Today: Thursday, November, 23, 2017 Last Update: 03:49 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

Latest News

مظاہرہ کے بہانے کیجریوال پر حملہ کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا

مظاہرہ کے بہانے کیجریوال پر حملہ کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا

 
نئی دہلی ،9ستمبر ( ایس ٹی بیوو)دہلی اسمبلی کے خصوصی اجلاس کے دوران آج اے اے پی کے ممبر ان اسمبلی نے گذشتہ روز پنجاب روانہ ہونے وقت عام آدمی پارٹی کے رہنما اور وزیراعلیٰ اروند کیجری وال کا نئی دہلی ریلو ے اسٹیشن پر گھیراﺅ کئے جانے کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ ایک منصوبہ بند سازش کے تحت مظاہرہ کے بہانے کیجری وال پر حملہ کا منصوبہ تیار کیا گیا تھا۔اے اے پی کے ممبر اسمبلی نتن تیاگی نے کہا کہ اسٹیشن پر اتنے زیادہ مظاہرین جمع ہو جائیں اور پولس کوبھنک تک نہ لگے ایسا کیسے ہو سکتا ہے۔ انہوں نے دہلی پولس کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کیجری وال کے پنجاب جانے سے قبل ہی ان کی سیکورٹی سے متعلق جانکاری لیک کر دی گئی تھی۔انہوں نے پولس کے خلاف جانچ کمیٹی تشکیل دینے کا مطالبہ کیا کیونکہ ریلوے اسٹیشن پر کیجری وال کے ساتھ دھکا مکی ہوئی لیکن دہلی پولس اور ریلوے پولس کی جانب سے کوئی سیکورٹی موجود نہیں تھی۔تیاگی نے الزام لگایا کہ ایسا لگتا ہے کہ بی جے پی کے لوگ کیجری وال کو مروانا چاہتے ہیں ۔ ممبر اسمبلی سریتا سنگھ نے کہا کہ دہلی پولس مرکز کے اشارے پر کام کر رہی ہے اسی لئے ان کی سیکورٹی میں چوک کی گئی ۔ کیا یہ وزیر اعلیٰ کو مروانے کی سازش ہے ؟دنیش موہنیا نے کہاکہ پولس جان بوجھ کر ان کی سیکورٹی میں کوتاہی برت رہی ہے اور انہیں خدشہ ہے کہ ان کا انکاﺅنٹر بھی کیا جا سکتا ہے۔ اس پر بی جے پی کے وجیندر گپتا نے جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ کیجری وال تو خود ہی سیکورٹی نہیں چاہتے تھے بلکہ وہ سیکورٹی اہلکاروں کو جاسوس کہتے تھے۔انہوں نے کہاکہ کیجری وال اور ان کی پارٹی کے لوگ دوسروں کے خلاف توخوب دھرنے اور مظاہرے کرتے ہیں اور جب ان کے خلاف ہوتے ہیں تواسے حملہ بتانے لگتے ہیں ۔
 
...


Advertisment

Advertisment