Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 05:30 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

خطاب سے صرف تین قدم دور ہے ہندستان :رینا


ہندوستان کو ہرانا ایک بڑا چیلنج : شکیب الحسن
میلبورن، 17 مارچ (یو این آئی) عالمی کپ گروپ بی میں زمبابوے کے خلاف آخری میچ میں ناٹ آؤٹ سنچری کھیل کر مین آف دی میچ بنے ہندستانی آل راؤنڈر سریش رینا نے کہا ہے کہ ہندستان عالمی کپ خطاب سے صرف تین قدم دور ہے ۔ہندستانی آل راؤنڈر نے کہا کہ خطاب حاصل کرنے کے لیے اسے اگلے تین اہم میچ جیتنے ہوں گے اور ٹیم انڈیا خطاب سے صرف تین قدم کے فاصلے پر ہے ۔ہندستان نے گروپ بی میں اپنے تمام چھ میچ جیتے ہیں ۔غیر مفتوح ٹیم کا کوارٹرفائنل میں میلبورن کرکٹ گراؤنڈ پر 19 مارچ کو بنگلہ دیش سے مقابلہ ہوگا ۔رینا نے ہندستان کی جیت کی امیدوں کے بارے میں کہ ھماري ٹیم ایک آل راؤنڈ ٹیم ہے جس میں کئی بہترین کھلاڑی موجود ہیں ۔ہماری توجہ اب کوارٹرفائنل پر لگی ہے ۔اب ہر چیز اچھی چل رہی ہے اگر اگلے دو ہفتوں میں بھی سب کچھ ایسا ہی چلتا رہا تو یہ شاندار ہوگا ۔دفاعی چمپئن ہندوستان مسلسل دوسری بار عالمی کپ خطاب جیتنے کے ارادے سے ٹورنامنٹ میں اتری ہے اور ابھی تک اس نے کمال کا مظاہرہ کیا ہے ۔ہندستانی آل راؤنڈر نے کھاکہ اب بات صرف تین اہم مقابلوں کی ہے ۔کوارٹرفائنل، سیمی فائنل اور فائنل ۔ہم نے گزشتہ ایک ماہ سے جس طرح کی کارکردگی کی ہے ہمیں اگلے تین میچوں میں بھی اسے دہرانے کی ضرورت ہو گی۔زمبابوے کے خلاف آخری گروپ میچ میں سنچری بنانے والے رینا نے کھاکہ ھمیں اپنی طاقت پر کام کرنا ہوگا ۔ہمیں اگلے تین میچوں پر اپنا فوکس لگانا ہوگا ۔ابھی تو ہماری توجہ بنگلہ دیش کے خلاف میچ پر ہے ۔بنگلہ دیش اس سطح پر اچھا کرکٹ کھیل کر پہنچا ہے اور ہم انہیں کم نہیں سمجھ رہے ہیں ۔ہم امید کرتے ہیں کہ ہم اچھا کریں اور یقیناًہم اچھا کریں گے ۔ گروپ بی میں ہندستان اور گروپ اے میں نیوزی لینڈ ہی دو ایسی ٹیمیں ہے جنہوں نے ٹورنامنٹ میں اب تک کوئی میچ نہیں ہارا ہے ۔
دوسری جانب انگلینڈ کو شکست دے کر کوارٹرفائنل میں جگہ بنانے والی بنگلہ دیش کی ٹیم جمعرات کو گزشتہ چمپئن اور اب تک چھ میچوں میں مسلسل ناٹ آؤٹ رہنے والی ہندستان سے میلبورن کے میدان پر کھیلے گي ۔کرکٹ پنڈت اگرچہ اسے یک طرفہ مقابلہ مان رہے ہوں لیکن بنگالی آل راؤنڈر شکیب الحسن کا خیال ہے کہ ان کی ٹیم کے لیے یہ میچ ایک بڑا چیلنج ہوگا ۔اپنی کارکردگی میں مسلسل بہتری کر نے والی بنگلہ دیش ہندوستان کے مقابلے کمزور ٹیم نظر آ رہی ہے لیکن ٹیم کے آل راؤنڈر اور سابق کپتان شکیب الحسن کا خیال ہے کہ ہندستان کے خلاف 28 میں سے صرف تین میچوں میں ملی جیت ہی ان کھلاڑیوں کو حوصلہ افزائی کرنے کے لیے کافی ہے اور وہ نئی تاریخ لکھنے کے لیے میدان پر اترے گی۔سال 2007 کے عالمی کپ کے دوران پورٹ آف اسپین کے کوئنس پارک اوول میدان پر کھیلے گئے میچ میں بنگلہ دیش نے ہندستان کو پانچ وکٹوں سے شکست دی تھی جو ہندوستان کے لیے تاریخی شکست میں سے ایک مانی گئی تھی ۔لیکن ہندستان نے اس کے بعد بنگلہ دیش کے ہاتھوں ایسی ہار کو کبھی دوبارہ نہیں ہونے دیا۔بنگلہ دیشی کھلاڑیوں کے لئے 2007 میں ملی جیت ہی ان کی اچھی کارکردگی کے لیے ترغیب ہے ۔ میچ سے پہلے ٹیم کے آل راؤنڈر شکیب الحسن نے منگل کو نامہ نگاروں سے کہاکہ ظاہر طور پر ہم سب کے لیے وہ جیت ذریعہ تحریک ہے اور ہم سب کے دماغ میں ہے ۔لیکن ہمیں معلوم ہے کہ اب ہم نئے میچ میں اور حالیہ دن مقابلہ کھیلیں گے ۔ہندستان دنیا کی بہترین ٹیموں میں سے ایک ہے اور اس کے پاس شاندار کھلاڑی موجود ہیں۔ہم انہیں کسی بھی طرح سے کم نہیں سمجھ سکتے ۔شکیب نے کہاکہ یہ ہمیں معلوم ہے کہ دفاعی چمپئن ٹیم کے خلاف مقابلہ سخت ہوگا اور ہم اس بات کو بخوبی جانتے ہیں لیکن ہم نے پریکٹس کی ہے اور ہم تمام اسے چیلنج کے طور پر قبول کر رہے ہیں۔ہندستان نے 2007 کی شکست کا بدلہ 2011 ورلڈ کپ میں لیا تھا اور بلے باز وریندر سہواگ (175) اور وراٹ کوہلی (ناٹ آؤٹ 100) کی سنچریوں کی بدولت 370 کا بڑا اسکور بنانے کے بعد میزبان بنگلہ دیش کو 283 پر روک دیا تھا ۔ہندستان نے 87 رنز سے یہ میچ جیت لیا تھا۔اس کے بعد بنگلہ دیش نے ہندستان کو سال 2012 میں شکست دی تھی۔
عالمی درجہ بندی میں ٹاپ آل راؤنڈر شکیب نے کہاکہ ہماری ٹیم اسی طرح کھیلے گی جیسا 2007 میں اس نے مظاہرہ کیا تھا اور سب کو حیران کیا تھا۔مجھے لگتا ہے کہ ہم سب کھلاڑیوں نے کھل کر کھیلنے کی کوشش کی ہے اور آگے بھی ہم اسے برقرار رکھنے کی کوشش کریں گے ۔موجودہ عالمی کپ میں ہم اپنے ہدف کے قریب جا رہے ہیں۔ہندوستانی ٹیم سے موازنہ کرتے ہوئے سابق بنگلہ دیشی کپتان نے کہاکہ ہندستان کے پاس بہت اچھی ٹیم ہے ۔وہ دفاعی چمپئن ہے اور اس کے پاس ایک سے ایک ٹاپ کھلاڑی موجود ہیں لیکن ہم ٹورنامنٹ میں اچھا کھیل رہے ہیں اور ہمارا اعتماد ان کے مقابلے بہت اونچا ہے ۔ہم ہی یہ میچ جیتیں گے ۔شکیب انڈین پریمیئر لیگ کا حصہ ہیں اور وہ کئی ہندوستانی کھلاڑیوں کے ساتھ اور ان کے خلاف کھیلے ہیں۔اس بارے میں انہوں نے کہاکہ یہ آئی پی ایل کے مقابلے بہت مختلف شکل ہے ۔ دونوں ٹیمیں پہلی بار کوارٹرفائنل میں کھیل رہی ہیں اور ہمیں اس بات کو سمجھنے کی ضرورت ہے کہ ٹوئنٹی 20 اور ون ڈے مقابلوں میں بہت فرق ہوتا ہے ۔
انہوں نے کہاکہ ظاہر طور پر ہندستان کے سامنے ہم کمزور نظر آ رہے ہیں اور اس بات میں کسی بھی طرح کی کوئی گنجائش نہیں ہے لیکن اس بات کو کوئی نہیں جانتا کہ کل کا دن کس کے لیے کیسا ہوگا۔ون ڈے کرکٹ میں کچھ بھی پہلے سے نہیں کہا جا سکتا اور اگر ہمارا دن اچھا ہو گا اور ہم اچھا کھیلیں گے تو ہم ہی جیتیں گے ۔اگر ہندوستان کا برا دن ہوگا تو وہ ہار سکتا ہے ۔اس بارے میں پہلے سے کچھ نہیں کہا جا سکتا۔دو بار کی ورلڈ کپ چیمپئن ہندستان جمعرات کو کوارٹرفائنل مقابلے میں میلبورن کے میدان پر بنگلہ دیش سے کھیلے گي جہاں دونوں ہی ٹیمیں سیمی فائنل میں پہچنے کے اپنی مہم میں کامیاب ہونے کے لیے ایک دوسرے کا سامنا کریں گی۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment