Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 09:34 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

سریتا کو طویل پابندی کا سامنا

 

نئی دہلی، 12 نومبر (یو این آئی) مکے باز ایل سریتا دیوی کے انچیون ایشیائی کھیلوں میں تمغہ واپس کرنے کے معاملے میں سخت رویہ اختیار کرتے ہوئے بین الاقوامی باکسنگ ایسوسی ایشن (آئی بی اے) نے بدھ کو اشارہ دیا ہے کہ ہندوستانی کھلاڑی کو اس رویے کے لیے طویل پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔جنوبی کوریا کے انچیون میں اختتام پذیر ایشیائی کھیلوں میں نتائج سے مایوس سریتا نے کانسہ کا تمغہ قبول کرنے سے انکار کر تے ہوئے اسے پوڈیم پر ہی چھوڑ دیا تھا۔ اگرچہ بعد میں سریتا نے اس معاملے پر معافی بھی مانگی تھی لیکن باکسنگ انڈیا کی مداخلت کے باوجود آئی بی اے سریتا کو معاف کرنے کے حق میں نہیں ہے۔آئی بی ایکے صدر سی کے وو نے معاملے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کھیلوں میں تمغہ لوٹانے اور کھیل جذبے کی توہین کرنے کے الزام میں سریتا کو بڑی سزا کا سامنا کرنا پڑے گا۔ یہ ممکن ہے کہ کمیشن اس معاملے میں جلد ہی اپنا فیصلہ سنا دے۔وو نے ساتھ ہی ہندوستانی مکے باز کی معافی کو قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے اس رویے کو نامناسب اور ناقابل قبول قرار دیا۔ واضح رہے کہ آئی بی اے نے اکتوبر میں سریتا دیوی اور ان کے کوچ پرو غیر معینہ مدت تک کے لیے پابندی لگا دی تھی ۔ ان کے کوچ جی ایس سندھو اور ایشیاڈ میں ہندوستانی ٹیم کے سربراہ اے جے سماریوالا پر بھی پابندی لگا دی گئی تھی۔وو نے آئی بی اے کانگریس سے پہلے دیے گئے اپنے بیان میں کہا کہ سریتا کو ان کے برتاؤ کے لئے سخت پابندی کا سامنا کرنا ہوگا۔ اس معاملے پر ادارہ قطعی برداشت نہ کرنے کا موقف اختیار کرے گا۔ اگر آپ فاتح ہونا قبول کرتے ہیں تو آپ کو شکست بھی تسلیم کرنی ہوگی۔ اگر ہر کوئی اس طرح سے برتاؤ کرنے لگے گا تو پھر کس طرح کا مقابلہ ہوگا۔آئی بی ایصدر نے ا کہ میں نے کہا تھا کہ معافی مانگنے سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے آپ کو اس طرح کیبرتاؤ سے پہلے سوچنا چا ییان کے خلاف پابندی عائد کی جائے گا کیونکہ ہم اس بات کو ذہن نشین کرنا چاہتے ہیں کہ تمام ریفری اور ججوں کے فیصلے کا احترام کیا جانا چاہیے ۔انہوں نے ساتھ ہی کہا کہ ایشین گیمس کے دوران نئے اسکورنگ نظام کو لاگو کرنے کی وجہ سے کھلاڑیوں میں تذبذب پیدا ہوا تھا۔ نئے نظام کے تحت 10 پوائنٹ سسٹم کو لاگو کیا گیا ہے جبکہ پہلے مکوں کی بنیاد پر اسکور کیا جاتا تھا۔ وو نے کہا147میچ میں پانچ ججوں میں سے تین کو مپیوٹر کے ذریعے باؤٹ سے کچھ دیر پہلے منتخب کیا جاتا ہے تاکہ شفافیت قائم رہے ایسے میں ججوں پر سوال اٹھانا ٹھیک نہیں ہے ۔آئی بی اے نے سریتا کے علاوہ دیگر ہندوستان افسران کو بھی اگلا نوٹس آنے تک انہیں کسی بھی بین الاقوامی ٹورنامنٹ یا میٹنگ میں حصہ لینے سے روک دیا ہے ۔ آئی بی اینے بیان میں بتایا کہ اس معاملے کو آئی بی ایکے تادیبی کمیشن کے پاس جائزے کے لیے بھیجا گیا ہے۔ ایسے میں سریتا کوآئی بی ایخاتون عالمی مکے بازی چیمپئن شپ میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ہے۔سریتا کو ایشیاڈ میں 60 کلوگرام زمرے کے سیمی فائنل میں جنوبی کوریا کی جی نا پارک کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا لیکن مقابلے میں آگے چل رہی سریتا کو مفتوح قرار دیا جانا قبول نہیں ہوا اور انہوں نے کھل کر اس کی مخالفت کی۔ اس کے بعد تمغہ تقسیم کی تقریب میں انہوں نے گلے میں میڈل پہننے سے انکار کرتے ہوئے پارک کے گلے میں یہ تمغہ ڈال دیا۔تاہم اس معاملے پر ایشیا اولمپک یونین سے انتباہ ملنے کے بعد سریتا نے معافی مانگتے ہوئے تمغہ قبول کر لیا تھا۔ لیکن تحریری معافی کے باوجود باکسنگ کی عالمی تنظیم آئی بی اینے اپنا موقف تبدیل نہیں کیا اور سریتا اور ان کے کوچ کو معطل کر دیا۔ اس سے پہلے گزشتہ ماہ با سنگ انڈیا کے صدر سندیپ ججودیا نے بھی آئی بی اے سے سریتا معاملے پر نرم رویہ اختیار کرنے کی اپیل کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ سریتا کا برتاؤ غصے اور جذبات کی وجہ سے تھا اور اس کی کوئی پہلے سے منصوبہ بندی نہیں تھی۔ ایسے میں انسانی ہمدردی کی بنیادپر سریتا کے خلاف سخت کارروائی نہیں ہونی چاہئے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment