ہے۔وہیں رپورٹ کے مطابق مرکزی وزیر برائے فروغ انسانی وسائل اسمرتی ایرانی کی جانب سے تشکیل کردہ کمیٹی نے کہا ہے کہ آج کے دور میں تعلیم کے میدان میں جس طرح کی چنوتیاں آتی جا رہی ہیں، اس سے نمٹنے میں یو جی سی ناکام ثابت ہوئی ہے۔کمیٹی کا یہ دعویٰ ہے کہ یو جی سی میں بہتری کیلئے اب اس میں کسی طرح کی بہتری کی گنجائش نہیں بچی ہے۔واضح رہے کہ اس کمیٹی کے صدر ہری گوتم ہیں جو اسی ادارے کے صدر بھی رہ چکے ہیں۔ کمیٹی نے ایک الگ ادارہ کی تشکیل کی تجویز رکھی ہے، جس کا نام نیشنل ہائر ایجوکیشن اتھارٹی تجویز کی گئی ہے ۔ اس نئی اتھارٹی کے قیام کیلئے پارلیمنٹ سے تجویز پاس کرانے کی سفارش کی گئی ہے۔

 

اینٹی کرپشن ہیلپ لائن قائم کرنے کی قواعد تیز
نئی دہلی،یکم،اپریل(امیر احمد راجہ ؍ایس ٹی بیورو)دہلی حکو مت کی اینٹی کر پشن ہیلپ لا ئین ضد شروع کر نے کی قوا عد اب تیز ہو گئی ہے۔امید کی جارہی ہے کہ دہلی حکو مت ایک بڑا پرو گرام منعقد کر اس ہیلپ لا ئین کو دوبارا شروع کر نے جا رہی ہے۔ہیلپ لا ئین ابھی تک شروع کر نے پر حزب اختلا ف حکو مت پر الزام لگا رہے ہیں تو عوام کافی حیران ہے۔دہلی حکو مت کے قیام کو دیڑھ مہینے کا وقت گذر چکا ہے لیکن ابھی تک ہیلپ لا ئین شروع نہیں ہو سکی ہے۔اسی کے بل پر عام آدمی پارٹی کی49روزہ سرکار کا فی واہ واہی حا صل کر چکی تھی۔14،فروری کو وزیر اعلی اروند کیجریوال نے رام لیلا میدام میں حلف برداری کی تقریب میں یہ اعلان کیا تھا کہ بد عنوا نی لگام لگا نے کیلئے پھر سے اینٹی کر پشن ہیلپ لا ئین(1031) کو شروع کیا جائے گا اس پر لوگ سرکاری ملازمین ،پولیس اوردیگر سرکاری اداروں میں پھیلی بد عنوانی اور لین دین کی ریکا ڈنگ کر کے بھیج سکیں گے ۔

’’آپ ‘‘کے سابق ایم ایل اے نے کجریوال پر لگایا الزام
کہا مجھے بنا یا تھایرغمال،کجریوال سے ہوئی تھی توتو، میں میں،دوبارہ حکومت بنانے کی تھی تیاری
نئی دہلی یکم اپریل ؍(آئی این ایس انڈیا) ’’آپ‘‘کے قومی کنوینر اروند کجریوال کے خلاف نئے الزامات لگے ہیں۔تازہ الزام دہلی کی تیمارپور سیٹ سے’’آپ‘‘کے سابق رکن اسمبلی ہریش کھنہ نے لگایا ہے۔کھنہ کا کہنا ہے کہ 2013کے دہلی اسمبلی انتخابات کے بعد انہیں کجریوال نے ایک دن کے لئے یرغمال بنا لیا تھا۔کھنہ نے کہا کہ غازی آباد واقع کوشامبی میں انہیں صبح سے لے کر شام تک روک کر رکھا گیا تاکہ پارٹی کے ممبران اسمبلی کو بی جے پی توڑ نہ سکے،یہی نہیں ہریش کھنہ نے یہ بھی الزام لگایا ہے کہ گزشتہ سال کجریوال نے بجلی کی قیمتیں بڑھنے کے خدشہ کو لے کر دہلی کے جنتر منتر پر احتجاجی مظاہرہ کرنے کیلئے’’آپ‘‘کے ممبران اسمبلی کو 10-10بسیں بھرکر لوگوں کو لانے کا فرمان سنایا تھا۔ہریش کھنہ نے کہا کہ5جولائی، 2014کو جنوبی دہلی کے اسلامک سینٹر میں ایک میٹنگ بلائی گئی تھی۔اس میں کجریوال نے کہا کہ سب کو اپنے پیسے اور وسائل سے لوگوں کو بسوں میں بھر کر لانا ہے اور علاقے کو پوسٹروں سے پاٹ دینا ہے،اس کی میں نے مخالفت کی،میں نے یہ بھی کہا کہ اگر ہم لوگ بھی یہ سب کریں گے تو ہم میں اور دوسری پارٹیوں میں کیا فرق رہ جائے گا؟۔ میری اور کجریوال میں توتو، میں میں ہوئی۔کھنہ کا دعوی ہے کہ انہوں نے اس واقعہ کے ایک دن بعد یعنی 6جولائی، 2014کو پارٹی کو خط لکھا کہ وہ اگلا الیکشن نہیں لڑیں گے۔کھنہ نے کہا کہ ممبر اسمبلی کے ناطے میری ذمہ داری تھی لہٰذامیں استعفیٰ دینا نہیں چاہتا تھا۔ہریش کھنہ کا کہنا ہے کہ یہ بات سو فیصد درست ہے کہ اروند کجریوال کانگریس سے مل کر دوبارہ حکومت بنانا چاہتے تھے لیکن کانگریس سے بات نہیں بنی تو انہوں نے کانگریس کو توڑ کر حکومت بنانے کی کوشش کی (جیسا کہ راجیش گرگ کے اسٹنگ میں دکھایا گیا ہے ) ۔ہریش کھنہ کے مطابق18جولائی کو پٹیل نگر علاقے میں ایک کارکن کے گھر پر تمام ممبران اسمبلی اور پی اے سی کے ارکان کی میٹنگ ہوئی، جس میں یہ کہا گیا کہ’’ آپ‘‘ عوام کے پاس دوبارہ جائے گی اور ان سے پوچھا جائے گا کہ کانگریس سے مل کر حکومت بنانا چاہئے،اس بات پر میں نے اور کئی لوگوں نے احتجاج کیا اور کہا کہ ہم نے خود حکومت سے استعفی دیا ہے۔
اور دوبارہ کانگریس کی حمایت سے حکومت بنانا اصول کے خلاف ہے لیکن کجریوال لیفٹننٹ گورنر کو ایک خط بھی دے آئے، جس میں انہوں نے کہا کہ ابھی اسمبلی تحلیل نہ کریں،ہم حکومت بنانے پر غور کر رہے ہیں۔ہریش کھنہ نے کہا کہ اس میٹنگ میں کجریوال اراکین اسمبلی کو یہ کہہ کر ڈرا رہے تھے کہ اگر حکومت نہیں بناتے ہیں اور دوبارہ انتخاب میں جاتے ہیں تو ہم سب ہار جائیں گے۔کھنہ کے مطابق کجریوال نے تب کہا تھا کہ ہم لوگ بمشکل 6-8لوگ ہی جیت پائیں گے۔
 

مودی سرکار کی کتھنی اور کرنی میں تضاد جمہوریت کیلئے نیک فال نہیں
اگر سرکار گائے پر پابندی عائد کررہی ہے تو اسے شراب اور جوے پر بھی پابندی عائد کرنی چاہئے: تاج الدین انصاری
نئی دہلی ،یکم، اپریل ،(ایس ٹی بیورو) ایس سی کمیشن حکومت ہند کے قومی رابطہ کار اور کانگریس پارٹی کے سینئر رہنما ڈاکٹر تاج الدین انصاری نے آج مودی سرکار کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کتنے شرم کی بات ہے کہ ایک طرف سرکار تمام مذاہب کے احترام اور سب کا ساتھ سب کا وکاس کی بات کررہی ہے دوسری طرف سرکار کا عملی رویہ اس کے بالکل برعکس ہے ،جو کہ ملک کی جمہوری نظام کی روح پر حملہ ہے ۔ مسٹر انصاری نے مودی سرکار کی کتھنی اور کرنی میں تضاد پر اپنے شدید رد عمل میں کہا ہے کہ ا س سرکار سے اس زیادہ کی کچھ اور امید نہیں کی جا سکتی ۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اس بات سے کوئی شکوہ نہیں ہے کہ گائے جو ہندو بھائیوں کیلئے قابل احترام ہے اس پر پابندی لگائے جائے ۔ کیا ہی بہتر ہوتا کہ شراب اور جوا پر پابندی عائد کر کے سرکار اس بات کا پیغام دیتی کہ وہ ان چیزوں پر بھی پابندی عائد کرنے کے حق میں ہے جنکی اسلام میں حرمت بیان کی گئی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر سرکار گائے کیساتھ ساتھ بھینس و دیگر چیزوں پر پابندی عائد کرتی ہے تو یہ بے حد افسوسناک ہوگا ۔ اس سے نہ صرف ملک کا اقتصادی ڈھانچہ چرمرا جائیگا بلکہ غربت بڑھے گی اور ملک میں فاقہ کشی کا عالم ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ اگر گائے پر پابندی عائد کرنی ہے تو پورے ملک میں پابندی عائد کی جانی چاہئے ۔ کیوں گوا کے اندر گائے خود سرکار تھالیوں میں بیف سجا کر دے رہی ہے؟ انہوں نے کہا کہ اگر سرکار گائے کیساتھ ساتھ بھینسوں پر بھی پابندی عائد کرتی ہے تو اسے بکری مرغی اور مچھلی سمیت تمام گوشت والی چیزوں پر پابندی عائد کرنی چاہئے ۔

یوگیندر اور پرشانت کو اب پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے معطل کرنے کی تیاری
عام آدمی پارٹی کی تقسیم طے ،پروفیسر آنند اور اجیت جھا کو بھی ابتدائی رکنیت سے ہٹانے کا خاکہ تیار ، پارٹی کے 20رکنی ترجمانوں کی نئی فہرست میں سینئر لیڈر الیاس اعظمی کو ملی جگہ
محمداحمد
نئی دہلی،یکم اپریل ( ایس ٹی بیورو) عام آدمی پارٹی (آپ) میں جاری گھمسان تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے بلکہ یہ روز بہ روز بڑھتا ہی جارہاہے ۔ پارٹی میں اب پوری طرح یوگیندر یادو اور پرشانت بھوشن کو کنارے لگانے کی قواعد شروع کر دی گئی ہیں ۔ کل پارٹی کے دونوں سینئر لیڈروں کو پارٹی کے ترجمان عہدے سے ہٹا دیا گیا ۔ واضح رہے کہ یوگیندر یادو پارٹی کے چیف ترجمان جبکہ پرشانت بھوشن پارٹی کے ترجمان تھے۔ خبروں کے مطابق آئندہ چند دنوں کے اندردونوں لیڈروں کو پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے بھی معطل کر دیا جائیگا اور اس طرح پارٹی پر پوری طرح اروند کیجریوال کا دبدبہ ہوگا ۔ پارٹی کے با وثوق ذرائع سے ملی اطلاعات کے مطابق ان دونوں لیڈروں کے علاوہ پروفیسر آنند کمار اور اجیت جھا کو بھی پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے معطل کیا جائیگا ۔ پارٹی کے ایک سینئر رہنما نے نا م نہ شائع کرنے کی شرط پر سیاسی تقدیر کو بتایا کہ ’ پارٹی میں ان چاروں لوگوں کے رہتے یہ ممکن ہی نہیں تھا کہ پارٹی میں اروند کیجریوال اپنی من مرضی کے مطابق کام کرسکیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ان چارو ں لوگوں کے جاتے ہی پارٹی پوری طرح ون مین آرمی ہوگی اور اروند کا راج ہوگا ۔ ان کا کہنا تھا کہ اب عام آدمی پارٹی اور دیگر پارٹیوں میں کوئی فرق نہیں رہ جائیگا ۔ بلکہ ان چاروں رہنماؤں کے جانے کیساتھ ہی پارٹی اپنی روح بھی کھو دے گی ۔ اور سیکولرزم اور سوشلزم کا جنازہ اٹھ جائے گا ۔ خبروں کے مطابق بغاوت گر چہ ابھی تھمی ہوئی ہے ، لیکن مذکورہ چاروں لیڈروں کیساتھ پارٹی کی اکثریت بتائی جاتی ہے ۔ ایسے میں امکان یہ ہے کہ عام آدمی پارٹی دو دھڑوں میں تقسیم ہوجائیگی ۔ وہیں، کیجریوال کے وفادار 20 رکنی ترجمانوں کی نئی ٹیم کا آج عام آدمی پارٹی نے اعلان کیا جو میڈیا سے بات چیت کرے گی۔انتخابی مہم کے دوران پارٹی کے چیف ترجمانوں میں سے ایک رہیں اتشی مارلینا کو بھی ترجمان عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے۔ یادو، بھوشن اور کمار کو ترجمان کے عہدے سے انہیں قومی کونسل کے اجلاس میں قومی مجلس عاملہ سے ہٹائے جانے کے چار دن بعد ہٹایا گیا ہے۔ان پر پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث رہنے کا الزام لگاتے ہوئے انہیں قومی مجلس عاملہ سے ہٹا دیا گیا تھا۔ بھوشن کو اتوار کوڈ سپلنری کمیٹی کے سربراہ کے عہدے سے بھی ہٹا دیا گیا تھا۔ گزشتہ چار مارچ کو بھوشن اور یادو کو پارٹی کی پی اے سی سے بھی 8کے مقابلہ 11ووٹوں سے ہٹا دیا گیا تھا۔ ترجمان کے نئے پینل میں سنجے سنگھ، کماروشواس ، الیاس اعظمی، پنکج گپتا ، آسوتوش اور آشیش کھیتان ہیں۔ یہ تمام کیجریوال کے قریبی مانے جاتے ہیں۔پینل کے دیگر ارکان میں رکن اسمبلی سوربھ بھاردواج،آدرش شاستری، کپل مشر، الکا لامبا اور ممبرآف پارلیمنٹ بھگوت مان شامل ہیں۔ سینئر وکیل ایچ ایس پھلکا اور راہل مہرا بھی میڈیا سے بات چیت کریں گے۔ پارٹی نے اس پینل میں راگھو چڈھا کو بھی رکھا ہے۔

مزدوروں کی مالی مدد کا منصو بہ تیار !
دہلی حکومت کے وزیر محنت گوپال رائے کا اعلان، 25سال تک حکومت کرے گی مزدوروں کی مالی امداد
امیر احمد راجہ
نئی دہلی،یکم،مارچ(ایس ٹی بیورو)دہلی حکو مت کے وزیر محنت گوپال رائے نے کہا ہے کہ تر میم شدہ کم سے کم مزدوری کے قانون کو فوری طور سے لاگو کیا جائے گا اور اب مزدوری زمرے کیلئے کم سے کم مزدوری9048روپے ماہانا ہو جائے گی۔وزیر محنت نے آگے بتایا کہ دہلی حکو مت غیر منظم شعبے کے مزدوروں کے سماجی تحفظ کیلئے اپنی امداد دیتی ہے جس سے انہیں قومی پنشن منصو بہ کے تحت پنشن کا فائدہ یقینی طور پر ہو سکے۔یہ منصوبہ دہلی سواو لمبن منصو بہ کے نام سے جا نا جائیگا۔اس سلسلے میں دہلی حکو مت نے اپنی پہلی قسط56لاکھ روپے پی ایف آر ڈی اے کے منا ئندوں کو سونپ دی ہے جس سے گھر یلو ملا زمین،آٹو اور ٹیکسی ڈرائیوروں،آنگن واڑی کار کنان ا ور معاونوں،آشا کار کنان اور معا ونوں،بی پی ایل خاندا نوں،رکشہ پلروں،ہا کروں،کو ڑا چننے والوں ،مڈ ڈے میل ورکروں وغیرہ کو سما جی تحفظ فرا ہم ہو گا انہوں نے کہا کہ کم از کم مزدوری مقرر کر نے اور ٹھیکے پر کام کر نے والے مزدوروں کی شکایات کا اختتام کر نے کیلئے24،اپریل2015کو محکمہ محنت ایک ،،جن سنوائی،،پروگرام کا انعقاد کرے گا ٹھیکہ مزدوروں کے مفاد کو یقینی بنا نے اور لا ئسنس شدہ ایجنسیوں کے طریقہ کار کی دیکھ بھال کیلئے ان ایجنسیوں کا ریکارڈ اکھٹا کیا جارہا ہے۔محکمہ محنت تعمیری مزدوروں کے رجسٹریشن کیلئے سبھی لیبر چیک پر20،اپریل سے رجسٹریشن کیمپ کا انعقاد کرے گا۔رجس ٹریشن کے بعد تعمیری مزدوروں کو مختلف فائدے ،،تعمیری مزدور ترقیاتی فنڈ،، سے دئے جا ئیں گے اس منصوبے کا فائدہ18سے60سال کی عمر کے ان غیر منظم مزدوروں کو ملے گا جو تین سال سے دہلی میں رہا ئش پذیر ہیں۔اہل مستفدین کو کم از کم1000روپے اور زیادہ سے زیادہ12,000روپے ہر سال تعا ون کریں گے جس کی ادائیگی قسطوں میں کیا جا سکتا ہے،ہر ایک قسط100روپے سے کم نہیں ہو گی۔مر کزی حکو مت بھی ہر سال مستفید ہو نے والوں کو1000روپے کا تعا ون دیتی ہے جو صرف چار سالوں کیلئے ہو تا ہے دہلی حکو مت ہر سال استفادہ کر نے والے کو1000روپے کا تعا ون دیتی ہے جو 25سال کیلئے ہے۔

پرویز میاں کی دہلی کے عازمین حج کا کوٹہ بڑھانے کی اپیل
نئی دہلی،1اپریل(پریس ریلیز) آج حج سے جڑی تنظیموں نے اور ریزرو کیٹگری کی وہ عازمین جن کا نام قرعہ اندازی میں نہیں آیا ان لوگوں نے دہلی اسٹیٹ حج کمیٹی کے چیرمین ڈاکٹر پرویز میاں سے ملاقات کی ، ان سے کوٹہ کی کمی کے سبب ریزرو کیٹگری کے بچے ہوئے عازمین حج کو بھیجنے کی درخواست کی۔ ڈاکٹر پرویز میاں نے ان لوگوں سے کہا کہ وہ دہلی کے عازمین حج کا کوٹہ بڑھوانے کی مسلسل کوشش کر رہے ہیں اور اسی سلسلے میں انہوں نے وزیراعظم جناب نریندر مودی، وزیر خارجہ محترمہ سشما سوراج، وزیر اعلیٰ دہلی جناب اروند کیجریوال، نائب وزیر اعلیٰ دہلی جناب منیش سسودیا اور حج کمیٹی کے چیرمین جناب قیصر شمیم کو مکتوب روانہ کیا ہے اور دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ جناب منیش سسودیا ، حکومت دہلی میں وزیر خوراک و رسد عاصم احمد خان ، دہلی کے وزیر قانون و محکمہ داخلہ جناب جتیندر سنگھ تومر اور وزارت خارجہ کے جوائنٹ سکریٹری حج جناب اجیت گپتے سے ملاقات کرکے ان سے بھی دہلی کے عازمین حج کو کم سے کم 1500مزید سیٹیں آلاٹ کرانے کی گذارش کی ہے۔ ڈاکٹر پرویز میاں نے کہا کہ دہلی کا کوٹہ بڑھوانے کے لیے ہم سب کو مکتوب بھیج چکے ہیں کافی ملاقاتیں بھی کر رہے ہیں اگر کوٹہ بڑھانے کے ہمارے مطالبے کو تسلیم نہیں کیا گیا تو ہم حج سے منسلک تمام رضاکار تنظیموں اور ہزاروں عازمین حج کے ساتھ پُر امن احتجاج کریں گے اور تب بھی بات نہیں بنی تو ہم بھوک ہڑتال کرینگیں۔اس موقع پر موجود سبھی رضاکار تنظیموں نے ڈاکٹر پرویز میاں کو اپنی حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ دہلی کے عازمین حج کا کوٹہ بڑھوانے کی تحریک میں وہ شانہ بہ شانہ ان کے ساتھ ہیں۔

شکر پور تھانے کی حوالات میں نوجوان کی پر اسرا موت
امیر احمد راجہ
نئی دہلی،یکم،مارچ(ایس ٹی بیورو) مشرقی ضلع کے شکر پور تھانے کے لاک اپ میں کل رات ایک نوجوان کی پر اسرار موت کا معا ملہ روشنی میں آیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ مر حوم نے اپنے پا جا مے کے ناڑے سے پھا نسی کا پھندہ لگاکر خود کشی کی ہے۔مو صولہ اطلا عات کے مطا بق میاں بیوی میں ہو ئے ایک جھگڑے کے بعد پولیس نے بیوی کی شکا یت پر میاں کو بند کیا تھا۔پولیس اس معا ملے میں خمو شی اختیار کئے ہو ئے ہے۔پولیس ذرائع سے ملنے والی اطلا عات کے مطا بق مر نے والے کا نام سشیل ہے جو شکر پور علا قے کا رہنے والا بتایا جاتا ہے۔بتایا جاتا ہے کہ سشیل کا اپنی بیوی سے آئے دن جھگڑا رہتا تھا،کل رات بھی دونوں میں جھگڑا ہوا تھا۔اسکی بیوی نے کال کر پولیس کو بلا لیا تھا۔بیوی کی شکایت پر پولیس سشیل کو پکڑ کر تھا نے لے گئی اور بند کر دیا۔رات کو پتہ چلا کہ اسکی موت ہو گئی۔شکر پور پولیس نے جو کہا نی بتائی ہے اس کے مطا بق رات کو سشیل نے پولیس والوں سے کھا نا مانگا تھا ۔جب اسے کھا نا دے دیاگیا تو اسنے اور کھانا مانگا اسی بات لو لے کر اسکی پولیس والوں سے کچھ بات ہو گئی اس نے پولیس والوں کو گا لیاں دیں اس کے بعد اسے اور کھا نا لاکر دے دیا گیا اس در میان اس نے اپنے پا نا مے کے ناڑے سے گلے میں پھندا لگا کر خود کشی کر لی۔حوالات میں موت کی خبر سے تھا نے میں افرا تفری مچ گئی سینئر پولیس افسران بھی تھا نے پہنچ گئے۔رات کو ہی پولیس اسے ایک نزدیکی اسپتال لے کر گئی جہاں ڈاکٹروں نے اس کی موت کی تصدیق کردی۔فی الحال پولیس نے لا ش کوپو سٹ مارٹم کیلئے بھیج دیا ہے۔

آپ کے سابق لوک پال رام داس کا میل لیک، پارٹی پر اٹھائے سوال
نئی دہلی یکم اپریل(آئی این ایس انڈیا)عام آدمی پارٹی کے لوک پال کے عہدے سے ہٹائے گئے ایڈمرل رام داس کا میل لیک ہو گیا ہے۔یہ ای میل اصل میں پارٹی کے سیکرٹری پنکج گپتا اور ایڈمرل رام داس کے درمیان گزشتہ دو دو دنوں میں ہوئی میلنگ کا نتیجہ ہے۔ایڈمرل رام داس نے سب سے پہلے پارٹی سے پوچھا کہ’’ آپ ‘‘بتائیں کہ میرا عہد کب ختم ہوا؟ ایڈمرل رام داس کا کہنا ہے کہ مجھے پارٹی نے لوک سبھا انتخابات کے دوران مارچ-اپریل 2014میں یوپی اور ہریانہ کے کچھ امیدواروں کی جانچ کرائی،کیا وہ قانونی تھا؟َ۔(کیونکہ پارٹی دسمبر 2013میں مدت ختم ہونے کی دلیل دے رہی ہے)۔میل میں رام داس یاد دلا رہے ہیں کہ جنوری 2015میں دہلی انتخابات کے لئے 12امیدواروں کی جانچ کا کام بھی مجھے دیا گیا اور میں نے وہ پرچہ بھرنے کے وقت سے پہلے مکمل کیا۔رام داس نے کہا کہ میں حیران رہ ہوں، لاعلم ہو اور یہ میری سمجھ سے باہر ہے۔رام داس کے مطابق ان کا دور اقتدار نومبر 2013سے تین سال بڑھا کر نومبر 2016تک کر دیا گیا ہوگا اس لئے وہ پارٹی کے لئے کام کرتے رہے۔رام داس نے کہا کہ پارٹی نے کئی مواقع پر میرے کاموں کی تعریف کی اس لئے یہ صحیح ہوتا کہ پارٹی نئے لوک پال کومقرر کرنے سے پہلے مجھ سے مشورہ کرتی یا مجھے مطلع کرتی،اس کے بجائے مجھے الیکٹرونک میڈیا سے یہ سب پتہ چلا۔عام آدمی پارٹی پہلے ہی میڈیا سے دوری بنا کر کوئی بیان کسی بھی ایسے معاملے پر نہیں دے رہی ہے اس لئے پارٹی کا موقف اس کہانی میں شامل نہیں ہے۔

مسلم مسائل پر سنجیدگی سے رائے عامہ ہموار کی جائے:زید بخاری
دہلی ،یکم اپریل(پریس ریلیز) آل انڈیا علماء کونسل کے زیر اہتمام پانچ اپریل کو منعقد ہونے والے مسلم بیداری کنونشن کی تیاری کے سلسلے میں کیلا بھٹہ میں ایک اہم میٹنگ کاانعقاد کیا گیا جس کی صدارت قاضی شہر مولاناکے۰زید۰ بخاری نے کیا میٹنگ کو خطاب کرتے ہوئے آل انڈیا علماء کونسل کے قومی جنرل سیکریٹری مولانا بخاری نے کہا کہ ملت کی زبو ں حالی مسلم لیڈرشپ کی نا عاقبتا نہ فیصلوں کی مرہون منت ہے انہو نے کہا کہ آج ضرورت ہے ۶۵ سالہ پرانی فرسودہ مسلم قیادت کو ترک کرتے ہوئے قیادت میں تبدیلی لائی جائے تب ہی مسلمانوں کی فلاح و بہبود ممکن ہے قاضی شہر نے مزید کہا کہ علماء کونسل کے اراکین کی درخواست پراور ملت کی زبوں حالی سے متاثر ہو کر مولانا اعجاز احمد خان رزاقی نے مرکزی و ریاستی سرکاروں کو آڑے ہاتھوں لینے کیلئے کمر بستہ ہو گئے ہیں ضرورت ہے کہ انکا ہر ممکن تعاون کیا جائے مولانا اعجاز احمد خان رزاقی نے ملت کو متحد کرنے اور انکے مسائل پر سنجیدگی سے رائے عامہ ہموار کرنے کی تحریک چلا رہے ہیں۔ اسلئے ہمیں انکو طاقت دینے کیلئے کثیر تعداد میں مسلم بیدار ی کنو نشن میں شرکت کرنی چاہئے میٹنگ میں علاقائی کونسلر مومن قریشی،چودھری شاہد،الحاجد اللطیف ، مولانا قمیر الظفر بخاری،مبین سلمانی، قاری محمد علی ،عمران عباسی، سلیم ملک، شمشاد ادریسی،قاری ممنون عالم پورنوی وغیرہ کے علاوہ بہت سے لوگوں نے شرکت کی۔

پرا نی دہلی میں ناجائز تعمیرات سے لوگوں کا جینا ہوا محال
بہت سے علا قوں میں کھلے عام فلیٹ اور مار کیٹیں بنا نے کا کام زورو شور سے جاری
امیر احمد راجہ
نئی دہلی،یکم ،اپریل(ایس ٹی بیورو) راجد ھانی میں نا جائز تعمیرات کا کریز دن بہ دن بڑھتا چلا جارہا ہے خصو صاًپرا نی دہلی کے گنجان آباد علا قوں میں اس کا اثراسقدر بڑھ چکا ہے کہ اس نے پوری پرا نی دہلی کو اپنی گر فت میں لے لیا ہے۔اگر ایک طرح سے دیکھا جائے تو یہاں پر بلڈر ما فیا کا راج چل رہا ہے ،ہر روز نئی نئی مار کیٹیں اور فلیٹ تعمیر کئے جا رہے ہیں جنہیں کو ئی رو کنے والا نہیں ہے ۔اگر لوگوں کی ما نیں تو اس سب کے پیچھے میو نسپل افسران، مقا می پولیس اور علا قہ کو نسلران کا ہاتھ بتایا جا تا ہے۔حالانکہ میو نسپل کار پوریشن و قت وقت پر ناجائز تعمیرات کے خلاف ایکشن پلان بنا تی رہی ہے لیکن اس پر عمل ایک بار بھی نہیں کیا گیا ۔حالانکہ اس مسئلے پر وارڈ افسروں سے لے کراسپیشل ٹا کس فورس تک بنائی جا چکی ہے ۔مزے کی بات یہ ہے جب جب نا جائز تعمیرات کو لے کر کو ئی قدم اٹھا یا گیا ہے اس میں اور اضا فہ ہوا ہے اور تیزی آئی ہے۔آج پرا نی دہلی کی ہر گلی اور کو چے میں کھلے طور پر نا جا ئز تعمیرات کا کام کھلے عام جاری ہے۔ہر گلی میں نا جائز فلیٹ اور مار کیٹیں بنا نے کا کام رات دن دھڑلے سے جاری ہے۔ناجائز فلیٹ اور مارکیٹوں کی تعمیر سے جہا ں ایک طرف آبادی میں اضا فہ ہو رہا ہے وہیں دوسری طرف پریشا نیوں میں بھی اضا فہ ہو رہا ہے ۔پرا نے علا قوں میں بڑھتے ہو ئے آبادی کے بوجھ سے بجلی ،پانی اور سیور کی پر یشانیوں میں بھی اضا فہ ہوا ہے۔پرا نے علا قوں کی سیور لا ئن اور واٹر لا ئن وہی پرا نی طرز کی ڈلی ہوئی ہیں جسے بڑی ڈالنے کیلئے نیچی اور گہری کھدائی کی ضرورت ہوگی جس...


Advertisment

Advertisment