Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 01:51 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

عرفان چوٹ کے سبب عالمی کپ سے باہر


ایڈیلیڈ، 17 مارچ (یو این آئی) عالمی کپ کوارٹرفائنل میں مقابلہ سے پہلے ہی 1992 کے ورلڈ کپ فاتح پاکستان کو بڑا جھٹکا لگا ہے اور ٹیم کے سات فٹ طویل فاسٹ بولر محمد عرفان زخمی ہونے کی وجہ سے ورلڈ کپ سے باہر ہو گئے ہیں۔پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے منگل کو بیان جاری کر کے کہاکہ عرفان کو ٹیم کے فیزیو بریڈ روبنسن کی ہدایت پر ٹیسٹ کرانے کی صلاح دی گئی تھی جس میں یہ صاف ہو گیا ہے کہ انہیں پٹھوں میں کھنچاؤکی شکایت ہے اور وہ آگے نہیں کھیل سکیں گے ۔اس سے پہلے روبنسن نے بتایا کہ بائیں ہاتھ کے تیز گیند باز عرفان کو پٹھوں میں کھنچاؤکی وجہ سے آرام کی ضرورت ہے ۔انہوں نے بتایا کہ عرفان کے ٹیسٹ سے پتہ چلا ہے کہ ان کے پیٹ کے نچلے حصہ کے پاس پٹھوں میں کھنچاؤ آ گیا ہے ۔سات فٹ ایک انچ طویل 32 سالہ عرفان نے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے میدان پر شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور پانچ میچوں میں آٹھ وکٹ اپنے نام کئے ہیں۔
سابق پاکستانی کپتان راشد لطیف نے اسے ٹیم کے لیے بڑا دھچکا قرار دیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ ٹورنامنٹ میں نئی بال کے ساتھ عرفان پاکستان کے سب سے خطرناک کھلاڑی ثابت ہوئے ہیں۔ان کا نہ ہونا ٹیم کے لیے بڑا دھچکا ہے اور انہیں جلد سے جلد اس کی تلافی کرنے کے لیے منصوبہ بنانا ہوگا۔عرفان چوٹ کے سبب آئرلینڈ کے خلاف ہوئے گروپ میچ میں بھی نہیں کھیل پائے تھے جس میں پاکستان نے جیت درج کرنے کے بعد کوارٹرفائنل میں مقام پکا کیا۔1992 ورلڈ کپ فاتح پاکستان کا کوارٹرفائنل مقابلہ 20 مارچ کوا یڈیلیڈ میں چار بار کی عالمی کپ فاتح آسٹریلیا سے ہونا ہے ۔واضح رہے کہ عالمی کپ شروع ہونے سے پہلے ہندوستانی بلے بازوں نے عرفان کا سامنا کرنے کے لیے الگ سے تیاری کی تھی ۔وراٹ کوہلی، شکھر دھون اور روہت شرما جیسے ٹاپ آرڈر کے بلے بازوں نے اسٹول پر چڑھ کر ٹورنامنٹ میں سب سے طویل عرفان کی گیندوں کا سامنا کرنے کے لئے مشق کی تھی۔ اس کے علاوہ پاکستان بھی تیز گیندبازوں کے لئے عرفان پر انحصار کر رہا تھا ۔ایسے میں عرفان کا ٹورنامنٹ سے باہر ہونا ٹیم کے لیے بڑا دھچکا ہے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment