Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 09:12 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

میں اور 50 اوورکھیلنے کیلئے بھی تیار تھا: رو ہت

 

کولکتہ، 14 نومبر (یو این آئی) ون ڈے تاریخ میں سب سے بڑی اننگز کھیلنے والے دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی روہت شرما نے کریئر کی بہترین اننگز کے بعد کہا ہے کہ وہ طویل عرصے بعد ٹیم میں واپسی کرتے ہوئے اور زیادہ توانا محسوس کر رہے ہیں اور سری لنکا کے خلاف میچ میں اور 50 اوور کھیلنے کے لیے بھی تیار تھے۔چوٹ کے بعد ٹیم میں واپسی کر نے والیروہت نے ہندستان کو چوتھے ون ڈے میں تنہا زبردست جیت دلانے کے بعد کہا کہ ٹیم کے اسکور کو دیکھنا ضروری ہوتا ہے اور اسی کو ذہن میں رکھ کر آپ اپنی اننگز کھیلتے ہیں۔ اس لئے ضروری ہے یہ دیکھنا کہ آپ کی ٹیم کی پوزیشن کیا ہے ۔ ڈھائی ماہ بعد ٹیم انڈیا کے لیے کھیل رہے روہت انگلی میں چوٹ کے بعد ٹیم سے باہر ہو گئے تھے۔ لیکن سری لنکا کے خلاف پریکٹس میچ میں انہوں نے بہترین سنچری بنائی۔ روہت نے چوتھے ون ڈے کے بعد اپنی دوہری سنچری سے متعلق پوچھے جانے پرکہا کہ مجھے لگتا ہے کہ درمیان میں تین ماہ کا بریک میرے لیے فائدہ مند ثابت ہوا ہے۔ میں اب بالکل تھکا ہوا نہیں ہوں اور میچ میں تو میں اور 50 اوور کھیلنے کے لیے تیار تھا ۔انہوں نیکہا کہ میں سچ کہوں تو میچ میں بڑی اننگز کھیلنے کے ارادے سے اترا تھا۔ میں نے جب 50 رن بنائے تو مجھے پتہ تھا کہ ابھی اور رن بنانے ہیں اور بلے بازی کے لیے یہ اچھی وکٹ ہے۔ اس پچ پر تو 300 سے 350 رن تک کا اسکور کا پیچھا کیا جا سکتا تھا۔ اس لئے ہم دیر تک پچ پر ٹکے رہ کر زیادہ سے زیادہ رنز بنانا چاہتے تھے ۔173 گیندوں میں 264 رنز بنانے کے بعد ہندوستانی بلے باز نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ میچ میں کھیلنے کے وقت سوچنا ضروری ہوتا ہے۔ میں نے ایڈن گارڈن میں وہی کیا ہے۔ میں یہی سوچ رہا تھا کہ اور کتنے گیندباز بچے ہیں کتنے اوور باقی ہیں۔ جب آپ بلے بازی کرتے ہیں تو ہر بات کے بارے میں سوچنا ضروری ہوتا ہے ۔ وریندر سہواگ اور سچن تندولکر کو ون ڈے میں ڈبل سنچری بنانے کے معاملے میں پیچھے چھوڑ نے والے روہت نے میچ کو لے کرکہا کہ بڑا اسکور بنانا آسان نہیں وتا ہے۔ ابتدائی 10 سے 15 اوور تو میرے لیے آسان نہیں تھے۔ ڈھائی ماہ کے بعد واپسی کرنا اور چوٹ سے نجات حاصل کر کے کھیلنا میرے لیے آسان نہیں تھا اور میں تھوڑا سا مختلف محسوس کر رہا تھا۔ شروع شروع میں تو کچھ صورت حال اتنی آسان نہیں لگ رہی تھی جیسا پہلے ہوتا تھا۔ روہت نے کہا کہ میں میچ کے دوران خود سے کہہ رہا تھا کہ چاہے میں کتنی بھی گیندکھیلو مجھے پچ پر بنے رہنا ہے اور آؤٹ نہیں ہونا کیونکہ میں جانتا تھا کہ میں کسی بھی وقت رن ریٹ بڑھا سکتا ہوں۔ اجنکیا رہانے کے 28 رنز کی مدد سے مجھے ٹکنے کا موقع مل گیا۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment