Today: Wednesday, September, 26, 2018 Last Update: 10:54 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

خاتون باکسروں کے حمل ٹسٹ میں کوئی برائی نہیں:سنیتا

 

نئی دہلی، 06 نومبر (یو این آئی) خواتین باکسروں کا حمل ٹیسٹ کرانے کے تنازعہ کے درمیان سابق اتھلیٹ سنیتا گودارا نے جمعرات کو اس معاملے کو یہ کہہ کر اور ہوا دے دی ہے کہ اس طرح کا ٹیسٹ کھلاڑیوں کے لئے عام بات ہے۔ گودارا نے کہا کہ ایسا نہیں ہے کہ حاملہ خواتین کھیل نہیں سکتیں۔ لیکن اگر وہ کسی بین الاقوامی ٹورنامنٹ میں کھیلنے کے لیے جا رہی ہیں اور کھیل ایسا ہو جہاں انہیں چوٹ لگ سکتی ہے تو ان کو بہت ہی محتاط رہنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لئے یہ کوئی الگ بات نہیں ہے اور نہ ہی یہ جبرا کرائے جانے والا کوئی ٹیسٹ ہے ۔ سابق کھلاڑی نے کہا کہ کسی بھی کھیل کا یہ اصول ہوتا ہے کہ اسے ڈوپنگ یا دیگر کسی میڈیکل ٹیسٹ سے گزرنا پڑتا ہے۔ اس طرح کے کھیل کے قوانین پر تمام کھلاڑیوں کو عمل کرنا چاہیے اور اگر کوئی ایسا نہ کرے تو ان پر پابندی لگنا چاہیے ۔ انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ کسی خاتون مکے باز کا حمل ٹیسٹ ہونا کافی ضروری بھی ہے کیونکہ اگر مکہ باز کو ایسی حالت میں باؤٹ کے دوران چوٹ لگ جائے تو اس کے لیے انتظامیہ کو ہی بعد میں ذمہ دار نہ ٹھہرایا جائے ۔ واضح رہے کہ میڈیا میں آئی اس خبر نے ہلچل پیدا کر دی تھی کہ خاتون باکسروں کا باکسنگ انڈیا نے حمل ٹیسٹ کرایا ہے۔ اس میں جونیئر سے لے کر غیر شادی شدہ لڑکیوں کا بھی یہ ٹیسٹ ہو رہا ہے۔ کوریا میں اگلے ہفتے سے ورلڈ چیمپئن شپ میں حصہ لینے جا رہی خاتون باکسروں کا حمل ٹیسٹ کرایا گیا ہے۔ لیکن میڈیا میں آئی اس خبر نے تب نیا موڑ لے لیا جب کچھ سیاسی جماعتوں نے اس پر ناراضگی ظاہر کی۔ کانگریس کی ترجمان شوبھا اوجھا نیکہا کہ یہ کافی المناک ہے کہ غیر شادی شدہ لڑکیوں کا بھی حمل ٹیسٹ کرایا جارہا ہے ۔

...


Advertisment

Advertisment