Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 10:14 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

شری نواسن فکسنگ میں ملوث نہیں :مدگل کمیٹی

 

نئی دہلی، 17 نومبر (یو این آئی) آئی پی ایل چھ میں بدعنوانی معاملے کی تحقیقات کرنے والی جسٹس مدگل کمیٹی نے ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ(بی سی سی آئی) کے صدر کے عہدے سے الگ کئے گئے این شری نواسن کو بڑی راحت فراہم کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ فکسنگ یا بیٹنگ میں ملوث نہیں پائے گئے ہیں۔عدالت کے حکم کے تحت پیش کی گئی رپورٹ کے مطابق کمیٹی نے عدالت کو بتایا ہے کہ شری نواسن کسی بھی طرح سے فکسنگ سے منسلک سرگرمیوں میں ملوث نہیں پائے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ میچ فکسنگ کی تحقیقات کو متاثر کرنے کے لیے بھی کسی سرگرمی میں ملوث نہیں رہے ہیں ۔ مدگل کمیٹی نے عدالت کو یہ بھی جانکاری دی ہے کہ شری نواسن کے داماد گروناتھ میپن، راجستھان رائلس کے شریک مالک راج کندرا اور آئی پی ایل سی ای او سندر رمن سبھی نے مبینہ طور پر سٹے بازوں سے رابطہ کیا تھا۔اس درمیان بی سی سی آئی کے قائم مقام صدر شولال یادو نے کہا ہے کہ ف سنگ اور بیٹنگ معاملے میں جو بھی قصوروار پایا جائے گا اس کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ اس سے پہلے 14 نومبر کو کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے سات ناموں کا انکشاف کیا تھا جن سے ریٹائرڈ جج مکل مدگل کی قیادت میں بنی جانچ کمیٹی نے پوچھ گچھ کی تھی۔رپورٹ کے مطابق شرینواسن کے داماد ہوٹل کے کمرے میں سٹے بازوں سے ملے تھے لیکن ان کے بیٹنگ میں شامل ہونے کے ثبوت نہیں ملے ہیں۔ تفتیش سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ گروناتھ چنئی سپرکنگس کے افسر بھی تھے۔ لیکن وہ فکسنگ میں شامل تھے اس کے ثبوت نہیں ملے ہیں ۔تفتیشی ٹیم نے ساتھ ہی ا کہ شرینواسن اور بی سی سی آئی کے چار اہلکار اس بات سے آگاہ تھے کہ چار کھلاڑی قوانین کی خلاف ورزی میں شامل ہیں۔ لیکن ان کے خلاف کسی بھی افسر نے کوئی قدم نہیں اٹھایا ۔تفتیشی ٹیم نے میپن کو لے کر ا کہ جانچ سے یہ تصدیق ہوئی ہے کہ میپن ہوٹل کے کمرے میں مسلسل دو افراد سے ملتے رہے۔ کمیٹی نے 10 فروری کو معاملے کی عبوری رپورٹ میں بھی اس حقیقت کو شامل کیا کہ وہ ان دونوں لوگوں کے رابطے میں تھے ۔جانچ کے گھیرے میں آئے راجستھان رائلس کے شریک مالک راج کندرا کو لے کر بھی کمیٹی نے صاف کیا ہے کہ کندرا بھی سٹے بازوں کے رابطے میں تھے۔ کندرا نے بی سی سی آئی اور آئی پی ایل کے اینٹی کرپشن قوانین کی خلاف ورزی کی۔ جانچ کمیٹی کو ملے ثبوتوں سے یہ بھی صاف ہوا ہے کہ کندرا میچوں پر سٹہ لگا رہے تھے۔ ان کی ان سرگرمیوں سے بھی وہ قوانین کی خلاف ورزی کے ملزم پائے گئے ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment