Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 05:44 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستانی فٹ بال کے ایک عہد کا خاتمہ

 

بند ہوگا 123 سال پرانا محمڈن اسپورٹنگ کلب

کولکتہ، 20 اکتوبر (یو این آئی) ہندوستانی فٹ بال میں انڈین سپر لیگ (آئی ایس ایل ) کو جہاں نئے انقلاب کے طور پر دیکھا جا رہا ہے وہیں ملک کا 123 سال پرانا فٹ بال کلب محمڈن ا سپورٹگ کلب مالی بحران کی وجہ سے بند ہونے جا رہا ہے۔ ہندوستانی فٹ بال کے شائقین کے لیے محمڈن ا سپورٹگ کا بند ہونا ایک افسوسناک خبر ہے۔ محمڈن ا سپورٹگ کی ورکنگ کمیٹی کی ہفتہ کو ہونے والی میٹنگ میں کلب کے حکام نے یہ چونکانے والا فیصلہ کیا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ شدید مالی بحران کی وجہ سے انہیں اس تاریخی فٹ بال کلب کو بند کرنے کے لئے مجبور ہونا پڑا ہے۔محمڈن ا سپورٹگ کے کھلاڑیوں کو گزشتہ تین ماہ سے کوئی تنخواہ نہیں ملی ہے۔ اس کلب کا قیام 1891میں عمل میں آیا تھا اور اس کا شمار ملک کے سب سے پرانے کلبوں میں ہوتا ہے۔ محمڈن ا سپورٹگ نے 2013 میں ڈورنڈ کپ اور آئی ایف اے شیلڈ خطاب جیتے تھے لیکن اپنے کھلاڑیوں اور کوچنگ اسٹاف کو ادائیگی نہ کر نے کی وجہ سے کلب کو کافی خراب دور سے گزرنا پڑ رہا تھا۔محمڈن اسپورٹنگ کلب اپنی مالی ضروریات کو بھی پورا نہیں کر پا رہا تھا جس سے کھلاڑیوں اور کوچنگ عملے میں گہرا عدم اطمینان پیدا ہوگیا تھا۔ کلب کا خیال تھا کہ اب اس کے لیے اپنی ٹیم کو برقرار رکھنا بہت مشکل ہو گیا ہے۔ یہ بھی خیال کیا جاتا ہے کہ کلب نے اپنے غیر ملکی کھلاڑیوں کو کلب چھوڑ کر جانے کی اجازت دے دی تھی کیونکہ وہ ان کو تنخواہوں کی ادائیگی نہیں کرپا رہا تھا۔ محمڈن اسپورٹنگ کے بند ہونے کی خبر ملتے ہی سوشل میڈیا سائٹس پر شائقین کے رد عمل کا سیلاب آگیا اور ان کا خیال ہے کہ ہندوستانی فٹ بال کیلئے یہ ایک المناک دن ہے۔کولکاتا کے تین مشہور کلبوں ایسٹ بنگال، موہن بگان اور محمڈن اسپورٹنگ نے ملک میں اپنی فٹ بال کے لیے بے مثال خدمت دی تھی اور اب محمڈن اسپورٹنگ کے بند ہونے کے فیصلے سے فٹ بال کے لئے جنون رکھنے والی اس ریاست میں فٹ بال کے پرستاروں کو گہرا جھٹکا لگے گا۔اپنی کالی اور سفید جرسی کیلئے مشہور محمڈن کھیلوں کی تشکیل 1887 میں جوبلی کلب کے طور پر کی گئی تھی اور اسے 1891میں محمڈن اسپورٹنگ کا نام ملا تھا۔ تب سے گزشتہ 123 سال میں اس کلب کو اسی نام سے جانا جاتا ہے۔محمڈن اسپورٹنگ نے اپنی پہلی بڑی کامیابی 1934 کولکتہ فٹ بال لیگ جیت کر حاصل کی تھی ۔محمڈن اسپورٹنگ نے 1934 سے 1938 تک مسلسل پانچ بار کولکتہ فٹ بال لیگ جیتنے کا ریکارڈ قائم کیا تھا۔ محمڈن اسپورٹنگ نے 1990 میں نہرو کلب کپ کے سیمی فائنل میں بھی پہنچنے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔ ہندوستان میں منعقد ہونے والا یہ واحد انٹرنیشنل کلب ٹورنامنٹ تھا اور محمڈن اسپورٹنگ اس ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل میں پہنچنے والا واحد ہندوستانی کلب بنا۔ اس کلب نے ہندوستان کے سب سے پرانے فٹ بال ٹورنامٹ ڈورنڈ کپ میں برٹش ٹیموں کا غلبہ توڑتے ہوئے 1941 میں چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا۔ کلب کو گزشتہ کئی سال میں مالیاتی بحران سے گزرنا پڑ رہا تھا لیکن جب اس نے 2013 میں ڈورنڈ کپ اور آئی ایف اے شیلڈ جیتی تب لگا کہ یہ کلب دوبارہ زندہ ہو سکتا ہے۔ محمڈن اسپورٹنگ نے آئی لیگ کی فرسٹ ڈویژن کیلئے کوالیفائی کیا لیکن ایک بار پھر اسے ٹیئرٹو میں جانا پڑا۔ مالیاتی بحران کی وجہ سے محمڈن اسپورٹنگ آئی لیگ میں کلب لائسنسنگ جیسی ضروریات کو بھی پورا نہیں کر پا رہا ہے۔ ایسٹ بنگال اور موہن بگان نے خود کو نئے چیلنجوں کے مطابق ڈھال لیا لیکن اسپورٹنگ کلب ایسا کرنے میں ناکام رہا۔ محمڈن اسپورٹنگ کو بند کیے جانے کے فیصلے کے ساتھ ہی ہندوستانی فٹ بال کا ایک باب اب ختم ہو گیا۔

 

...


Advertisment

Advertisment