Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 02:57 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستانی کرکٹ ٹیم کلین سوئپ کیلئے پرعزم

 

آخری یک روزہ میچ میں وقار بچانے اتر یگی سری لنکا ئی ٹیم

رانچی، 15 نومبر (یو این آئی) قائم مقام کپتان وراٹ کوہلی کی قیادت میں ابھی تک ناقابل فراموش کارکردگی کا مظاہرہ کرکے جانبازوں کی طرح آگے بڑھ رہی ہندستانی کرکٹ ٹیم حوصلہ پست سری لنکا کے خلاف اتوار کو یہاں ون ڈے سیریز کے آخری میچ میں فتح کے ساتھ کلین سویپ کرنے کے ارادے سے میدان میں اترے گی۔ہندستان سیریز پر پہلے ہی قبضہ کر چکا ہے اور پانچ میچوں کی سیریز میں اسے 4۔0 کی برتری حاصل ہے۔ ٹیم کا ہدف اب سری لنکا کے خلاف کلین سویپ کرنا ہے تاکہ آئی سی سی ورلڈ کپ 2015 سے پہلے اس کا حوصلہ اور بلند ہو سکے۔ٹیم انڈیا کے مستقبل کے کپتان مانے جا رہے وراٹ نے ابھی سے صاف کر دیا ہے کہ وہ کسی بھی وقت ٹیم کو نرمی برتنے نہیں دیں گے اور ان کا مقصد مخالف ٹیم کو ہرانا نہیں بلکہ خود کی جیت ہے۔ وراٹ کہہ چکے ہیں کہ عالمی کپ جیسے ٹورنامنٹ کو دیکھتے ہوئے وہ ہر میچ کو پوری محنت کے ساتھ کھیلیں گے اور گزشتہ مقابلوں میں انہوں نے ایسا کر کے بھی دکھایا ہے۔ اس لئے آخری میچ میں بھی بگ شو کی امید کرکٹ کے شائقین کو رہے گی۔ تاہم ہندستانی ٹیم نے چوتھے ون ڈے میں 404 کا بہت بڑا س ور کھڑا کرکے خود ہی اپنا معیار اتنا بلند کر دیا ہے کہ بلے بازوں پر اسی تال کو برقرار رکھنے کا دباؤ رہے گا۔ اس کے علاوہ چوٹ کے بعد واپسی کرنے والے اوپنر روہت شرما کی نہ بھولنے والی ریکارڈ 264 رنز کی ریکارڈ اننگز کے بعد آخری میچ میں ایک بار پھر روہت پر سب کی نگاہیں رہیں گی۔ اوپننگ آرڈر میں اپنی جگہ پکی کرنے اور ورلڈ کپ ٹیم میں جگہ بنانے کے مقصد کے ساتھ روہت کے لیے یہ اچھا موقع ہو گا جب وہ ایک بار پھر ایڈونچر اننگز سے سلیکٹروں کو متاثر کر پا تے ہیں۔چوٹ کی وجہ سے ڈھائی ماہ ٹیم سے باہر رہے روہت کو سری لنکا کے خلاف آخری دو میچوں میں ہی ٹیم میں جگہ بنانے کا موقع ملا۔ اس وقت خود روہت پر دباؤ تھا کہ اس آرڈر میں وہ اجن یا رہانے اور شکھر دھون کی موجودگی کی وجہ سے اپنی جگہ محفوظ رکھ سکیں گے یا نہیں۔ لیکن صرف ایک میچ میں ان کی جراتمندانہ 264 رنز کی اننگز نے انہیں اس سیریز میں سب سے زیادہ رن بنانے والے بلے بازوں میں نمبر ایک پر پہنچا دیا ہے۔ روہت کی یہ اننگز ون ڈے تاریخ کی سب سے بڑی اننگز بھی ہے۔سری لنکا کی ٹیم جہاں اس وقت خراب مظاہرے کی وجہ سے دباؤ میں ہے تو وراٹ کی قیادت میں ٹیم انڈیا میں ایک نیا ہی جوش دکھائی دے رہا ہے جہاں تمام کھلاڑی خود کو ثابت کرنے پر لگے ہوئے ہیں۔ خود وراٹ بھی کپتانی اور انفرادی کارکردگی کے دباؤ کے بعد فارم میں دکھائی دے رہے ہیں۔ گزشتہ میچ میں ان کی 66 رنز کی اننگز کافی مفید اننگز تھی اور اس سیریز میں سب سے بڑی اننگز بھی تھی۔کپتان کے طور پر وراٹ نے انباتی رایڈو کو اپنے نمبر تین کے مقام پر اتارا ہے جہاں مڈل آرڈر میں بلے باز نے تسلی بخش مظاہرہ کیا۔ گزشتہ میچ میں اگرچہ وہ 08 رن پر آؤٹ ہو گئے تھے لیکن اب تک ان کا سیریز میں مظاہرہ بلے سے اچھا نہیں رہا ہے اور انہوں نے چار میچوں میں 19رن بنائے ہیں۔تاہم اوپنر اجن یا رہانے ایک مستحکم بلے باز ہیں جنہوں نے ابھی تک چار میچوں میں 4750 کے اوسط سے 178 رنز بنائے ہیں ۔ لیکن اوپننگ میں کئی اختیارات ہونے کے ناطے رہانے کیلئے رنز رفتار کو بڑھانا کچھ ضروری ہو گیا ہے۔ رہانے نے ابھی تک 111،08، 31اور 28 رن کی بہترین اننگ کھیلی ہے۔ پہلے ون ڈے کی سنچری کے بعد سے رہانے بلے سے کچھ خاص کمال نہیں کر پا رہے ہیں اور ٹیم انڈیا میں بدلتے حالات کے درمیان ان کے لیے فی الحال مظاہرے میں بہتری ضروری ہے۔اس کے علاوہ مڈل آرڈر میں آل راؤنڈر سریش رینا اور رابن اتھپا کو بھی خود کو ثابت کرنا ہوگا۔ ٹیم انڈیا میں طویل عرصیبعد واپسی کر رہے اتھپا عام طور پر اوپننگ میں اچھے ثابت ہوئے ہیں لیکن فی الحال ان کے لیے اس آرڈر میں کوئی جگہ نہیں ہے اور انہیں نچلے آرڈر میں خود کو ثابت کرنا ہوگا۔بلے بازوں کی طرح گیند بازوں پر بھی سری لنکا کے خلاف ٹیم کو جیت دلانے کا دار و مدار رہے گا۔ فاسٹ بولر امیش یادو اور نوجوان بولر اکشر پٹیل اس سیریز میں سب سے زیادہ کامیاب بولر رہے ہیں۔ امیش نے چار میچوں میں 1690 کے اوسط سے سب سے زیادہ 10 وکٹ لیے ہیں جبکہ اکشر نے 1711 کے اوسط سے نو وکٹ لئے ہیں۔ اس کے بعد دھول لکرنی کا نمبر آتا ہے جنہوں نے دو میچوں میں پانچ وکٹ اپنے نام کئے ہیں۔ آف اسپنر روی چندرن اشون اسپن گیند بازی کی کمان سنبھال رہے ہیں اور انہوں نے تین میچوں میں چار وکٹ لئے ہیں۔ کرن شرما آخری میچوں میں لئے گئے حالیہ چہروں میں شامل ہیں اور فی الحال چوتھے ون ڈے میں وہ گیند سے کوئی کمال نہیں کر سکے۔ اتنا ہی نہیں کرن نو اوورز میں 64 رنز لٹا ر ٹیم انڈیا کے سب سے مہنگے بالر رہے تھے۔ہندستان سے فتح کے ساتھ وداعی اور ایک عدد جیت کیلئے سری لنکا آخری میچ میں ضرور خاص حکمت عملی کے ساتھ اترے گی اور اس کے گیند باز ہندوستانی بلے بازوں کو روکنے کی کوشش کریں گے۔ ٹیم میں آخری میچوں کے لیے بڑی تبدیلی کی گئی یں اس ے پاس بلے بازوں میں تجربہ کار تلک رتنے دلشان،اینجیلو میتھیوز اور مہیلا جے وردھنے ہیں جبکہ گیند بازوں میں نوان لشی ھر، سی و گے پرسنا اور سورج رندیو کچھ خطرہ پیدا کر سکتے ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment