Today: Thursday, November, 15, 2018 Last Update: 03:56 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

وراٹ کے پاس رہے گا نمبر ون بننے کا موقع

 

دبئی، 09 جنوری (یو این آئی) ملک کے اسٹار کھلاڑی وراٹ کوہلی آئی سی سی کی تازہ ترین ون ڈے رینکنگ میں چوٹی کے ہندوستانی بلے باز کے طور پر دوسرے نمبر پر ہیں اور ان کے پاس اس ماہ آسٹریلیا اور انگلینڈ کے ساتھ ہونے والی سہ رخی سیریز میں دنیا کا نمبر ایک بلے باز بننے کا موقع رہے گا۔ دھونی کے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بعد ہندوستانی ٹسٹ ٹیم کی کپتانی کر رہے وراٹ اس وقت زبردست فارم میں ہیں اور ون ڈے بلے بازی کی درجہ بندی میں وہ 862 درجہ بندی پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہیں۔ وہ درجہ بندی میں سر فہرست ہندوستانی بلے باز ہیں جبکہ شکھر دھون اور کپتان مہندر سنگھ دھونی ٹاپ 10 کھلاڑیوں میں شامل ہیں۔درجہ بندی میں خراب فارم میں چل رہے شکھر دھون 777 پوائنٹس کے ساتھ پانچویں اور دھونی 738 پوائنٹس کے ساتھ 10 ویں نمبر پر ہیں۔ آئی سی سی رینکنگ میں دنیا کے ٹاپ بلے بازوں میں جنوبی افریقہ کے اے بی ڈیولیرس 887 پوائنٹس کے ساتھ نمبر ون بلے باز ہیں اور ان کے اور وراٹ کے درمیان صرف 25 درجہ بندی پوائنٹس کا فاصلہ ہے۔ بولنگ رینکنگ میں ٹیم انڈیا کے دو کھلاڑی ہی ٹاپ 10 میں شامل ہو پائے ہیں۔ تیز گیند باز بھونیشور کمار 641 پوائنٹس کے ساتھ آٹھویں اور زخمی رویندر جڈیجہ 638 پوائنٹس کے ساتھ نویں نمبر پر ہیں ۔ ہند آسٹریلیا اور انگلینڈ کے درمیان اسی ماہ سے سہ رخی سریز کھیلی جانی ہے اور اس سے کھلاڑیوں کی درجہ بندی میں کچھ تبدیلی آ سکتی ہے جبکہ اتوار سے نیوزی لینڈ اور سری لنکا کے درمیان سات ون ڈے میچوں کی سیریز کھیلی جانی ہے۔
 

ہند۔آسڑیلیاکے درمیان ٹسٹ کے دوران اسپائڈر کیم پر تنازعہ

سڈنی، 9 جنوری (یو این آئی)ہندوستان اور آسٹریلیاکیدرمیان یہاں جاری چوتھے اور آخری ٹسٹ کے دوران آسٹریلیائی کھلاڑیوں نے اپنی ناقص فیلڈنگ کا غصہ اسپائڈر کیم پر نکالنا شروع کردیا ہے۔اسپائیڈرکیم مختلف تاروں پر لٹکا ہوا ایک مخصوص کیمرہ ہوتاہے، جو نشریات کار کو میدان کا شاندار طائرانہ منظر پیش کرنے میں مدد دیتا ہے۔ اگر گیند اس کیمرے، یا تاروں، سے ٹکرا جائے تو قانون کے تحت ڈیڈبال کہلاتی ہے لیکن امپائروں نے ایسا کوئی فیصلہ نہیں دیا۔اسٹیون اسمتھ، جو پہلے ہی رن آؤٹ کا آسان موقع ضائع ہونے کے بعد ناخوش تھے، اس کیچ کے گرنے کے بعد سخت مایوس دکھائی دیے اور ان کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے لیے یہی بات کافی تھی کہ راہل نے بعد میں سنچری بنا ڈالی۔ راہل 262 گیندوں پر 13 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 110 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ انہوں نے کپتان وراٹ کوہلی کے ساتھ مل کر تیسری وکٹ پر 141 رنز کا اضافہ کیا اور جب تک یہ شراکت داری جاری تھی، ہندستان مقابلے میں بہترین مقام پر تھا البتہ ان کے بعد ہندستان کو اجنکیا راہانے اور سریش رینا کی وکٹیں بہت جلد گنوانا پڑیں اور ہندستان نے دن کا اختتام 5 وکٹوں پر 342 رنز کے ساتھ کیا۔

 

...


Advertisment

Advertisment