Today: Saturday, September, 22, 2018 Last Update: 11:53 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

محمڈن اسپورٹنگ کلب کے بحران پرشیدائیوں کا شدید رد عمل

 

کلکتہ21اکتوبر(یو این ا ئی )ہندوستان کی مشہورفٹ بال کلب محمڈن اسپورٹنگ کلب کی بدحالی اور مالی بحران کی وجہ سے ملک گیر مقابلوں میں حصہ لینے سے کنارہ کشی اختیار کیے جانے کی خبر پر فٹ بال شائقین اور محمڈن کے شیدائیوں کی جانب سے سخت رد عمل کا اظہار کیا جارہا ہے ۔محمڈن اسپورٹنگ کلب کے سابق نائب صدر معین الدین شمس نے محمڈن اسپورٹنگ کلب کی تنزلی کی خبروں کو افسوس ناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب صرف مسلمانان مغربی بنگال کی شان نہیں ہے بلکہ یہ کلب ہندوستان کے عزت و وقار کی علامت رہی ہے ۔محمڈن اسپورٹنگ کلب کا یہ کارنامہ تاریخ کا ایک حصہ ہے کہ کلب کے کھلاڑیوں نے ہی سب سے پہلے ڈورنڈو کپ میں برطانوی دبدبہ کا خاتمہ کیا تھا۔معین الدین شمس نے محمڈن کی انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ محمڈن کی شاندار روایات کو برقرار رکھنے کیلئے کشادہ دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے محمڈن کی بھلائی کیلئے جو کچھ ہوسکتے ہیں انہیں اقدامات کرنا چاہیے۔

معین الدین شمس نے کہا کہ چوں کہ ریاستی وزیر جاوید احمد خان نے خود ا گے بڑھ کر محمڈن اسپورٹنگ کلب کو مالی بحران سے نکالنے اور محمڈن اسپورٹنگ کلب کی شاندار روایات کو برقرار رکھنے کیلئے جد و جہد کرنے کی پیش کی ہے تو محمڈن کی موجودہ انتظامیہ کو چاہیے کہ ریاستی وزیر جاوید احمد خان کے اس پیش کش کا خیر مقدم کرتے ہوئے محمڈن اسپورٹنگ کلب کی انتظامی ذمہ داری جاوید احمد خان کو سونپ دیں اور ان کی قیادت میں کلب کے کی شاندار روایات کی بحالی کی جدو جہد کی جائے ۔خیال رہے کہ ریاستی وزیر جاوید احمد خان نے محمڈن اسپورٹنگ کلب کے بند ہونے کی خبر پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاتھا کہ اگر موجودہ انتظامیہ کلب کو نہیں چلاپارہی ہیں توانہیں چاہیے کہ کلب کی ذمہ داری سے سبکدوش ہوجائیں اور میں کلب کی باگ ڈور سنبھالنے کو تیار ہوں ۔

ہیومن رائٹس پروٹیکشن ایسوسی ایشن کے صدر شمیم احمد نے محمڈن اسپورٹنگ کلب کے مالی بحران کو المیہ سے تعبیر کرتے ہوئے کہا ہے کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب ہندوستان کی شان رہی ہے ۔اس کلب نے ہندوستانی فٹ بال کو کئی اہم کھلاڑی دیے ہیں جنہوں نے بین الاقوامی سطح پر ہندوستان کا نام روشن کیا ہے ۔اتنی شاندار روایات والی ٹیم کا بحران کا شکار ہوجانا ہماری ناکامی و کوتاہی کا زندہ ثبوت ہے ۔شمیم احمد نے کہا کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب کے بحران کی اصل وجہ یہ ہے کہ کلب اپنے روایتی شیدائیوں سے دور ہوتا چلا گیا ہے ۔ایک زمانہ تھا کہ محمڈن کے شیدائی ہندوستان بھر میں تھے ۔کلکتہ میں تو محمڈن کے شیدائی اپنی جان تک نچھاور کردیتے تھے مگر لگاتا ر خراب فارم اور کلب انتظامیہ کی جانب سے محمڈن کے دائرہ کار کو محدود کردینے کی وجہ سے محمڈن اپنے روایتی شیدائی کی ہمدردی سے محروم ہوتا چلاگیا ہے ۔

شمیم احمد نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ کسی بھی کلب کو چلانے کیلئے مال کی فراہم ایک ہم ضرورت ہے ۔مگر سوال یہ ہے کہ 100سال قدیم کلب ماضی میں کس اسپانسر کی بدولت اتنے شاندار کھیل کا مظاہرہ کرتی تھی ۔اس بات پر بھی کلب انتظامیہ کو غور کرنا چاہیے ۔شمیم احمد نے مطالبہ کیا کہ کلب انتظامیہ محمڈن اسپورٹنگ کلب کو مالی بحران اور دیگر مشکلات سے نکالنے کیلئے ایک اعلیٰ سطحی جائزہ کمیٹی تشکیل دینی چاہیے جس میں زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہوں اور اس کمیٹی کی شفارشات کی بنیاد پر کلب انتظامیہ کو کارروائی کرنی چاہیے۔اس کے علاوہ محمڈن اسپورٹنگ کلب کے دروازے کھولنے کی ضرورت ہے ۔ممبر سازی بڑے پیمانے پر کی جائے۔خیال رہے کہ گزشتہ چند دنو ں سے یہ خبر گردش کررہی ہے کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب مالی بحران کی وجہ سے اپنی سرگرمیوں کو محدود کرلیا ہے ۔گرچہ اس خبرپر محمڈن اسپورٹنگ کلب کی انتظامیہ نے وضاحت کی ہے کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب نے صرفڈورنڈوکپ اور ا ئی لیگ سیکنڈ ڈویژن میں حصہ نہیں لینے کا فیصلہ کیا ہے ۔اور یہ فیصلہ انڈین فٹ بال فیڈریشن سے احتجاج کے طور پر کیا گیا ہے ۔کلب انتظامیہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ محمڈن اسپورٹنگ کلب حسب دستور مقامی کھیلوں میں حصہ لیتی رہے گی اور کیمپ کا نظام بھی چلتا رہے گا ۔

...


Advertisment

Advertisment