Today: Monday, November, 19, 2018 Last Update: 11:40 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

آئی پی ایل سے قومی ٹیم میں واپسی کریں گے: ظہیر ؍ یوراج

 

ہم چاہتے ہیں کہ یوراج بغیر کسی دباؤ کے ایک پتنگ کی طرح آسمان میں اڑیں:ہیمنت
نئی دہلی، 31مارچ (یو این آئی) طویل عرصے سے ہندستانی ٹیم سے باہر رہنے والے سرکردہ تیز گیند باز ظہیر خان اور آل راؤنڈر یوراج سنگھ نے ٹیم انڈیا میں واپسی کے لیے آئی پی ایل کے آٹھویں سیزن میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے پر اپنی خاص توجہ مبذول کی ہے ۔دونوں کھلاڑی اپنی ٹیم کی ایک تقریب کے موقع پر صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے ۔یہ پوچھنے پر کہ کیا وہ آئی پی ایل کے آٹھویں سیزن سے ٹیم انڈیا میں اپنی واپسی کی امید کر رہے ہیں تو یوراج نے کہا کہ گزشتہ ایک دو سال میرے لیے کافی مشکل بھرے رہے ہیں۔میں مسلسل سخت محنت کر رہا ہوں اور گھریلو سیزن میں بھی میری کارکردگی اچھی رہی ہے ۔میں اس فارم کو آئی پی ایل میں بھی برقرار رکھنا چاہتا ہوں جس سے ٹیم انڈیا میں واپسی کرنے میں مجھے مدد ملے ۔ظہیر نے بھی یوراج کی باتوں کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ میں گزشتہ کچھ وقت سے نہیں کھیلا ہوں ۔لیکن میں اس وقت مکمل طور پر فٹ ھوں اور آئی پی ایل سیزن کیلئے تیار ہوں۔میرے لیے یہ سیزن ٹیم انڈیا میں واپسی کرنے کا ایک اچھا موقع ہے ۔یوي کی طرح میری بھی کوشش رہے گی کہ اس بار آئی پی ایل میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرکے سلیکٹروں کی توجہ حاصل کی جائے ۔ظہیر اور یوي نے آئی پی ایل کے آٹھویں سیزن میں دہلی کو نئی بلندیوں پر بھی لے جانے کا ہدف رکھا۔دہلی کی ٹیم گزشتہ سیزن میں پھسڈی رہی تھی جس کے بعد اس فرنچائزی نے اپنی ٹیم میں بڑی تبدیلیاں کیں اور یوراج کو آئی پی ایل نیلامی میں 16 کروڑ روپے کی بھاری بھرکم قیمت پر خریدا۔ یوراج نے کہا کہ میں نے گھریلو سیزن میں کافی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے جس سے میرے اندر نیا اعتماد آیا ہے ۔ہم اس بار دہلی کو آخری چار میں لے جانا چاہتے ہیں جس کے لئے ہمیں ایک یونٹ کی طرح کارکردگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔ظہیر نے بھی کہا کہ ہمارے لئے یہ سیزن ایک بڑا چیلنج ہے ۔ٹیم میں کئی نئے چہرے ہیں اور ہمیں نئے چیلنجوں کے درمیان اچھا مظاہرہ کرنے کا انتظار ہے ۔ہم نے ٹیم کے کوچ گیری کرسٹن کے ساتھ طویل عرصے کام کیا ہے اور ہمارے درمیان کافی اچھا تال میل ہے ۔یہ تال میل ٹیم کو بہتر بنانے میں مدد کرے گا۔ٹیم کے جنوبی افریقی رکن مورکل نے بھی یوي اور ظہیر کی بات کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ اس بار دہلی کا ہدف گزشتہ مایوس کن کارکردگی کو پیچھے چھوڑ کر نئی بلندیوں پر پہنچنا ہے ۔ظہیر نے دہلی کی ٹیم کے اصل منتر ’ہم منڈے ہیں دہلی کے‘کو دہراتے ہوئے کہا کہ ہم ٹیم کے تمام منڈو ں کو اپنے ساتھ لے کر آگے بڑھیں گے ۔یوراج نے دلي کے شائقین سے اپنی ٹیم کو تعاون دینے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ دہلی دل والو ں کی ہے اور وہ چاہیں گے کہ دلي والے بھاری تعداد میں اسٹیڈیم پہنچ کر ٹیم کا حوصلہ بڑھائیں۔
دوسری جانب آئی پی ایل آٹھ کیلئے 16کروڑ روپے کی سب سے مہنگی قیمت پر خریدے گئے آل راؤنڈر یوراج سنگھ کو کپتان نہ بنائے جانے کے سوال کو دہلی ڈئیر ڈیولس کے سی ای او ہیمنت دوا نے بڑے ہی فلسفیانہ انداز میں ہوا میں اڑا دیا ۔دوا نے اس سوال پر بڑے ہی فلسفیانہ انداز میں کہا کہ ہم نے یوراج کو آزاد چھوڑ دیا ہے ، ہم چاہتے ہیں کہ وہ ایک پتنگ کی طرح آسمان میں اڑیں اور بغیر کسی دباؤ کے کھیلیں۔جب یہ سوال پوچھا گیا تو یوراج نے دوا کی طرف اشارہ کیا کہ یہ بات ان سے ہی پوچھی جائے ۔دہلی کی ٹیم میں یوراج کے علاوہ سری لنکا کے کپتان اور آل راؤنڈر انجیلو میتھیوز بھی کپتانی کے دعویدار مانے جا رہے تھے ۔لیکن دہلی فرنچائزی نے کپتانی کے لیے جنوبی افریقہ کے ٹوئنٹی 20 کپتان ڈومنی کو منتخب کیا۔گزشتہ سیزن میں انگلینڈ کے کیون پیٹرسن نے دہلی کی کپتانی کی تھی لیکن ٹیم سب سے پھسڈی رہی تھی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment