Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 10:18 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

شکست کے دلدل سے نکل کر ٹیم انڈیانے بچائی لاج

 

آسٹریلیا کا بارڈر گواسکر ٹرافی پر قبضہ ،کنگارو کپتان اسمتھ مین آف دی میچ و سیریز دو نوں لے اڑے

سڈنی 10 جنوری (یو این آئی) سلامی بلے باز مرلی وجے (80) کی عمدہ اننگز کے بعد اجنکیا رہانے (ناٹ آوٹ 38) کی ذمہ دارانہ کارکردگی کی بدولت ہندوستان نے نازک لمحات سے باہر نکالتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف چوتھا اور آخری ٹسٹ ہفتہ کو ڈرا کراکر اپنی عزت بچا لی۔ چوتھا ٹیسٹ اگرچہ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہوا لیکن سیریز آسٹریلیا نے0۔2اپنے نام کی۔ ہندوستان کو میچ جیتنے کے لیے 349 رن کا ہدف ملا تھا اور اس نے میچ ختم ہونے تک5ء89 اوور میں سات وکٹ پر 252 رن بنائے۔ آسٹریلیا نے اس طرح 15۔2014 کی بارڈرگاوسکر ٹرافی اپنے قبضے میں کر لی۔ دن کے آخری سیشن میں جب لازمی اوور کیلئے آخری گھنٹے کا کھیل شروع ہوا تو اس دوران ہندوستان کا ساتواں وکٹ 217 کے اسکور پر گر چکا تھا اور ایسا لگ رہا تھا ہندوستان کے لیے اس میچ کو بچا پانا کافی مشکل ثابت ہو گا۔لیکن تعریف کرنی ہوگی رہانے اور بھونیشور کمار کی جنہوں نے سات آٹھ فیلڈروں سے گھرے رہنے کے باوجود وکٹ پر جمے رہنے میں غضب کا حوصلہ دکھایا اور آسٹریلیا کو کوئی موقع نہیں دیا۔ دونوں بلے بازوں نے بے حد محتاط انداز میں کھیلتے ہوئے ایک ایک اوور نکالا۔ اس دوران ڈریسنگ روم میں تمام ہندوستانی کھلاڑیوں کے چہرے پر تناؤ نظر آرہا تھا لیکن جب آخری تین اوور بچ گئے تو ایک ایک گیند گزرنے کے ساتھ ساتھ ڈریسنگ روم میں تمام ہندوستانی کھلاڑی تالیاں بجاتے رہے۔ آخری اوور ناتھن لیون کے ہاتھوں میں تھا اور کریز پر بھونیشور کمار تھے۔میرٹھ کے اس بہترین آل راؤنڈر نے لیون کو کوئی موقع نہیں دیا اور پانچویں گیند پر چوکا لگا دیا۔ میچ میں ایک گیند باقی رہتے آسٹریلیا کے کپتان اسٹیون اسمتھ نے ہندوستانی کھلاڑیوں سے ہاتھ ملایا اور میچ ڈرا پر ختم ہوا۔ ہندوستان نے سات وکٹ پر 252 رن بنائے اور ہندوستانی بلے باز رہانے( 38) اور بھونیشور (20) رن پر ناٹ آؤٹ رہے۔ میچ کے شروع ہونے سے پہلے میزبان آسٹریلیا نے اپنی اننگز کو کل کے چھ وکٹ پر 251 رن کے اسکور پر ڈکلیئر کر دیا تھا اور ہندوستان کے سامنے پانچویں اور آخری دن فتح کے لیے 349 ر ن کا ہدف رکھا۔ سڈنی کی فلیٹ پچ پر ایک وقت ہندوستان کے لیے یہ ہدف ناممکن نہیں لگ رہا تھا اور ٹیم انڈیا کے بلے بازوں نے دوسری اننگز کی مضبوط شروعات کی اور چائے کے وقفے تک اس نے دو وکٹ کے نقصان پر 160 رن بنا لیے۔ پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے لوکیش راہل کو 16 رن کے ذاتی اسکور پر اسپنر ناتھن لیون نے وارنر کے ہاتھوں کیچ کرا کے ہندوستان کو پہلا جھٹکا دیا ۔ راہل نے 40 گیندوں میں تین چوکے لگائے۔ راہل کے آؤٹ ہونے کے بعد سلامی بلے باز مرلی اور دوسری طرف روہت شرما نے مورچہ سنبھالا۔ مرلی نے 165 گیندوں میں سات چوکے اور دو چھکے لگا کر 80 رن کی اہم اننگز کھیلی۔ مرلی نے پہلے وکٹ کے لیے راہل کے ساتھ 48 اور پھر دوسرے وکٹ کے لیے روہت کے ساتھ 56 رن کی اہم ساجھیداری نبھائی اور ہندوستان کی امید کو بنائے رکھا۔ لیکن واٹسن کی گیند پر کپتان اسمتھ نے روہت شرما (39) کو کیچ آؤٹ کراکے ان کی شراکت پر بریک لگایا۔ روہت نے اپنی 90 گیندوں کی اننگز میں دو چوکے اور دو چھکے لگائے۔ اس کے بعد چائے کے وقفہ تک مرلی اور کپتان وراٹ کوہلی نے رن بنانا جاری رکھا۔ وراٹ نے ایک بار پھر ٹیم کے لئے اہم اننگز کھیلی او 95 گیندوں میں تین چوکوں کی مدد سے 46 رن بنائے۔ انہوں نے مرلی کے ساتھ تیسرے وکٹ کے لیے 74 رن کی سب سے بڑی شراکت ادا کی۔ آسٹریلیا کے دورہ پر سیریز میں وراٹ کے بعد دوسرے سب سے زیادہ رن بنانے والے ہندوستانی بلے باز مرلی تیسرے بلے باز کے طور پر جوش ہیزل وڈ کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔ اگرچہ اس سے پہلے مرلی ہیزل وڈ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہونے سے بال بال بچے۔ لیکن پھر رن بنانے کی کوشش کر رہے مرلی جوش کی 134 کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار کی گیند کو کھیل بیٹھے اور گیند سیدھے بریڈ ہیڈن کے ہاتھوں میں آ گئی۔ ہندوستان اس وقت 178 رن بنا پایا تھا۔
پہلی اننگز میں آٹھویں بلے باز کے طور پر 50 رن کی اہم اننگ اننگز کھیلنے والے روی چندرن اشون اہم موقع پر کارگر ثابت نہیں ہوئے اور ساتویں بلے باز کے طور پر 01 رن بنا کر پویلین لوٹے۔ایک سرے پر ٹکے ہوئے رہانے اور نویں نمبر کے بلے باز بھونیشور نے دن کا کھیل مکمل ہونے تک محتاط انداز میں کھیلتے ہوئے رن بنائے اور پچ پر جمے رہے۔ رہانے نے 88 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر ناٹ آؤٹ 38 رن جبکہ بھونیشور نے ناٹ آوٹ 20 رن میں تین چوکے لگائے۔دونوں بلے بازوں نے آٹھویں وکٹ کے لیے 35 رن کی ناٹ آوٹ ساجھیداری نبھا ر میچ ڈرا کرایا۔

 

...


Advertisment

Advertisment