Today: Monday, November, 20, 2017 Last Update: 12:57 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

پنے کے ہوئے دھونی، راجکوٹ کے رینا

 
ممبئی، 15دسمبر (یو این آئی) ہندستانی ون ڈے کپتان مہندر سنگھ دھونی انڈین پریمیئر لیگ ٹوئنٹی 20ٹورنامنٹ میں آٹھ سال کے طویل وقفے کے بعد آئی پی ایل کے 2016میں ہونے والے نویں سیزن میں نئی ٹیم پنے کے لئے کھیلیں گے جبکہ معطل چنئی سپرکنگس میں ان کی ٹیم کے ساتھی رہے آل را¶نڈر سریش رینا راجکوٹ میں شامل ہو گئے ہیں۔پہلے سے توقع کے مطابق سنجیو گوینکا کی نیو رائزنگ پنے فرنچائزز نے ہندوستانی کپتان دھونی کو 12.5کروڑ روپے کی قیمت دے کر سب سے پہلے اپنی ٹیم کا حصہ بنایا جبکہ راجکوٹ نے اسی قیمت پر سب سے پہلے آل را¶نڈر رینا کو اپنی ٹیم میں شامل کیا۔ڈرافٹ میں سب کی نگاہیں دھونی پر ہی لگی تھیں جو آئی پی ایل کی معطل ٹیم چنئی سپر کنگ کو دو بار خطاب دلا چکے ہیں۔ تاہم طویل عرصے تک ان کی ٹیم کے ساتھی رینا ان سے جدا ہو کرراجکوٹ کا حصہ بن گئے ۔ڈرافٹ میں پنے نے اپنے پہلے پانچ سرفہرست کھلاڑیوں میں دھونی کے علاوہ اجنکیا رہانے ، روی چندرن اشون، آسٹریلیا کے ا سٹیون اسمتھ اور جنوبی افریقہ کے بلے باز فاف ڈو پلیسس کو اپنی ٹیم میں شامل کیا جبکہ راجکوٹ نے رینا، رویندر جڈیجہ، نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن میک کولم، جیمز فاکنر اور ڈیون براوو کو اپنی ٹیم میں شامل کیا۔آئی پی ایل کی دو نئی ٹیموں پنے اور راجکوٹ نے منگل کو یہاں ممبئی کرکٹ ایسوسی ایشن (ایم سی اے ) کے باندرا کرلا کامپلیکس میں منعقد کھلاڑیوں کے ڈرافٹ میں کھلاڑیوں کو منتخب کیا۔ ڈرافٹ میں کل 50کھلاڑی دستیاب تھے جن میں سے ٹیموں نے ٹاپ 10کھلاڑیوں کو منتخب کیا جبکہ باقی کھلاڑیوں کو نیلامی کے عمل کے ذریعے شامل کیا جائے گا جو اگلے سال بنگلور میں منعقد ہو گی ۔پنے نے ہندستانی ٹیم کے نئے اسٹار بلے باز اجنکیا رہانے کو 9.5 کروڑ اور راجکوٹ نے آل را¶نڈر رویندر جڈیجہ کو 9.5کروڑ روپے میں خریدا۔ہندستان کے سرفہرست آف اسپنر اشون کو پنے نے اپنے پرس سے 7.5کروڑ روپے دے کر ٹیم میں شامل کیا جبکہ غیر ملکی کھلاڑیوں میں نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن میک کولم کو بھی 7.5 کروڑ روپے کی قیمت پر راجکوٹ نے خریدا۔ میک کولم غیر ملکی کھلاڑیوں میں سب سے پہلے بکے ۔چوتھے کھلاڑی کے طور پر دونوں ٹیموں کی پسند آسٹریلوی کھلاڑی رہے اور پنے نے اسٹیون اسمتھ کو5.5 کروڑ روپے اور راجکوٹ نے جیمز فاکنر کو5.5کروڑ روپے میں خریدا۔پنے نے جنوبی افریقہ کے بلے باز فاف ڈو پلیسس کو چار کروڑ روپے دے کر پانچویں اور آخری کھلاڑی کے طور پر خریدا جبکہ ویسٹ انڈیز کے ڈوین براوو کو چار کروڑ روپے خرچ کر راجکوٹ نے اپنی ٹیم کا حصہ بنایا۔دونوں فرنچائزیز نے اسی کے ساتھ اپنے پرس سے 39کروڑ روپے خرچ کر دیے ہیں اور باقی 27کروڑ روپے کے پرس کے ساتھ وہ بنگلور میں ہونے والی نیلامی کے عمل میں ٹیم کے لئے باقی کے کھلاڑیوں پر بولی لگائیں گی۔ڈرافٹ میں چونکانے والی بات یہ رہی کہ کسی بھی ٹیم نے آسٹریلیا ئی آل را¶نڈر شین واٹسن پر بولی نہیں لگائی جبکہ دونوں ٹیمیں بلے بازوں پر ہی دا¶ لگاتی نظر آئیں جبکہ اکیلے اشون ہی دس کھلاڑیوں میں منتخب ہونے والے اکیلے ماہر بولر رہے ۔پنے اور راجکوٹ نے سات کھلاڑیوں کو چنئی سپرکنگس سے شامل کیا جبکہ راجستھان رائلز کے تین کھلاڑیوں کو منتخب کیا گیا۔سنجیو گوینکا کی نیو رائزنگ پنے اور موبائل صنعت کار انٹیکس راجکوٹ فرنچائزیز کی مالک ہیں جو سال 2016اور 2017 آئی پی ایل سیزن کے لئے ہیں۔ڈرافٹ میں پنے کو کھلاڑیوں کو پہلے منتخب کرنے کی اجازت تھی کیونکہ ریورس بولی کے عمل میں اس نے سب سے کم بولی لگائی تھی اور پہلے سے توقع کے مطابق اس نے ہندستانی ون ڈے کپتان دھونی کو اپنی ٹیم کا حصہ بنایا۔ان کھلاڑیوں کو ملی اس کی قیمت ان کی مکمل تنخواہ نہیں ہے ۔یہ رقم پنے اور راجکوٹ کے پرس سے کٹی ہے ۔تمام منتخب 10 کھلاڑیوں کو وہی رقم ادا کی جائے گی جو انہیں چنئی اور راجستھان سے ملتی تھی۔ راجکوٹ کے مالک کیشو بنسل نے ڈرافٹ کے بعد کہا کہ میں نے ابھی نہیں سوچا ہے کہ کون ہماری ٹیم کی قیادت کریں گے لیکن ہم جلد ہی اس کا فیصلہ کر لیں گے ۔ فرنچائزز حاصل کرنے کے بعد ہم نے بہترین کھلاڑیوں کو منتخب کیا اور میں ڈرافٹ سے کافی مطمئن ہوں۔جیسے ہی ٹیم جمع ہوگی ہم کپتان کا اعلان کریں گے ۔دھونی آٹھ سال کے طویل وقفے کے بعد آئی پی ایل میں چنئی سپر کنگ سے الگ ہو کر کسی دوسری ٹیم کا حصہ بنے ہیں۔دھونی نے آئی پی ایل میں چنئی کے لئے 129میچ کھیلے ہیں اور انہوں نے 39.30کے اوسط سے 2987رنز بنائے ۔دھونی نے چنئی کے تمام آٹھ سیزن میں کپتانی کی ہے اور سال 2010اور 2011میں مسلسل چمپئن بھی بنایا۔اس کے علاوہ آئی پی ایل کے سب سے ہائی پروفائل کھلاڑی رانچی کے دھونی نے چیمپئنز لیگ ٹوئنٹی 20میں بھی ٹیم کو دو بار خطاب تک پہنچایا ہے ۔ڈرافٹ میں ٹیموں کے لئے دھونی کے علاوہ دیگر ہندوستانی کھلاڑیوں میں زبردست فارم میں چل رہے آف اسپنر اشون اور ہندستانی ٹیم کے کھلاڑی رہانے بھی فرنچائزیز کی پہلی پسند بن کر ابھرے ۔آئی پی ایل میں چنئی کے لئے 97میچ کھیل چکے اشون ٹوئنٹی 20ٹورنامنٹ میں نہ صرف گیند سے کامیاب رہے ہیں بلکہ انہوں نے نچلے آرڈر پر بھی زبردست بلے بازی کی ہے اور پنے نے اشون کو بھی اپنی ٹیم میں شامل کر لیا۔راجکوٹ نے زبردست فارم میں کھیل رہے رویندر جڈیجہ کو اپنی ٹیم کا حصہ بنا کر صحیح فیصلہ لیا۔ اس کے علاوہ نیوزی لینڈ کے کپتان میک کولم غیر ملکی کھلاڑیوں میں منتخب ہونے والے پہلے کھلاڑی رہے جنہیں راجکوٹ نے اپنی ٹیم کا حصہ بنایا۔راجکوٹ کا حصہ بنے آل را¶نڈر رینا نے ٹویٹ کر کہا کہ میں راجکوٹ جیسے خوبصورت شہر کا حصہ بن کر خوش ہوں اور یہاں کھیلنے کے لئے حوصلہ افزا ہوں۔مجھے امید ہے کہ ٹیم کے ساتھی مل کر کھیلیں گے اور راجکوٹ کے لوگ ٹیم کی حمایت کریں گے ۔ڈرافٹ کے بعد پنے کے مالکان نے بھی کہا کہ انہوں نے ابھی تک ٹیم کا نام طے نہیں کیاہے ۔ فرنچائزز کے افسر نے ساتھ ہی کہا کہ جن بھی کھلاڑیوں کو ٹیم میں منتخب کیا گیا ہے ان کے مفادات کی حفاظت کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ مثال کے طور پر دھونی کا معاہدہ اگر چنئی کے ساتھ 15کروڑ روپے تھا تو فرنچائزز نے انہیں پہلے کھلاڑی کے طور پر ٹیم میں شامل ہے تو انہیں اتنا ہی دیا جائے گا۔افسر نے کہا کہ دھونی کو اس رقم سے زیادہ ادا نہیں کیا جائے گا جتنا انہیں سپرکنگس میں ملتے تھے لیکن جس کی قیمت 12.5کروڑ روپے میں ان پنے نے خریدا ہے اس فرنچائزز کے پرس سے کم کر دیا جائے گا۔دھونی کو پنے نے 12.5 کروڑ روپے کی قیمت پر ٹیم کا حصہ بنایا ہے ۔دونوں نئی ٹیموں پنے اور راجکوٹ کے پاس کم از کم 40کروڑ اور زیادہ سے زیادہ 66کروڑ روپے کا پرس ہے ۔غور طلب ہے کہ آئی پی ایل چھ بدعنوانی کیس میں مجرم پائے جانے کے بعد انکوائری کمیٹی نے چنئی اور راجستھان دونوں ٹیموں کو دو دو سال کے لئے ٹورنامنٹ سے معطل کر دیا تھا۔تاہم معطلی مکمل کرنے کے بعد چنئی اور راجستھان لیگ میں واپسی کر لیں گی۔دہلی میں آٹھ دسمبر کو پنے اور راجکوٹ کو ریورس نیلامی کے عمل کی بنیاد پر سال 2016اور 2017کے سیزن کے لئے آئی پی ایل میں شامل کیا گیا تھا جنہوں نے چنئی اور راجستھان کی جگہ لی ہے ۔
 
...


Advertisment

Advertisment