Today: Tuesday, November, 20, 2018 Last Update: 08:42 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

زمبابوے کیخلاف جیت کا چھکا لگانے اتریگی ٹیم انڈیا


کوارٹر فائنل سے پہلے کھلاڑیوں کے پاس پریکٹس کا ہوگا اچھا موقع،زمبابوے بھی ٹیلر کو شاندار الوداعی کیلئے پر عزم
آکلینڈ13مارچ(آئی این ایس انڈیا)اب تک بہترین کارکردگی اور شان کے ساتھ کوارٹر فائنل میں جگہ بنانے والا دفاعی چمپئن ہندوستان پول بی کے میچ میں کل یہاں زمبابوے کے خلاف اپنی زبردست کارکردگی جاری رکھ کر موجودہ ٹورنامنٹ میں چھٹی اور آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ میں مسلسل دسویں جیت درج کرنے کیلئے اترے گا۔ہندوستان نے ابھی تک ٹورنامنٹ میں شاندار کھیل کا مظاہرہ کیا ہے اور اس نے ویسٹ انڈیز کو چھوڑ کر باقی تمام ٹیموں پر یک طرفہ جیت درج کی ہے۔کیریبین ٹیم نے پرتھ کے واکا میں ہندوستانی ٹیم کو سخت چیلنج دیا تھا۔زمبابوے کے خلاف میچ محض رسمی ہے لیکن ہندوستانی ٹیم ناک آؤٹ مرحلے میں اترنے سے پہلے اپنی فاحانہ مہم جاری رکھنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑے گی۔کسی بھی ٹورنامنٹ میں تال برقرار رکھنا اہم ہوتا ہے اور ہندوستان جب ایڈن پارک میں زمبابوے کے خلاف میدان پر اترے گا تو اس کے کھلاڑی میچ پریکٹس کا کوئی موقع نہیں چھوڑنا چاہیں گے۔زمبابوے نے اب تک پول میں صرف ایک جیت درج کی ہے۔آسٹریلیا کے خلاف ٹسٹ اور اس کے بعد سہ رخی سیریز میں لچر کارکردگی کرنے والی مہندر سنگھ دھونی کی ٹیم میں عالمی کپ میں انوکھی تبدیلی دیکھنے کو ملی ہے اور اس نے ابھی تک اپنے تمام میچ جیتے ہیں،عالم یہ ہے کہ اب ہندوستان کو ورلڈ کپ کا سب سے مضبوط دعویدار مانا جانے لگا ہے۔ہندوستان نے ورلڈ کپ 2011کے چار میچوں کو ملا دینے سے ہر چار سال میں ہونے والے اس ٹورنامنٹ میں مسلسل نو جیت درج کر لی ہے اور اگر وہ کل زمبابوے کو بھی ہرا دیتا ہے تومکمل 10 جیت حاصل کرنے میں کامیاب رہے گا جو کوارٹر فائنل سے پہلے ٹیم کا حوصلہ بڑھانے کیلئے اہم ہو گا۔
مانا جا رہا ہے کہ آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں ورلڈ کپ کیلئے جو پچیں تیار کی گئی ہیں وہ بلے بازوں کے موافق ہیں لیکن ہندوستانی گیند بازوں نے غضب کا مظاہرہ کیا ہے۔انہوں نے اب تک پانچوں میچوں میں مخالف ٹیموں کو آؤٹ کیا ہے۔ہندوستانی گیند بازوں نے اپنے کپتان کی حکمت عملی پر اچھی طرح سے عمل کیا ہے اور انہوں نے مسلسل بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے۔محمدسمیع، روی چندرن اشون اور موہت شرما جیسے گیند بازوں نے پاکستان، جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز جیسی اچھی ٹیموں کے خلاف کسی بھی وقت ڈھلائی نہیں برتی جبکہ متحدہ عرب امارات اور آئرلینڈ کی ٹیموں کو ہندوستانی اٹیک پر چھاپ چھوڑنے میں دقت ہوئی۔سمیع نے ہندوستان کی طرف سے سب سے زیادہ 12وکٹ لئے ہیں لیکن یہ صحت مند بحث کا موضوع ہو سکتا ہے کہ سمیع اور اشون میں سے مخالف ٹیم پر کس نے زیادہ اثر ڈالا۔اشون نے بھی 11وکٹ لئے ہیں اور وہ سمیع سے زیادہ پیچھے نہیں ہیں لیکن تمل ناڈو کا یہ گیندباز بلے بازوں پر دباؤ بنانے میں ماہر ہے۔سمیع اور اشون کے ساتھ موہت کا کردار شاندار رہا ہے،وہ تیسرے فاسٹ بالر کے طور پر آتے ہیں اور ایک خاص سمت اور رفتار سے گیند بازی کرتے ہیں،یہاں تک کہ اب تک زیادہ کامیابی حاصل نہیں کر پانے والے امیش یادو اور روندر جڈیجہ نے بھی اپنا کام پوری سنجیدگی سے نبھایا ہے۔ٹورنامنٹ میں ہندوستان کی فیلڈنگ بھی اچھی رہی ہے۔ہندوستانیوں نے کچھ ظاہری رن آؤٹ کئے۔جہاں تک زمبابوے کا سوال ہے تو وہ برینڈن ٹیلر کو اچھی الوداعی دینے کی کوشش کرے گا جو ایلٹن چگبرا کے زخمی ہونے کی وجہ سے ٹیم کی قیادت کریں گے۔ٹیلر نے ورلڈ کپ کے بعد ریٹائرمنٹ لینے کا اعلان کر رکھا ہے،لگتا نہیں کہ زمبابوے کی ٹیم ہندوستان کیلئے کسی طرح کا خطرہ پیدا کرے گی لیکن وہ کچھ چیلنج دینے کے قابل ہے۔ٹیلر اور سین ولیمز دو ایسے بلے باز ہیں جو اچھا مظاہرہ کر رہے ہیں اور اگر یہ دونوں ہندوستانی گیند بازوں سے نمٹنے میں کامیاب رہتے ہیں تو میچ دلچسپ بن سکتا ہے۔

 

...


Advertisment

Advertisment