Today: Tuesday, November, 13, 2018 Last Update: 10:49 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

بلے بازوں نے پھرکیا ٹیم انڈیا کو شرمسار

 

چوتھے دن جانسن کے سامنے کی خود سپردگی ،دوسراٹسٹ 4وکٹوں سے ہار گئے ماہی کے جانباز،سیریز گنوانے کی دہلیز پر
برسبین، 20 دسمبر (یو این آئی) بلے بازوں کی شرمناک خود سپردگی سے ہندستان کو آسٹریلیا کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ کے چوتھے ہی دن ہفتہ کو چار وکٹ سے شکست کا سامنا کرنا پڑا اور اس کے ساتھ ہی ہندستان چار میچوں کی سیریز میں 0۔2 سے پچھڑ گیا ہے۔ ہندستان کی دوسری اننگز 64.3 اوور میں 224 رن پر سمٹ گئی اور آسٹریلیا کو جیت کے لئے 128 رنز کا ہدف ملا جو اس نے 23.1 اوور میں چھ وکٹ پر 130 رن بنا کر حاصل کر لیا۔ آسٹریلیا کے کپتان اسٹیون اسمتھ کو ان کی 133 رنز کی شاندار اننگز کے لئے مین آف دی میچ دیا گیا۔ایڈیلیڈ کے بعد برسبین میں بھی ہندوستان کی شکست کی ذمہ داری بلے بازوں کے کندھوں پر رہی جنہوں نے خاصا مایوس کیا۔ اگر بلے بازوں نے قدرے بہتر مظاہرہ کیا ہوتا اور آسٹریلیا کے سامنے ہدف اس سے بڑا ہوتا تو شاید ہندوستان میچ جیت جاتا۔ ہندوستانی گیند بازوں نے آسٹریلیا کو چھوٹے نشانے تک پہنچنے میں ترسا دیا۔ آسٹریلیا نے ہدف تک پہنچنے میں اپنے چھ وکٹ گنوا دیئے۔ ایشانت شرما نے 38 رن پر تین وکٹ اور امیش یادو نے 46 رن پر دو وکٹ نکالے لیکن نشانہ اتنا کم تھا کہ میزبان ٹیم کو کوئی پریشانی نہیں ہوئی۔بائیں ہاتھ کے تیز گیند باز مشیل جانسن (61 رنز پر چار و ٹ ) نے صبح مہلک اسپیل ڈالتے ہوئے ہندستانی بلے بازی کو تباہ کر دیا۔ اگرچہ اوپنر شکھر دھون نے یک طرفہ جدوجہد کرتے ہوئے 81 رنز بنائے لیکن ہندستان کی دوسری اننگز چائے کے وقفہ سے کچھ پہلے 224 رن پر سمٹ گئی۔ہندستان نے صبح جب اپنی اننگز ایک وکٹ پر 71 رنز سے آگے بڑھائی تو ناٹ آؤٹ اوپنر شکھر بلے بازی کرنے نہیں اترے۔ شکھر دن کے کھیل سے پہلے نیٹ پر پریکٹس کرتے وقت خود کو زخمی کر بیٹھے تھے۔ شکھر کی چوٹ بالآخر ہندوستان کو بھاری پڑ گئی ڈریسنگ روم میں الجھن کی صورت بن گئی کہ شکھر بلے بازی کرنے جائیں یا وراٹ کوہلی۔ نیٹ پر وکٹ اچھا نہیں تھا اور شکھر کو چوٹ لگ گئی۔ اس وقت وہ زیادہ پریشان نہیں دکھائی دیے لیکن بعد میں انہیں کافی درد محسوس ہوا۔ وراٹ کو میدان پر جانے کے لئے کہا گیا جو اس وقت ذہنی طور پر پوری طرح تیار نہیں تھے۔وراٹ کو جانسن نے بولڈ کر دیا۔ وراٹ کا وکٹ 76 کے اسکور پر گرا۔ اجنکیا رہانے (10) کو بھی جانسن نے نمٹا دیا۔ روہت شرما کھاتہ کھولے بغیر جانسن کا شکار بن گئے۔ جانسن نے اس جادوئی اسپیل میں 11 گیندوں میں 10 رن پر تین وکٹ جھٹک کر ہندوستانی بلے بازی کی کمر توڑ دی۔رہی سہی کسر جوش ہیزل وڈ نے ہندوستانی کپتان مہندر سنگھ دھونی کو صفر پر ایل بی ڈبلیو کرکے پوری کر دی۔ اگرچہ فیصلے کو لے کر تذبذب رہا کیونکہ دھونی کریز پر کافی آگے تھے۔ہندستان کا پانچواں وکٹ 87 کے اسکور پر گرا اور اس پر شکست کا بحران اسی وقت منڈلانے لگا۔روی چندرن اشون 19 رنز بنا کر مچل اسٹارک کی گیند پر وکٹ کے پیچھے کیچ آوٹ ہوئے۔ہندستان کا چھٹا وکٹ 117 کے اسکور پر گرا۔شکھر نے اس اسکور پر میدان پر اترنے کے بعد 145 گیندوں میں آٹھ چوکوں کی مدد سے 81 رن کی اننگز کھیلی، وہ کل 26 رن پر ناٹ آؤٹ تھے۔چتیشور پجارا( 43) ساتویں بلے باز کے طور پر 143 کے اسکور پر آؤٹ ہوئے۔ ان کا شکار ہیزل وڈ نے کیا۔شکھر کو آف اسپنر ناتھن لیون نے ایل بی ڈبلیو کیا۔ اس وقت ہندستان کا اسکور 203 رنز تھا۔ امیش یادونے دو چوکے اور دو چھکے اڑا کر 30 رن ٹھونکے لیکن جانسن نے یادو کو وکٹ کیپر بریڈ ہیڈن کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندستانی اننگز کا خاتمہ کر دیا۔جانسن نے 173 اوور میں 61 رن پر چار وکٹ، ہیزل وڈ نے 16 اوور میں 74 رن پر دو وکٹ،ا سٹارک نے آٹھ اوور میں 27 رن پر دو وکٹ اور لیون نے 10 اوور میں 33 رن پر دو وکٹ لئے۔آسٹریلوی ٹیم 128 رنز کے ہدف کے سامنے جب چائے کے وقفہ سے پہلے اتری تو ایشانت شرما نے میزبان کو مسلسل دو جھٹکے دے دیے۔ ایشانت کی گیندوں پر ڈیوڈ وارنر (06) اور شین واٹسن (صفر ) وکٹ کے پیچھے دھونی کے ہاتھوں کیچ ہوگئے۔ چائے کے وقفہ کے وقت آسٹریلیا کا اسکور دو وکٹ پر 25 رنز تھا اور تب ایسا لگ رہا تھا کہ کہیں ہندوستانی گیند باز کچھ معجزہ نہ کر جائیں۔لیکن کرس روجرس (55) اور کپتان اسٹیون اسمتھ(28) نے تیسرے وکٹ کے لئے 63 رن کی شراکت کرکے آسٹریلیا کو منزل کے قریب پہنچا دیا۔ اگرچہ ہندوستانی گیندبازوں نے اس کے بعد کچھ وکٹ لئے لیکن ہدف بڑا نہ ہونے کی وجہ سے آسٹریلیا بحران میں نہیں پڑا۔روجرس کا وکٹ بھی ایشانت نے لیا۔ روجرس نے 57 گیندوں میں 10 چوکے اڑایے۔ آسٹریلیا کا چوتھا وکٹ 114 کے اسکور پر گرا جب شان مارش (17) کا شکار امیش یادو نے کر لیا۔ کپتان اسمتھ 122 کے اسکور پر رن آؤٹ ہو گئے۔ اسی اسکور پر بریڈ ہیڈن یادو کی گیند پر وراٹ کو یچ تھما بیٹھے۔ لیکن آسٹریلیا نے 24 ویں اوور کی پہلی گیند پر ہدف حاصل کر لیا۔ایشانت نے 38 رن پر تین وکٹ اور یادو نے 46 رن پر دو وکٹ لیے۔ سیریز کا تیسرا میچ 26 دسمبر سے میلبورن میں کھیلا جائے گا۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment