Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 02:20 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہمارے پاس برابری کا موقع ہے:میکولم


امید کرتا ہوں کہ مارٹن کرو کو بقیہ زندگی میں سکو ن ملے گا:میکو لم 
ملبورن، 28؍مارچ(آئی این ایس انڈیا )نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن میکولم نے آسٹریلیا کے خلاف آج عالمی کپ کے خطابی مقابلے میں اپنی ٹیم کو برابری کا موقع دیتے ہوئے کہا کہ ان کی ٹیم کل کے بڑے لمحے اور بڑے اسٹیڈیم کا لطف اٹھائے گی۔میکولم نے میچ سے پہلے پریس کانفرنس میں کہا کہ یہ ہماری زندگی کا سب سے بہترین لمحہ ہے۔یہ ایک شاندار سفر رہا ہے ۔ہم نے آغاز سے ہی یہ خواب دیکھا اور اب خود کو فائنل میں 50-50موقع دینا بہترین حصو لیابی ہے۔ٹورنامنٹ میں اب تک نا قا بل شکست رہی نیوزی لینڈ کی ٹیم مقابلہ میں پہلی بار اپنے ملک کے باہر کھیلے گی۔ملبورن کرکٹ گراؤنڈ کے سائز کو لے کر کافی بحث ہو رہی ہے اور کہا جا رہا ہے کہ نیوزی لینڈ کو مشکل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے کیونکہ اس نے ابھی تک اپنے تمام میچ اپنے تسبتا چھوٹے میدانوں پر کھیلے ہیں۔میکو لم سے جب پوچھا گیا کہ کیاسائزاہمیت رکھتا ہے ؟تو انہوں نے کہا کہ ہاں، بے شک یہ بالکل مختلف ہے۔ہم دنیا بھر کے میدانوں پر کھیل چکے ہیں۔اگر آپ ابو ظہبی کے امارات اسٹیڈیم کو دیکھیں تو وہ بھی بڑا میدان ہے۔بے شک وہاں کا ماحول ایم سی جی کی طرح نہیں ہے لیکن مجھے لگتا ہے کہ باؤنڈری بڑی ہیں۔کل کے میچ میں ٹیم کے امکانات کے بارے میں پوچھے جانے پر اس جارحانہ سلامی بلے باز نے کہا کہ ہم کل اچھا کھیلیں گے لیکن یہ کسی چیز کی ضمانت نہیں ہے۔اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ آسٹریلیا ہمیں شکست نہیں دے سکتا ہے ۔لیکن مجھے یقین ہے کہ ہم میدان پر اترکر اپنی قا بلیت دکھائیں گے جیسا کہ پورے ٹورنامنٹ کے دوران کرتے آئے ہیں۔کیوی کپتان نے ساتھ ہی کہا کہ ان کی ٹیم کل کے میچ میں اپنا سب کچھ جھونک دے گی۔امید کرتے ہیں کہ اگر ہم اچھا کھیلیں گے تو دن کے آخر میں کل خوش ہوکر جائیں گے اور اپنی شاندار مہم کو مڑکر دیکھیں گے۔میکو لم نے حالانکہ تسلیم کیا کہ ایم سی جی پر نروس ہو جانا کوئی بہت بڑی بات نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ ہاں، مجھے لگتا ہے کہ یہ کہنا مناسب ہو گا۔آسٹریلیا کی سر زمین پر ایک لاکھ لوگ، ملبورن کرکٹ گراؤنڈ، تاریخ اور روایت اور سامنے کافی شاندار آسٹریلیائی ٹیم۔مجھے لگتا ہے کہ یہ ہمارے لئے سب سے بڑا میچ ہے۔میکولم نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ کل صبح کچھ لوگ نروس ہوں گے اس لئے مجھے لگتا ہے کہ کل کے میچ کو لے کر کچھ سنسنی ہو گی ۔یقینی طور پر یہ ایک خصوصی دن ہوگا۔میکو لم کا خیال ہے کہ’کچھ بھی ناممکن نہیں ‘والی پرانی کہاوت درست ہے اور وہ اسے ایک بار پھر صحیح ثابت کرنے کے لئے ہر ممکن کوشش کریں گے۔
دوسری جانب نیوزی لینڈ کے کپتان برینڈن میکولم نے لمفوما کینسر سے جو جھ رہے سابق کپتان مارٹن کرو کو نیک خواہشات پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہیں زندگی کے بقیہ ایام میں سکو ن ملے گا ۔کرو نے ’ای ایس پی این کرک انفو ‘پراپنے ایک جذباتی مضمون میں راس ٹیلر اور مارٹن گپٹل کو’وہ دو بیٹے کہا ہے جو ان کے اپنے نہیں تھے‘انہوں نے ساتھ ہی لکھا کہ میری غیر مستحکم زندگی شاید مجھے دیکھنے اور لطف اٹھانے کے لئے زیادہ میچ نہ دے اس لئے ایم سی جی پر یہ عالمی کپ فائنل مقا بلہ اہم ہے، آخری میچ ہے جس کے ساتھ میں خوشی سے جی سکتا ہوں۔کرو کے اس مضمون کے بارے میں پوچھے جانے پر میکولم نے کہا کہ میں نے وہ مضمون پڑھا ہے۔مجھے لگتا ہے کہ وہ شاندار رائٹر ہیں۔مجھے لگتا ہے کہ ابھی وہ جس لمحے سے گزر رہے ہیں وہ کافی مشکلوں بھرا ہے۔ہم نے ان کو گروپ کا حصہ بنایا تھا اور کچھ وقت پہلے انہوں نے ٹیم کے ساتھ وقت بھی گزارا تھا اور یہ شاندارلمحہ تھا۔میکو لم نے کہا کہ انہیں خوشی ہے کہ کوکرو خود میں اور کھیل میں سکو ن ملا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ انہوں نے خود میں اور کھیل میں سکو ن کو تلاش لیا ہے۔انہوں نے ٹیم کے کچھ ساتھیوں کی مدد کرکے ان کے کھیل میں بہتری لانے میں اہم کردار ادا کیا جس سے کہ کھلاڑی ذاتی طور پر ترقی کریں اور اجتماعی طور پر ٹیم بھی۔میکو لم نے کہا کہ اس لئے وہ جس بھی نازک لمحہ سے گزر رہے ہیں وہ کافی تکلیف دہ ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ وہ بچے ہوئے ایام میں امن کو ڈھونڈ پائیں گے۔



...


Advertisment

Advertisment