Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 10:25 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستانی کرکٹ تاریخ کا ایک باب بند

 

مہندر سنگھ دھونی ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائر
ملبورن، 30 دسمبر (یو این آئی) ہندوستانی کپتان مہندر سنگھ دھونی نے آسٹریلیا کے خلاف تیسرا ٹیسٹ ڈرا ختم ہونے کے فورا بعد ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لینے کا اعلان کردیا۔دھونی نے میلبورن ٹیسٹ ڈرا ہونے کے بعد انعامی تقریب میں کسی طرح کا کوئی اشارہ نہیں دیا تھا کہ وہ اس طرح کا اعلان کرنے جا رہے ہیں لیکن میچ ختم ہونے کے کچھ دیر بعد ہی ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ( بی سی سی آئی) نے جیسے ہی ٹوئٹ کیا کہ دھونی نے ٹسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ سے فیصلہ کیاہے تو یہ خبر جنگل کی آگ کی طرح آسٹریلیا میں پھیل گئی۔بی سی سی آئی نے جاری ایک بیان میں کہا کہ دھونی نے کھیل کے تینوں فارمیٹ کے خود پر بڑھتے دباؤ کی وجہ سیٹیسٹ ر کٹ چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ وہ کھیل کے دو چھوٹے فارمیٹ ون ڈے اورٹوئنٹی 20 پر اپنی توجہ مرکوز کر سکیں۔ دھونی اپنے ریٹائرمنٹ کی وجہ سے اب سڈنی میں چوتھے ٹیسٹ سے بھی باہر ہو گئے ہیں اور ان کی جگہ ردھمن ساہا کو اتارا جائے گا۔دھونی نے آسٹریلیا دورہ میں چوٹ کی وجہ سے ا یڈیلیڈ میں پہلے ٹیسٹ میں کپتانی نہیں کی تھی لیکن وہ برسبین میں دوسرے ٹیسٹ میں کپتانی کرنے لوٹے جو ہندوستان ہار کر سیریز میں 0۔2 سے پچھڑ گیا۔ تیسرا ٹیسٹ ڈرا رہنے کے بعد ہندستان نے آسٹریلیا سے بارڈر گواسکر ٹرافی گنوا دی۔ ہندوستان نے یہ ٹرافی آسٹریلیا سے پچھلی گھریلو سیریز میں 4۔0 کی کلین سویپ کے ساتھ حاصل کی تھی۔بی سی سی آئی کے سیکرٹری سنجے پٹیل نے بیان میں ا کہ دھونی ہندوستان کے عظیم ترین کپتان ہیں اور انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ کو فوری طور پر چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وہ اب ون ڈے اور ٹی 20 پر اپنی توجہ مرکوز کریں گے۔ دھونی کی جگہ اب وراٹ چوتھے ٹیسٹ میں ہندستان کی کپتانی سنبھالیں گے جو چھ جنوری سے سڈنی میں شروع ہوگا۔دھونی نے ہندستان کے لیے 90 ٹیسٹ کھیلے جس میں انہوں نے 3809 کے اوسط سے مجموعی 4876 رنز بنائے۔ دھونی نے چھ سنچری اور 33 نصف سنچریاں بنائیں جبکہ وکٹ کے پیچھے انہوں نے ٹیسٹ میچوں میں 256 کیچ اور 38 اسٹمپنگ سمیت کل 294 شکار کیے۔ دھونی نے اپنا ٹسٹ کیریر دو دسمبر 2005 کو چنئی میں سری لنکا کے خلاف شروع کیا تھا اور طویل فارمیٹ سے انہوں نے 30 دسمبر 2014 کو ریٹائرمنٹ لے لیا۔ملک میں سچن تندولکر کے بعد سب سے زیادہ مقبول کھلاڑی اور کھیل کے سب سے بڑے برانڈ دھونی ہندستان کے کامیاب ترین ٹیسٹ اور ون ڈے کپتان ہیں۔ دھونی نے سب سے زیادہ 60 میچوں میں ہندستان کی کپتانی کی جس میں انہوں نے 27 جیتے ،18 ہارے اور 15 ڈرا کھیلے۔ دھونی کے بعد کپتانی کے معاملے میں سوربھ گنگولی دوسرے نمبر پر ہیں جنہوں نے 49 میچوں میں 21 جیتے۔غیر ملکی زمین پر ٹیسٹ میچوں میں کپتانی کے معاملے میں گزشتہ کچھ برسوں میں مسلسل تنقید کا شکار ہوتے رہے جس کی وجہ سے انہیں ٹیسٹ کپتانی سے لے ہٹانے کی باتیں اٹھنی لگی تھیں اور اب انہوں نے ٹیسٹ کپتانی سے ہی نہیں بلکہ ٹیسٹ کرکٹ سے بھی ریٹائرمنٹ لے لیا ہے۔آسٹریلیا میں سیریز میں 0۔2 سے پچھڑ نے والے ہندستان کو اب دھونی کے ریٹائرمنٹ کے جھٹکے پر قابو پانے میں وقت لگے گا۔ دھونی نے میلبورن میں تیسرے ٹیسٹ میں نازک حالات میں پورے جذبے کے ساتھ کھیلتے ہوئے ناٹ آؤٹ 24 رن بنا کر میچ ڈرا کرا دیا۔ دھونی نے اس میچ کے دوران اس بات کی قطعی بھنک نہیں لگنے دی کہ ان کے دماغ میں کیا چل رہا ہے۔ آخر ٹیسٹ ڈرا ہونے کے کچھ دیر بعد ہی اس بلے باز نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر کے سال 2014 کا سب سے بڑا دھماکہ کر دیا۔ملک کے سب سے کرشمائی کپتان دھونی نے تمام قسم کے فارمیٹ میں ٹاپ مقام حاصل کئے تھے۔ انہوں نے دسمبر 2009 سے لے کر 18 مہینوں تک ہندستان کو ٹیسٹ درجہ بندی میں نمبر ایک برقرار رکھا تھا۔ ان کی کپتانی میں ہندستان نے 2007 میں ٹونٹی 20 عالمی کپ ،2011 میں ون ڈے ورلڈ کپ اور 2013 میں آئی سی سی چیمپئنز ٹرافی جیتی تھی۔بی سی سی آئی نے بیان میں کہا کہ دھونی ہندستان کے عظیم ترین ٹیسٹ کپتانوں میں سے ایک ہیں جن کی قیادت میں ہندستان ٹیسٹ رینکنگ میں نمبر ایک ٹیم بنا۔ بی سی سی آئی نے دھونی کے ٹیسٹ کرکٹ کے ریٹائرمنٹ لینے کے فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے ٹیسٹ کرکٹ میں ان کی بے مثال شراکت اور ملک کو فخر دلانے کی خدمات کی تعریف کی ہے اور انہیں اپنی نیک خواہشات دی ہیں۔ دھونی نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لے لیا ہے لیکن وہ اس سیریز کے بعد آسٹریلیا میں میزبان ٹیم اور انگلینڈ کے ساتھ ہونے والی سہ رخی ون ڈے سیریز میں ٹیم انڈیا کی کپتانی سنبھالیں گے۔ اس سیریز کے بعد وہ فروری مارچ میں اسٹریلیا ونیوزی لینڈ میں ہونے والے ون ڈے ورلڈ کپ میں اپنے خطاب کا دفاع کرنے اتریں گے۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment