Today: Sunday, September, 23, 2018 Last Update: 05:19 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

یونس خان اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے درمیان زبانی جنگ تیز

 

لاہور، 27 ستمبر(یو این آئی)پاکستانی ون ڈے ٹیم سے یونس خان کے اخراج کے بعد پاکستان کے سرکردہ بلے باز یونس خان اور پاکستان کرکٹ بورڈ کے درمیان زبانی جنگ تیز ہوگئی ہے۔یونس خان نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ کئے گئے سینٹرل کنٹریکٹ پر اپنے دستخط سے انکار کردیا، جبکہ پاکستان کرکٹ بورڈ کا الزام ہے کہ ماہانہ پانچ لاکھ روپے لینے والا کرکٹ کھلاڑی یونس خان غلط بیانی سے کام لے رہا ہے۔پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ یونس خان نے ٹیم میں اے زمرہ ملنے کے بعد اس سال سات جولائی کو سینٹرل کنٹریکٹ کے دو سو صفحات پر دستخط کئے تھے اور انہیں بورڈ کے حوالے کیا تھا۔دوسری جانب یونس خان کا کہنا ہیکہ سینٹرل کنٹریکٹ کا پانچ سو صفحات پر مشتمل مسودہ بار بار مانگنے کے باوجود انہیں فراہم نہیں کیا گیا ۔ انہو ں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے وجہ بتاؤ نوٹس سے بھی لاعلمی کا اظہار کیا۔ یونس خان نے کہا کہ سلیکٹرز اور بورڈ والے میری پتلون اتارتے ہیں اور اوپر سے کہا جاتا ہے کہ دل کی بات بھی میڈیا کے ذریعے قوم سے نہ کروں یونس خان نے کہا چیئرمین شہریار خان کی ماضی میں کرسی میری وجہ سے نہیں گئی اگر ان کے دل میں ایسی کوئی بات ہے تو ان سے بھی معافی مانگتا ہوں ان کی وجہ سے ٹیم کا نائب کپتان بنا پھر طویل عرصے تک قومی ٹیم کا کپتان رہا۔ نیشنل اسٹیڈیم میں انہوں نے کہا کہ وسیم اکرم، وقاریونس اور معین خان ریٹائرمنٹ کے بغیر کرکٹ چھوڑ گئے۔ انہیں بھی اسی طرح زبردستی بھیجا گیا تھا۔ اب وہی سین ان کے سامنے ری پلے ہو رہا ہے تو وہ اس پر میرا ساتھ کیوں نہیں دیتے۔ میری پتلون اتار کر مجھے کھلائیں گے تو اس سے نہ ہی کھلائیں تو بہتر ہے۔جس طرح میرے ساتھ ہو رہا ہے اس طرح تو ملک کے لیے کوئی بھی کھیلنے کو تیار نہیں ہو گا جونیئرز بھی دور بھاگیں گے۔

...


Advertisment

Advertisment