Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 05:10 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

وارنر کے سامنے انگریزوں نے گھٹنے ٹیکے

 

سہ رخی سیریز کے پہلے میچ میں تین وکٹ کی جیت سے ساتھ آسٹریلیا نے حاصل کیا بونس،کپتان مورگن کی محنت رائیگاں
سڈنی ،16 جنوری (یو این آئی) اوپنر ڈیوڈ وارنر (127) کی شاندار سنچری اور اس سے پہلے بولر مشل اسٹارک اور جیمز فاکنر کی بہترین بولنگ سے آسٹریلیا نے روایتی حریف انگلینڈ کے خلاف جمعہ کو یہاں سہ رخی سیریز کے پہلے ون ڈے میچ میں تین وکٹ کی جیت کے ساتھ بونس پوائنٹس بھی حاصل کر لیا۔میزبان ٹیم نے 39.5اوورز میں ہی سات وکٹ پر انگلینڈ سے ملے 235رنز کے ہدف کو حاصل کر کے جیت درج کر لی۔ آسٹریلیا کی جانب سے ہدف کا تعاقب کرنے میں اکیلے وارنر کی کردار رہا جنہوں نے 115گیندوں میں 18 چوکے لگا کر 127 رن بنائے ۔ سڈنی کرکٹ گراؤنڈ پر انگلینڈ کے خلاف کھیلے گئے 22 میچوں میں آسٹریلیا کی جانب سے سنچری بنانے والے وارنر میزبان ٹیم کے پہلے کھلاڑی ہیں ۔اس کے علاوہ ٹیسٹ کپتان اسٹیون اسمتھ نے 47 گیندوں میں دو چوکے اور ایک چھکا لگا کر 37 رنز کی دوسری بڑی اننگز کھیلی آسٹریلیا نے 40 اوورز کے اندر اندر کامیابی حاصل کی جس کے لئے اسے بونس سمیت پانچ پوائنٹس ملے ۔ انگلینڈ کی اننگز میں 8.5 اوور میں 42 رن پر چار وکٹ لینے والے اسٹارک کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔ انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 47.5 اوورز میں 234 رنز بنائے تھے ۔آسٹریلیا کے سامنے اگرچہ 235رن کا ہدف تھا لیکن وارنر کو چھوڑ کر ٹیم کا دیگر کوئی بلے باز لمبی اننگز نہیں کھیل سکا۔ وارنر نے یک طرفہ انداز میں انگلش گیند بازوں کی دھنائی کرتے ہوئے 115 گیندوں میں 18چوکے لگا کر 127رنز بنائے ۔وارنر نے اپنے 50رن48 گیندوں میں آٹھ چوکوں کے سہارے پورے کئے جبکہ ان کے 100رنز97 گیندوں میں 14چوکوں کی مدد سے پورے ہوئے ۔ وارنر 39 ویں اوور کی چوتھی گیند پر جب ٹیم کے 227کے اسکور پر آؤٹ ہوئے تو اس وقت ہدف صرف آٹھ رن دور رہ گیا تھا ۔ بریڈ ہیڈن 16 رن بنانے کے بعد 40 ویں اوور کی چوتھی گیند پر رن آؤٹ ہو گئے ۔ اس وقت ٹیم کا اسکور 233 رنز تھا۔ تب ایسا لگا کہ آسٹریلیا شاید بونس پوائنٹس حاصل نہ کر پائے ۔ لیکن جیمزفاکنر نے پانچویں گیند پر دو رن لے کر جیت کی خانہ پری کر لی۔28 سالہ وارنر نے اپنی تیسری ون ڈے سنچری 51 میچوں میں بنائی ۔ وارنر مین آف دی میچ کے اہم دعویدار تھے لیکن اسٹارک کو انگلینڈ کی اننگز کے پہلے اوور میں دو وکٹ اور آخری اوور میں دو وکٹ لینے کے کھیل کی بدولت مین آف دی میچ کا ایوارڈ مل گیا۔آسٹریلیا کی جانب سے آرون فنچ نے 15، شین واٹسن نے 16 ،اسٹیون اسمتھ نے 37،کپتان جارج بیلي نے 10اور ہیڈن نے 16رن بنائے ۔ انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس نے آٹھ اوور میں 40رن دے کر چار وکٹ حاصل کئے ۔اس سے پہلے کپتان ایون مورگن کی 121 رن کی اننگز نے انگلینڈ کو 234 رن کے باعزت اسکور تک پہنچایا ۔آسٹریلوی گیند بازوں کے سامنے اکیلے مورگن ہی وکٹ پر ٹک سکے جبکہ چھ بلے باز دہائی کے ہندسے میں بھی نہیں پہنچ پائے ۔انگلش کپتان نے ساتویں ون ڈے سنچری لگائی اور 136 گیندوں میں 11 چوکے اور تین چھکے لگائے ۔ اس کے علاوہ جوس بٹلر نے 28رن بنائے جو ٹیم کا دوسرا بڑا اسکور رہا۔ اوپننگ آرڈر تو مکمل طور پر ناکام رہا اور مشق میچوں میں زبردست مظاہرہ کرنے والے ایان بیل (صفر) ،جیمز ٹیلر (صفر ) اور معین علی (22. کے اسکور پر پویلین لوٹ گئے ۔مورگن اور بٹلر نے چھٹے وکٹ کے لیے 67 رنز کی اہم شراکت کی۔ مورگن نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا لیکن اسٹارک نے پہلی ہی تین گیندوں پر دو وکٹ نکال کر انگلینڈ کو زبردست جھٹکے دئے اس سے ٹیم آخر تک نکل نہیں سکی ۔ انگلینڈ نے اپنے تین وکٹ محض 12 رن پر، چار وکٹ 33رن پر اور پانچ وکٹ 69رن پر گنوا دیے تھے ۔ تیز گیند باز اسٹارک 42رنز پر سب سے زیادہ چار وکٹ لے کر سب سے کامیاب رہے ۔ا سٹارک نے اننگز کی پہلی تین گیندوں میں ایان بیل اور جیمز ٹیلر کو صفر پر چلتا کیا اور پھر انہوں نے48 ویں اوور میں چوتھی اور پانچویں گیندوں پر مورگن اورا سٹیون فن کے وکٹ لے کر انگلش اننگز سمیٹ دی۔فاکنر نے 10اوورز میں 47 رنز دے کر تین وکٹ لیے ۔ انہوں نے معین علی22،جوس بٹلر28اور کرس جارڈن17 کو آؤٹ کیا ۔ پیٹ کمنس ،گلین میکسویل اور جیویر ڈوھرتي کو ایک ایک وکٹ ملی۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment