Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 06:00 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

پنجاب اور اتر پردیش کے درمیان میچ میں ٹاس بنے گا باس

کانپور، 22 نومبر (یو این آئی) ناک آ¶ٹ مرحلے میں داخلے کے لئے پوائنٹ ٹیبل میں اپنی پوزیشن بہتر کرنے کی جدوجہد میں مصروف اتر پردیش اور پنجاب کی ٹیمیں چار روزہ رنجی ٹرافی گروپ بی مقابلے میں پیر کو گرین پارک میدان پر جب آمنے سامنے ہوں گی تو ان کا مقصد وکٹ پر نمی کا فائدہ اٹھا کر مقابلے کو اپنے حق میں کرنے کا ہوگا۔دونوں ہی ٹیمیں اپنے چھ میچ کھیل کر 17۔17 پوائنٹ کی برابری پر ہے اگرچہ بہتر رن اوسط کی بنیاد پر پنجاب کی ٹیم میزبان ٹیم سے ایک پائدان نیچے تیسرے مقام پر ہے ۔گھریلو میدان اور تقریبا ایک ہفتے پہلے یہاں تمل ناڈو کے خلاف کھیلے گئے میچ سے میزبان ٹیم کا پلڑا گرچہ بھاری لگتا ہے ۔پچ کیوریٹر شیو کمار نے بتایا کہ چار نمبر پچ پر کھیلے جانے والے اس میچ میں ٹاس کا کردار اہم ہوگا۔ہریالی پچ پر نمی سے میچ کے پہلے سیشن میں گیند بازوں کا غلبہ رہنے کے آثار ہے اگرچہ پچ پر ٹک کر پہلے کھیلنے والی ٹیم میچ کو اپنے حق میں کرسکتی ہے ۔شیو کمار نے بتایا کہ میچ کے آگے بڑھنے کے ساتھ پچ آسان ہوتی جائے گی مگر تیسرے اور چوتھے روز یہاں اسپن بولر کا جوہر دیکھنے کو مل سکتا ہے ۔میچ کے موقع پر اتر پردیش کی ٹیم نے صبح کے سیشن میں نیٹ پریکٹس سیشن میں حصہ لیا جبکہ دوپہر میں پنجاب کی ٹیم گرین پارک کی پچ کا مزاج بھانپنے اور نیٹ ورک کے لئے میدان میں آئی۔پریکٹس سیشن کے بعد میزبان ٹیم کے کپتان سریش رینا نے کہا کہ ٹیم میں بلے بازوں اور گیندبازوں کا بے جوڑ توازن ہے ۔یوراج اور ہربھجن سنگھ بیشک لاجواب کھلاڑی ہیں مگر ہم نے پنجاب کے ہر کھلاڑی کے خلاف ایک خاص حکمت عملی تیار کی ہے اور ہمیں یقین ہے کہ ناظرین کو یہاں ایک دلچسپ مقابلہ دیکھنے کو ملے گا۔پنجاب کی جانب سے گرکیرت سنگھ مان، یوراج سنگھ اور اودے کول نے رواں سیزن کے دوران سنچری بناکر اپنی موجودگی درج کرائی ہے تاہم کھلاڑیوں کو کارکردگی ٹیم کے لئے پریشانی کا سبب بنی ہوئی ہے ۔ہربھجن کے ٹیم میں شامل ہونے سے پنجاب کے حوصلے بلند ہیں ۔اتر پردیش نے گرین پارک میں تمل ناڈو کے خلاف گزشتہ میچ میں ابتدائی تین دنوں تک اپنی گرفت مضبوط رکھی تھی مگر اسٹار بولر پروین کمار کے بیمار ہونے اور مہمان ٹیم کی محنتی کارکردگی سے میچ ہار جیت کے فیصلے کے بغیر ختم ہو گئی تھی۔
 
 
...


Advertisment

Advertisment