Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 01:51 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ایس سی جی پر بھی منڈلایا شکست کا خطرہ

 

گیندبازوں نے ٹیم انڈیا کو بیک فٹ پر بھیجا، آسٹریلیا کو 348رنوں کی برتری ،بلے بازوں پر میچ بچانے کا دباؤ
سڈنی9جنوری(آئی این ایس انڈیا)ہندوستان کے گیند بازوں نے آسٹریلیا کے خلاف چوتھے اور آخری ٹیسٹ کرکٹ میچ کے چوتھے دن آج چائے کے وقفے کے بعد 213رنز لٹائے اور ٹیم کو آخری دن کی مشکل وکٹ پر میچ بچانے کے چیلنج کی پوزیشن میں دھکیل دیا۔آسٹریلیا نے پہلی اننگز 97رنز کی برتری حاصل کرنے کے بعد چوتھے دن کا کھیل ختم ہونے تک پہلی اننگز میں 40اوورز میں چھ وکٹ پر 251رنز بنائے اور اس طرح سے اس کی مجموعی برتری 348رنز ہو گئی ہے۔پورا امکان ہے کہ وہ کل اسی اسکور پر اننگز ڈکلیئر کرکے ہندوستان کو آخری دن ایسی پچ پر میچ بچانے کا چیلنج دے گا جو کافی ٹرن لے رہی ہے۔ہندوستان کی مایوس کن گیند بازی کا عالم یہ تھا کہ فاسٹ بولر امیش یادو نے صرف تین اوورز میں 45رنز لٹا دئے اگرچہ آر اشون نے 105رنز دے کر چار وکٹ لئے جو غیر ملکی سرزمین پر انکی بہترین کارکردگی ہے۔ہندوستان نے صبح پانچ وکٹ پر 342رن سے آگے کھیلتے ہوئے کپتان وراٹ کوہلی(147)کا وکٹ پانچویں اوور میں گنوا دیا جس سے اس پر فالوآن کا خطرہ منڈلانے لگا لیکن اشون(50)، رددھمان ساہا(35)اور بھونیشور کمار نے ڈٹ کر بلے بازی کرتے ہوئے ٹیم سے یہ خطرہ ٹالا۔اشون کو سڈنی کے وکٹ سے جس طرح سے مدد مل رہی تھی اسے دیکھتے ہوئے ہندوستان کے لئے آسٹریلیائی اسپنر ناتھن لیون کے سامنے میچ بچانا مشکل ہوگا۔ہندوستانی بلے بازوں کو پورے پانچویں دن ٹکے رہ کر اپنی بہترین کارکردگی دکھانی ہوگی۔
سڈنی میں کامیابی ترین ہدف حاصل کرنے کا ریکارڈ آسٹریلیا کے نام ہے جس نے 2006میں جنوبی افریقہ کے خلاف چار وکٹ پر 288رن بنا کر جیت درج کی تھی۔مہمان ٹیم کے ریکارڈ کی بات کریں تو انگلینڈ نے ایک صدی سے زیادہ وقت پہلے 1903میں 194رن کا ہدف کامیابی سے حاصل کیا تھا۔ آسٹریلیا کی نگاہ اب یقینی طور پر 3-0سے جیتنے پر ٹکی ہوگی۔اس کے بلے بازوں نے دوسری اننگز میں شروع سے ہی ہندوستانی گیند بازوں کو نشانہ بنایا۔اشون نے بھلے ہی چار وکٹ لئے لیکن اس سے زیادہ اثر نہیں پڑا کیونکہ کپتان ا سٹیون سمتھ(71)نے پھر سے دلکش شاٹس سے بھری زبردست اننگز کھیلی۔ڈیوڈ وارنر(4)کے جلدی آؤٹ ہونے کے بعد کرس راجرز(56)نے ان کا اچھا ساتھ دیا۔جو برنس(66)اور بریڈ ہیڈن ناٹ آؤٹ 31اسمتھ کی راہ پر چلتے ہوئے ہندوستانی گیند بازوں کی جم کر دھنائی کی اور مرضی کے مطابق چوکے اور چھکے لگائے۔دن کے آخری سیشن میں شین واٹسن(16)کو چائے کے وقفے کے بعد دوسرے اوور میں ہی اشون نے بولڈ کر دیا۔اس سے پہلے ساہا انہیں رن آؤٹ کرنے سے چوک گئے تھے لیکن تیسرے سیشن کے شروع میں ہی وہ اشون کی گیند وکٹوں پر کھیل گئے۔اس سے اسمتھ کریز پر اترے اور انہوں نے راجرز کے ساتھ مل کر 15.4اوورز میں تیسرے وکٹ کیلئے 80رنز کی شراکت کی۔اس دوران رن رفتار پانچ رن فی اوور سے کم نہیں رہا۔اسمتھ نے صرف 44گیندوں پر اپنی ہاف سنچری مکمل کی جو ان کی کل دسویں نصف سنچری ہے۔اس دوران وہ ہندوستان کے خلاف سب سے زیادہ رن بنانے کے سر ڈان بریڈمین 1947.48میں 715رنز کا ریکارڈ توڑنے میں کامیاب رہے۔راجرز نے بھی 72گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کی۔یہ ان کی مسلسل چھٹی اور کل دسویں نصف سنچری ہے۔انہوں نے اس کے بعد بھونیشور کی گیند پر پل کرنے کی کوشش میں کیچ دیا۔اشون نے شان مارش(1)کو سلپ میں کیچ کرایا اور اسکے بعد محمدسمیع نے اسمتھ کو ایل بی ڈبلیو آووٹ کیا۔اس سے پہلے اشون اور بھونیشور نے جارحانہ انداز میں بلے بازی اور آٹھویں وکٹ کیلئے 50رن جوڑے۔یہ دونوں جب آسٹریلیا کی برتری کو کم کر رہے تھے اسی وقت بھونیشور کو ناتھن لیون(123رن دے کر دو وکٹ)کی گیند پر پہلی سلپ میں کیچ آؤٹ دے دیا گیا،لگ رہا تھا کہ گیند کیچ ہونے سے پہلے زمین پر لگی تھی لیکن تیسرے امپائر اسٹیون فرائی نے انہیں آؤٹ دے دیا۔اس کے پانچ اوور بعد مشیل سٹارک(106رن دیکر تین وکٹ)نے اشون کو وکٹ کے پیچھے کیچ کرایا لیکن اس سے پہلے وہ ٹیسٹ میچوں میں اپنی چوتھی نصف سنچری مکمل کرنے میں کامیاب رہے۔ریان ہیرس(96رن دے کر دو وکٹ)نے امیش یادو کو وکٹ کیپر ہیڈن کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندوستانی اننگز کا خاتمہ کیا۔محمد سمیع نے ناٹ آؤٹ 16رن بنائے۔ہندوستان نے صبح صبح کے سیشن میں کوہلی اور ساہا کے وکٹ گنوائے۔کوہلی اپنے کل کے اسکور میں صرف سات رن جوڑ پائے۔ا نہونے صبح پانچویں اوور میں ریان ہیرس کی گیند پر مڈ وکٹ پر راجرز کو کیچ دیا۔کوہلی اور ساہا نے چھٹے وکٹ کیلئے 60رنز کی شراکت کی۔اشون نے اس کے بعد ٹھوس بلے بازی کی اور ساہا کے ساتھ ساتویں وکٹ کیلئے 31رن جوڑے۔انہوں نے اس دوران فالوآن بھی بچایا۔جوش ہجل و وڈ کی شارٹ پچ گیند ان کے دستانے کو چومتی ہوئی پہلی سلپ میں کھڑے سمتھ کے پاس پہنچیط تیسرے دن دو کیچ ٹپکانے والے اسمتھ نے آج کوئی غلطی نہیں کی۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment