Today: Sunday, September, 23, 2018 Last Update: 12:24 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستان کے عالمی کپ جیتنے کا99فیصدیقین :مدن لال

 

گریٹر نوئیڈا، 09 مارچ (یو این آئی) عالمی کپ فاتح ٹیم کے رکن آل راؤنڈر مدن لال ہندوستانی ٹیم کے آسٹریلیا میں کارکردگی میں زبردست سدھار سے بے حد متاثر ہیں اور اب ان کا کہنا ہے کہ انہیں 99 فیصد یقین ہے کہ ہندوستان اپنا خطاب برقرار رکھے گا ۔مدن لال نے یہاں بلوچ سٹی میں اپنی کرکٹ اکیڈمی کا افتتاح کرنے کے بعد نامہ نگاروں سے کہا کہ ہندستانی ٹیم نے آسٹریلیا میں ٹیسٹ سیریز اور سہ رخی سیریز میں مایوس کن کارکردگی کے بعد زبردست واپسی کرتے ہوئے عالمی کپ میں جس طرح میچ جیتے ہیں اس نے مجھے بھی حیرت میں ڈال دیا ہے ۔مجھے امید نہیں تھی کہ ہندوستانی ٹیم اپنی کارکردگی میں اتنا سدھار کرسکے گی ۔سابق آل راؤنڈر اور سابق ہندستانی کوچ نے کھاکہ اس کارکردگی کے بعد اب میں یقین سے کہہ سکتا ہوں کہ ہندوستان 99 فیصد عالمی کپ جیتے گا ۔ایک فیصد کا معاملہ تب ہوگا جب ہندوستان کا دن واقعی خراب ہوگا ۔ہندستان کی کارکردگی میں سدھار کا کریڈٹ ٹیم کے ڈائریکٹر روی شاستری اور دیگر کوچنگ عملے کو جاتا ہے جو ٹیم کے ساتھ مسلسل محنت کر رہے ہیں ۔مدن لال نے کہا کہ ہندستانی ٹیم گزشتہ تین ماہ سے آسٹریلیا میں ہے ۔کھلاڑیوں کو وہاں کی کنڈیشنز کا بہتر تجربہ ہو گیا ہے ۔یہ بین الاقوامی کھلاڑی ہیں جنہیں زیادہ بتانے کی ضرورت نہیں ہے ۔یہ اپنی ذمہ داری بخوبی سمجھتے ہیں ۔کھلاڑیوں نے کھیل کے تمام چاروں شعبوں میں مسلسل اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور آپ ٹیم کی کارکردگی میں جو تبدیلی دیکھ رہے ہیں یہ سب اسی کا نتیجہ ہے ۔یہ پوچھنے پر کہ اس کی کارکردگی کا کریڈٹ وہ کوچ ڈنکن فلیچر اور ڈائریکٹر شاستری میں سے کسے دیتے ہیں، مدن لال نے کہا کہ کوچ اور ڈائریکٹر تمام ٹیم عملے کا ایک حصہ ہیں ۔کامیابی میں کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ ان کی بھی شراکت ہوتی ہے ۔ہندوستانی ٹیم گزشتہ کچھ سالوں میں اپنی بہترین کرکٹ اس وقت کھیل رہی ہے ۔ہندوستان کے ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنے گزشتہ مقابلے میں سخت جدوجہد کے بعد کامیابی حاصل کرنے کے بارے میں پوچھے جانے پر مدن لال نے کہا کہ میں اب بھی مانتا ہوں کہ یہ مظاہرہ اچھا ہوگا ۔کئی بار نزدیکی مقابلے بھی ہونا بہت ضروری ہوتے ہیں جس سے پوری ٹیم کے حوصلے کا امتحان ہوتاہے ۔انہوں نے کھاکہ اس میچ کا سب سے مثبت پہلو کپتان مہندر سنگھ دھونی کا وکٹ پر ٹکنا، رن بنانا اور ٹیم کو میچ جتانا تھا ۔پرتھ کی وکٹ پر مقابلہ آسان نہیں تھا اور ایسے میں ٹیم انڈیا نے یقیناًاچھا مظاہرہ کیا۔آسٹریلیا میں ہندوستانی ٹیم کے سپر اسٹار بلے باز وراٹ کوہلی کے ایک صحافی کے خلاف نازیبا زبان استعمال کرنے پر سختی سے مدن لال نے کہا کہ اس طرح کا برتاؤ وراٹ کو نہیں کرنا چاہیئے تھا ۔جب آپ ٹیسٹ ٹیم کے کپتان ہوں اور مستقبل میں ون ڈے کے کپتان بھی بننے جا رہے ہوں تو خود پر کنٹرول کرنا سیکھنا چاہیے ۔اسے اس طرح کا سلوک بالکل بھی نہیں کرنا چاہیے تھا ۔ مجھے یقین ہے کہ اس حادثے سے وہ سبق سیکھے گا ۔

 

...


Advertisment

Advertisment