Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 10:43 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ڈیولیرس کو روکنا آئرلینڈ کیلئے ہوگابڑا چیلنج


کینبرا 0،2 مارچ (یو این آئی) جائنٹ کلر کے نام سے مشہور آئرلینڈ کی ٹیم کے لئے جنوبی افریقہ کے خلاف منگل کو ھونے والے عالمی کپ گروپ بی کے میچ میں اے بی ڈیولیرس کو روکنا ایک بڑا چیلنج ہوگا۔عالمی کپ کی ایسوسی ایٹ ٹیم آئرلینڈ اپنے ابتدائی دونوں میچ جیت کر پورے جوش میں نظر آ رہی ہے ۔پہلے میچ میں ویسٹ انڈیز جیسی ٹیم کو شکست دے کر بڑا اپ سیٹ کرنے والی آئرلینڈ کی ٹیم میں دوسرے میچ میں متحدہ عرب امارات کو بھی ہرا دیا تھا۔وہیں جنوبی افریقہ نے عالمی کپ میں ابھی تک کھیلے گئے اپنے تین میں سے دو مقابلے جیت لئے ہیں ۔ پہلے میچ میں زمبابوے کو شکست دینے کے بعد ٹیم دوسرے میچ میں ہندستان کے ہاتھوں پٹ گئی تھی۔لیکن تیسرے میچ میں کپتان اے بی ڈیولیرس کی طوفاني 162 رنز کی اننگز کی بدولت ویسٹ انڈیز کو 257 رنز کے بڑے فرق سے شکست دینے کے بعد ٹیم پورے فارم میں آ گئی ہے ۔اس کے باوجود جنوبی افریقہ کو آئرلینڈ سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے جو کہ میچ کا پانسہ پلٹ کر بڑا اپ سیٹ کرنے کے اہل ہے ۔
ویسٹ انڈیز کے خلاف گزشتہ میچ میں 408 رنز بنانے والی اور کپتان ڈیولیرس کے علاوہ ہاشم آملہ، کوئنٹن ڈی کاک،فاف ڈو پلیسس، ریلي روسیو اور ڈیوڈ ملر جیسے سرکردہ بلے بازوں سے آراستہ جنوبی افریقی ٹیم منگل کو کینبرا کے اوول میدان میں تابڑ توڑ بلے بازی کرکے پھر سے بڑا اسکور بنانے کے مقصد سے اترے گی۔ٹیم کے لئے خاص بات ڈیولیرس کا اپنے فارم میں واپس آنا ہے ۔ویسٹ انڈیز کے خلاف ان کی 66 گیندوں میں ریکارڈ 162 رنز کی بدولت ٹیم کو ہندستان کے خلاف ملی شکست سے باہر نکلکر واپس توانائی حاصل کرنے میں یقینی طور پر مدد ملی ہوگی۔جنوبی افریقہ کی تیز گیند بازی کی کمان ڈیل اسٹین، مورنے مورکل اور کائل ایبوٹ کے ہاتھوں میں ھوگي وھیں گزشتہ میچ میں پانچ وکٹ لینے والے لیگ اسپنر عمران طاہر اسپن سے آئرش بلے بازی خیمے میں تہلکہ مچائیں گے ۔وہیں دوسری طرف نسبتا کمزور مانی جا رہی آئرلینڈ کی طرف سے ویسٹ انڈیز کے خلاف لاجواب نصف سنچری اننگ کھیلنے والے پال اسٹرلنگ، ایڈ جوائس اور نیل او برائن دوبارہ کرشمائی بلے بازی کر کے ٹیم کو مسلسل تیسری جیت دلانے کی کوشش کریں گے وھیں اوپننگ کرنے والے کپتان ولیم پورٹرفیلڈ بھی افریقی حملے سے نمٹنے کی پوری کوشش کریں گے ۔آئرلینڈ کی گیند بازی کا مکمل انحصار جان مونی، میکس سورنسن اور جارج ڈاکریل پر رہے گا۔ وہیں آل راؤنڈر کیون او برائن گیند اور بلے سے دوہری ذمہ داری ادا کرنے کی کوشش کریں گے ۔انہوں نے متحدہ عرب امارات کے خلاف میچ میں 50 رنز کی اننگز کھیلی تھی۔جنوبی افریقہ اور آئرلینڈ کی ٹیمیں گروپ بی میں بالترتیب دوسرے اور تیسرے نمبر پر بنی ہوئی ہیں ۔ ایک طرف جہاں جنوبی افریقہ میچ جیت کر کوارٹر فائنل میں پہنچنے کے امکانات کو بڑھانے کی کوشش کرے گا تو وہیں دوسری طرف آئرلینڈ اگر ہار بھی گیا تو رن ریٹ کو اچھا رکھنے کی کوشش کرے گا۔
آئرلینڈ کے کپتان ولیم پورٹرفیلڈ نے میچ سے پہلے ڈیولیرس کے بارے میں کہا کہ آپ دن بھر بیٹھ کر ان کے خلاف حکمت عملی تشکیل دے سکتے ہیں لیکن صرف ایک کھلاڑی کے لئے ہم اپنے قدرتی طریقے کو نہیں بدل سکتے ہیں۔ہمیں اپنی طرف سے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔دونوں ٹیموں کے درمیان اب تک تین بار مقابلہ ہوا ہے جس میں جنوبی افریقہ کو تمام میچوں میں کامیابی حاصل ہوئی ہے ۔میچ کے لیے دونوں ٹیموں میں کوءي تبدیلی نہیں کی گئی ہے اور ممکنہ الیون اس طرح سے ہے :
جنوبی افریقہ :ہاشم آملہ، کوئنٹن ڈی کاک، فاف ڈو پلیسس، رولي روسیو، اے بی ڈیولیرس (کپتان)، ڈیوڈ ملر، فرحان بہارالدین ، وائن پارنیل، کائل ایبوٹ، ڈیل اسٹین، مورنے مورکل، عمران طاہر۔
آئرلینڈ:ولیم پورٹرفیلڈ (کپتان)، ایڈ جوائس، نیل او برائن، اینڈی بالبرنی، گیری ولسن، کیون او برائن، جان مونی، ایلیکس کساک، میکس سورنسن، جارج ڈاکریل۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment