Today: Wednesday, September, 26, 2018 Last Update: 09:57 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

دلشان اور سنگاکارا کی سنچریوں نے نکالا بنگلہ دیش کا دم


میلبورن، 26 فروری (یو این آئی )اوپنر دلشان (ناٹ آؤٹ 161) اور کمار سنگاکارا (ناٹ آؤٹ105) کے زوردار سنچریوں سے سری لنکا نے بنگلہ دیش کو جمعرات کو 92 رنز سے شکست دیکرعالمی کپ کے پول اے میں اپنی دوسری جیت درج کر لی ۔سری لنکا نے 50 اوور میں ایک وکٹ پر 332 رن کا بڑا اسکور بنانے کے بعد بنگلہ دیش کے چیلنج کو 47 اوور میں 240 رن پر نمٹا دیا ۔بنگلہ دیش کو اس طرح ٹورنامنٹ میں تین میچوں میں اپنی پہلی شکست کا سامنا کرنا پڑا بنگلہ دیش کے لیے سری لنکا کا اسکور پہاڑ جیسا ثابت ہوا اور اپنے تین وکٹ 41 رن پرگنوانے کے بعد بنگلہ دیش کی ٹیم میدان پر ٹکے رہنے کی جدوجہد ہی کرتی رہی ۔تیز گیند بازلست ملنگا نے 35 رن پر تین وکٹ اور سرنگا لکمل نے 49 رن پر دو وکٹ لئے ۔اصلی کمال کیا دلشان نے جنہوں نے آٹھ اوور میں 35 رن پر دو وکٹ لیے اور ساتھ ہی اپنے کریئر کی بہترین اننگز اور آل راؤنڈ کھیل سے مین آف دی میچ کا ایوارڈلے اڑے ۔دلشان کے ساتھ سنچری بنانے والے وکٹ کیپر سنگاکارا نے وکٹ کے پیچھے تین شکار کرکے عالمی کپ میں اپنے شکار کی تعداد 50 پہنچا دی ۔وہ آسٹریلیا کے ایڈم گلکرسٹ کے بعد یہ کامیابی حاصل کرنے والے دوسرے وکٹ کیپر بن گئے ۔بنگلہ دیش کی اننگز میں آٹھویں نمبر کے بلے باز شبیر رحمان نے 62 گیندوں میں سات چوکوں کی مدد سے سب سے زیادہ 53 رن بنائے اور اپنی ٹیم کی شکست کا فرق کچھ کم کیا ۔شکیب الحسن نے 46، مشفق الرحیم نے 36، انعام الحق نے 29، محموداللہ نے 28 اور سرکار نے 25 رنزبنائے ۔ بنگلہ دیش کا کوئی بھی بلے باز اپنی اچھی شروعات کو بڑے اسکور میں نہیں بدل سکا ۔اس سے پہلے دلشان (ناٹ آؤٹ 161) اور سابق کپتان سنگاکارا (ناٹ آؤٹ 105) کی زبردست سنچریوں اور ان کے درمیان 210 رن کی ناٹ آؤٹ ساجھے داری کی بدولت سری لنکا نے ایک وکٹ پر332 رن کا بڑا اسکور بنا کر بنگلہ دیش کو پہلے ہی دباؤ میں ڈال دیا تھا ۔دلشان نے اپنے کریئر کا سب سے بہترین اسکور بناتے ہوئے 146 گیندوں کی اننگز میں 22 چوکے اڑایے ۔ان کی یہ مجموعی 21 ویں سنچری اور بنگلہ دیش کے خلاف چوتھی سنچری تھی۔ دلشان نے عالمی کپ میں کسی سری لنکائی بلے باز کی بہترین اننگز کا بھی نیا ریکارڈ بنایا ۔اس سے پہلے یہ ریکارڈ اروند ڈیسلوا کے نام تھا جنہوں نے 1996 میں کینیا کے خلاف 145 رن بنائے تھے ۔سنگاکارا نے اپنے 400 ویں ون ڈے کا جشن اپنے 22 ویں سنچری، کیریئر کی سب سے تیز سنچری اوروکٹ کے پیچھے تین شکار کے ساتھ منایا ۔سنگاکارا نے 76 گیندوں کی اپنی اننگز میں 13 چوکے اورایک چھکا لگایا ۔سنگاکارا نے اس سے پہلے گزشتہ سال ایشیا کپ میں ہندستان کے خلاف 83 گیندوں میں سنچری بنائی تھی۔ سنگاکارا کے اب وکٹ کے پیچھے 51 شکار ہو گئے ہیں اور وہ ایڈم گلکرسٹ کے 52 شکار کا ریکارڈ توڑنے سے دو قدم دور رہ گئے ہیں ۔ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرنے اترے سری لنکا کو لاھرو ترمانے (52) اور دلشان نے پہلے وکٹ کے لیے 24.3 اوور میں 122 رنز جوڑ کر شاندار شروعات کی ۔اس کے بعددلشان اور سنگاکارا نے دوسرے وکٹ کی ناٹ آؤٹ ساجھے داری میں 210 رنز بناڈالے ۔سری لنکا نے بنگلہ دیش کے خراب فیلڈنگ کا پورا فائدہ اٹھایا ۔ترمانے کو تین بار زندگی ملی۔ سنگاکارا کو ان کے 60 رن کے ذاتی اسکور پر ایک زندگی ملی۔فیلڈنگ میں بھی بنگلہ دیشی کھلاڑیوں کی کارکردگی خراب رہی جس کا سری لنکائی بلے بازوں نے پورا فائدہ اٹھایا۔دلشان نے 41 ویں اوور میں دو رن لے کر اپنی سنچری مکمل کی جبکہ سنگاکارا کو اپنی سنچری کے لیے آخری اوور کی پہلی گیند تک انتظار کرنا پڑا ۔انہوں نے ایک رن لے کراپنی سنچری مکمل کی ۔سری لنکا نے آخری 10 اوورز میں 115 رنز بناڈالے ۔دلشان نے اپنے کیریئر میں تیسری بار 150 کا اسکور پار کرتے ہوئے اپنا بہترین سکور بنایا ۔بنگلہ دیش کی جانب سے روبیل حسین 62 رنز پر ایک وکٹ لے کر واحد کامیاب بالر رہے ۔تسکین احمد نے 10 اوور میں 82 رن، مشرف مرتضی نے 10 اوور میں 53 رن اور شکیب الحسن نے 10 اوور میں 55 رنز لٹایے ۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment