Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 05:10 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستان نے گنوائی گواسکر بارڈر ٹرافی

 

تیسرا ٹسٹ میچ ڈرا،چارٹسٹ میچوں کی سیریز 2-0سے آسٹریلیا کے نام،آسٹریلیائی دورے پر ٹیم انڈیا کو ملی راحت
ملبورن، 30 دسمبر (یو این آئی) کپتان مہندر سنگھ دھونی (ناٹ آؤٹ 24) نے ناگزیر حالات اور تیسرے ٹیسٹ کے پانچویں اور آخری دن ٹیم انڈیا کی خراب شروعات کے باوجودو آسٹریلیا کو جیت سے محروم کرکے میچ ڈرا کرا دیا۔ لیکن چار ٹسٹ میچوں کی سریز میں پہلے ہی2-0 کی برتری بنا چکی آسٹریلوی ٹیم نے گواسکر بارڈر ٹرافی پر اپنا قبضہ کر لیا۔تیسرے ٹیسٹ کے پانچویں اور آخری دن ہندستان کو جیت کیلئے 384 رنز کا ہدف ملا تھا لیکن خراب شروعات کے باوجود ہندستانی ٹیم نے 66 اوورز میں دن کا کھیل مکمل ہونے تک چھ وکٹ پر 174 رن بنائے۔ کپتان دھونی ناٹ آؤٹ 24 اور روی چندرن اشون ناٹ آؤٹ 08 رن بنا کر کریز پر ڈٹے رہے اور میچ ڈرا کرانے میں کامیابی حاصل کی۔ہندستانی ٹیم نے ایم سی جی پر گزشتہ 33 برسوں سے جیت درج نہیں کی ہے۔ لیکن ایک وقت تقریبا ہندوستان کے ہاتھوں سے نکل چکے میچ میں ابتدائی بلے بازوں کے سستے میں نمٹنے کے باوجود وراٹ کوہلی (54) اجن یا رہانے (48) چتیشور پجارا (21) اور دھونی اور اشون نے اپنی اہم اننگز سے شکست کوٹالا۔ اگرچہ اسی کے ساتھ ہندوستان نے گواسکر بارڈر ٹرافی گنوا دی ہے۔کپتان دھونی کی نوجوان ٹیم پر میلبورن میں 33 سال بعد جیت کی خشک سالی ختم کرنے کا چیلنج تھا لیکن ٹیم انڈیا اس میں ناکام رہی۔ ہندوستان نے فروری 1981 میں کپل دیو کی کپتانی میں آسٹریلیا کو 59 رنز سے شکست دی تھی۔ میچ کے ڈرا رہنے کے ساتھ ہی آسٹریلیائی کپتان اسٹیون اسمتھ کا 4۔0 سے سیریز میں کلین سویپ کا خواب ضرور ٹوٹ گیا ہے۔ لیکن سیریز گنوانے سے دھونی کا غیر ملکی زمین پر ٹیسٹ میں خراب ریکارڈ ضرور قائم ہے۔آسٹریلیا نے اس سے پہلے دن کا آغاز کل کے 261 رن پر سات وکٹ سے کیا۔ اس وقت شان 62 اور ریان ہیرس 08 رن پر ناٹ آؤٹ تھے۔ مارش کی سنچری سے صرف 01 رن دور رہنے پر وراٹ کوہلی نے جیسے ہی انہیں 99 پر رن آؤٹ کیا کپتان اسمتھ نے لنچ کے وقت 98 اوورز میں نو وکٹ پر 318 کے اسکور پر اننگز ڈکلئیر کر دی۔پہلی اننگز میں آسٹریلیا کے پاس 65 رنز کی برتری تھی اور پھر دوسری اننگز کے اسکور کی بنیاد پر اس نے ہندستان کے سامنے جیت کے لئے 384 رنز کا ہدف رکھا جسے حاصل کرنے اتری ہندستانی ٹیم نے ابتدائی 19 رنز پر ہی اپنے تین وکٹ گنوا دیں۔لیکن اس کے بعد پہلی اننگز میں سنچری بنانے والے وراٹ اور رہانے نے صورتحال کو سنبھالا اور چوتھی وکٹ کے لیے 85 رنز کی شراکت کی۔ وراٹ نے 99 گیندوں میں سات چوکے لگائے اور رہانے نے 117 گیندوں میں چھ چوکے لگائے۔ ٹیم انڈیا کے 54 اوورز میں 142 کے اسکور پر چھ وکٹ گرنے کے بعد کپتان دھونی اور اشون نے ہندوستان کی شکست کو روکا ۔ ساتویں نمبر کے بلے باز دھونی نے 39 گیندوں میں محتاط کھیل دکھاتے ہوئے چار چوکے لگا کر ناٹ آؤٹ 24 اور اشون نے 34 گیندوں میں ناٹ آؤٹ 08 رن جوڑے۔ دونوں بلے بازوں نے ساتویں وکٹ کے لیے 32 رنز کی ناٹ آؤٹ ساجھیداری بھی کی۔میچ کے چوتھے دن دونوں ٹیمیں کافی حد تک برابری پر دکھائی دے رہی تھیں لیکن ہندستانی بلے باز بڑے ہدف کے سامنے کافی دباؤ میں نظر آئے اور لنچ کے بعد جب ہندستان نے ہدف کا تعاقب کرنا شروع کیا تو اوپنگ جوڑی ہی سستے میں آؤٹ ہو گئی۔ ہندوستان کو پہلا جھٹکا محض 02 کے اسکور پر شکھر دھون کے طور پر لگا۔آؤٹ آف فارم چل رہے دھون کھاتہ کھولے بغیر صفر پر آسٹریلوی فاسٹ بولر ہیرس کا شکار ہو گئے۔ اس کے تھوڑی ہی دیر بعد نووارد کھلاڑی لوکیش راہل تیسرے نمبر کے بلے باز کے طور پر کھیلنے اترے اور 01 رنز پر مچل جانسن کے ہاتھوں شین واٹسن کو کیچ دے بیٹھے۔ ٹیم دو جھٹکوں سے سنبھل پاتی کہ ٹیم انڈیا کے مرلی وجے 11 رنز پر جوش ہجل وڈ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ٹیم کا ٹاپ آرڈر خاتمے کے بعد چوتھے نمبر پر وراٹ نے اپنی نصف سنچری مکمل کی اور ان کا ساتھ رہانے نے دیا۔ دونوں بلے باز ٹیم کو چائے تک تین وکٹ پر 104 رن پر لے گئے۔ لیکن پھر ہیرس نے وراٹ کو جو برنس کی مدد سے آؤٹ کیا اور ہندستان کا اہم وکٹ نکالا۔ ہندستان کا پانچواں وکٹ چتیشور پجارا کے طور پر 141 کے اسکور پر گرا۔ پجارا نے 70 گیندوں میں تین چوکے لگا کر 21 رن جوڑے اور پھر جانسن نے انہیں بولڈ کرکے پویلین بھیجا۔ٹیم کے اسکور میں ایک رن کا ہی اضافہ ہوا تھا کہ رہانے کو ہجل وڈ نے مارش کے ہاتھوں کیچ کرایا اور ٹیم کے چھ وکٹ گر گئے۔
آسٹریلیا کی جانب سے جانسن نے 15 اوورز میں 38 رنز دے کر ہندوستان کے دو وکٹ، ہیرس نے 16 اوورز میں 30 رن پر دو وکٹ اور ہجل وڈ نے 15 اوورز میں 40 رن پر دو وکٹ لیے۔اس سے پہلے آسٹریلیا کی دوسری اننگز میں شان نے سب سے زیادہ 99 رنز کی اننگز کھیلی۔ شان نے 215 گیندوں میں 11 چوکے اور دو چھکے لگائے جبکہ ہیرس نے 68 گیندوں میں 21 رن جوڑے۔ شان کو وراٹ نے رن آؤٹ کیا جبکہ ہیرس کا وکٹ محمد شمی نے لیا۔ جانسن اور ہیرس نے آٹھویں وکٹ کے لیے 69 رنز کی اہم شراکت بھی کی اور میچ کے آخری دن ہندستان کے سامنے بڑا ہدف رکھنے میں آسٹریلیا کی مدد کی۔آسٹریلیا کی دوسری اننگز میں ہندستان کی جانب سے امیش یادو نے 22 اوورز میں 89 رن پر دو وکٹ، شمی نے 28 اوورز میں 92 رنز پر دو و ٹ ،ایشات نے 20 اوورز میں 49 رن پر دو وکٹ اور اشون نے 28 اوور میں 75 رن پر دو وکٹ لیے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment