Today: Tuesday, September, 25, 2018 Last Update: 07:04 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستان کی غیرذمہ دارانہ گیندبازی سے آسٹریلیا کا ہمالیائی اسکور

 

میلبورن، 27 دسمبر (یو این آئی) نوجوان کپتان اسٹیون اسمتھ ڈبل سنچری سے صرف آٹھ رن دور رہ گئے لیکن ہندستان کے خلاف تیسرے ٹیسٹ کے دوسرے دن ہفتہ کو ان کی 192 رنز کی زبردست اننگز سے ان کی ٹیم آسٹریلیا نے 530 رنز کا بڑا اسکور کھڑا کر کے مہمان ٹیم کو ایک بار پھر دباؤ میں ڈال دیا ہے۔ہندوستانی گیند بازوں نے میچ کے دوسرے دن آسٹریلیا کی پہلی اننگز کے آخری پانچ وکٹوں کے لیے 315 رنز دیئے اور ان کی اس مہنگی گیند بازی سے میزبان ٹیم نے 1423 اوورز میں 530 کا بہت بڑا اسکور کھڑا کر دیا۔ اس کے بعد دباؤ میں نظر آ رہی ہندستانی ٹیم نے اپنی پہلی اننگزکا آغاز کرتے ہوئے 37 اوورز میں 108 رنز بنا لیے۔آسٹریلیا کی پہلی اننگز میں تجربہ کار فاسٹ بولر ایشانت شرما 32 اوورز میں 104 رنز دے کر کوئی وکٹ نہیں لے پائے اور سب سے مہنگے ثابت ہوئے۔ امیش یادو نے 323 اوورز میں 130 رنز دے کر تین وکٹ لیے جبکہ محمد شمی نے 29 اوورز میں 138 رنز دیئے اور چار وکٹ لیے۔ آف اسپنر روی چندرن اشون نے 44 اوورز میں 134 رنز دیئے اور تین وکٹ حاصل کئے۔آؤٹ آف فارم شکھر دھون ایک بار پھر اہم موقع پر ناکام رہے اور 28 کے اسکور پر ہندستان کا پہلا شکار بنے۔ لیکن وجے مرلی ناٹ آؤٹ 55 اور چتیشور پجارا نے دن کا کھیل مکمل ہونے سے پہلے 25 رن کی بہترین اننگ کھیلی۔ ہندوستان اب حریف ٹیم سے 422 رنز پیچھے ہے اور اس کے نو وکٹ باقی ہیں۔ شکھر نے 51 گیندوں میں تین چوکے لگائے لیکن ہیرس کی گیند پر وہ اسمتھ کو یچ دیبیٹھے۔اس سے پہلے آسٹریلیا نے 259 رنز پر پانچ وکٹ سے آگے کھیلنا شروع کیاتھا تو دونوں ٹیمیں میچ میں تقریبا برابری پر تھیں۔ لیکن 25 سالہ کپتان اسمتھ نے 305 گیندوں میں میلبورن کرکٹ گراؤنڈ کے تقریبا ہر کونے میں 15 چوکے اور دو چھکے لگا کر ہندوستانی گیند بازوں کو خوب دوڑایا اور 192 رن جوڑ ڈالے جو ٹیسٹ کرکٹ میں ان کا بہترین اسکور ہے اور ساتویں ٹیسٹ سنچری ہے۔ڈبل سنچری کی تاریخ رقم کرنے سے صرف آٹھ رن دور اسمتھ تیز گیند باز امیش یادو کی گیند پر بولڈ ہو کر اس کامیابی سے چوک گئے۔ حالانکہ اس جراتمندانہ اننگز کے بعد جب اسمتھ آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ رہے تھے تو 40 ہزار شائقین نے اسٹیڈیم میں کھڑے ہو کر آسٹریلوی کپتان کا استقبال کیا۔
اسمتھ اس سیریز میں اب تک پانچ اننگز میں ٹیم کی جانب سے سب سے زیادہ 567 رنز بنا چکے ہیں جس میں تین سنچری اور ایک نصف سنچری شامل ہے۔اسمتھ کے ساتھ میچ میں واپسی کر نے والے ریان ہیرس نے 74 رنز کا اہم شراکت کی جبکہ بریڈ ہیڈن (55) نے بھی اپنی نصف سنچری مکمل کی۔ ہیرس کی یہ تیسری ٹیسٹ نصف سنچری ہے۔ دونوں بلے بازوں نے آٹھویں وکٹ کے لیے 106 رنز کی اہم شراکت بھی کی۔آسٹریلوی بلے بازوں نے پہلی اننگز کے کھیل میں تین سنچری رفاقت کیں۔ اس سے پہلے ہیڈن اور اسمتھ نے چھٹے وکٹ کے لیے 110 رنز کی شراکت کی۔ ہیڈن نے اسمتھ کے ساتھ کل کے ناٹ آؤٹ 23 رن سے آگے کھیلتے ہوئے اپنی نصف سنچری مکمل کی اور 84 گیندوں میں سات چوکے اور ایک چھکا لگا کر 55 رنز بنائے۔
ہیرس نے 88 گیندوں میں آٹھ چوکے اور ایک چھکا لگایاان وں نے چھکا لگا کر اپنے 74 رن پورے کئے لیکن اگلی ہی گیند پر اشون کی فرنٹ فٹ ڈیلیوری کو کھیلنے کے چکر میں وہ ایل بی ڈبلیو ہو گئے۔ اگرچہ اس وقت ٹیم 482 پر آٹھ وکٹ کی مضبوط پوزیشن میں پہنچ چکی تھی۔ہندستانی فاسٹ بولر شمی نے لیون کو بولڈ کر کے نویں بلے باز کے طور پر آؤٹ کیا جبکہ یادو نے اسمتھ کو آؤٹ کر کے آسٹریلیا کی اننگز کو سمیٹا۔ شمی نے اس سے پہلے وکٹ کیپر بریڈ ہیڈن کو صبح کے سیشن میں کپتان مہندر سنگھ دھونی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔لیکن آسٹریلوی کھلاڑی مچل جانسن وکٹ پر ٹکے رہے اور انہوں نے تابڑ توڑ 28 رن جوڑے۔ جانسن نے 37 گیندوں میں پانچ چوکے لگائے۔ لیکن ساتویں بلے باز کے طور پر ان کا وکٹ اشون نے لیا۔ہندستانی آف اسپنر نے جانسن کو دھونی کے ہاتھوں اسٹمپ کرا کے پویلین بھیجا۔پہلی اننگز کے لیے ہندستانی ٹیم کے اوپنر مرلی نے اس سیریز میں اپنا چوتھا پچاس سے زیادہ کا اسکور بنایا۔ انہوں نے تین میچوں کی پانچ اننگز میں 9450 کے اوسط سے ابھی تک 378 رنز بنا لیے ہیں اور وہ فی الحال 55 بنا کر کریز پر ہیں۔ مرلی ساتھی کھلاڑی پجارا کے ساتھ دوسرے وکٹ کے لیے 53 رنز کی ناٹ آؤٹ ساجھیداری کرچکے ہیں جبکہ اس سے پہلے انہوں نے پہلے شکھر کے ساتھ پہلے وکٹ کے لیے 55 رن جوڑے۔اوپنر مرلی آسٹریلوی سرزمین پر کسی سیریز میں سب سے زیادہ رن بنانے والے بلے بازوں میں اب تیسرے نمبر پر پہنچ چکے ہیں۔ دھماکہ خیز اوپنر وریندر سہواگ آسٹریلیا میں سیریز کے چار میچوں میں 464 رنز بنا کر سب سے اوپر ہیں جبکہ سنیل گواسکر نے پانچ میچوں میں 460 رنز بنائے ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment