Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 09:48 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

آخری اووروں میں وکٹوں کے زوال کو روکنے کی کوشش میں لگی ٹیم انڈیا


پرتھ26فروری(آئی این ایس انڈیا)ہندوستانی کرکٹ ٹیم نے اگرچہ ابھی تک عالمی کپ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہو لیکن ناک آؤٹ مرحلے سے پہلے کپتان مہندر سنگھ دھونی اور ٹیم مینجمنٹ آخری اووروں میں وکٹوں کے زوال کی کمزوری سے نکلنا چاہیں گے۔پاکستان کے خلاف ہندوستان نے 45.2اوور میں دو وکٹ پر 273رن بنا لئے تھے لیکن 49.2اوور تک اسکور7 وکٹ پر 296رنز ہو گیا۔ہندوستان نے چار اوورز میں 23رن کے اندر اندر پانچ وکٹ گنوا دئے۔جنوبی افریقہ کے خلاف ہندوستان نے 43 اوور میں دو وکٹ پر 261رن بنا لئے تھے لیکن 48.5اوور میں اسکور7 وکٹ پر 302رنز ہو گیا۔آخر میں کل اسکور سات وکٹ پر 307رنز رہا۔ہندوستان نے 5.1اوور میں 41رن کے اندر اندر پانچ وکٹ گوائے اور دونوں میچوں میں دھونی کی شراکت 18.18رنز کا رہی۔جنوبی افریقہ کو 130رنز سے شکست دینے کے بعد دھونی نے اس پر اپنے طریقے سے صفائی دی۔ان سے پوچھا گیا تھا کہ کیا نچلے آرڈر کے بلے باز چوکے چھکے نہیں لگا پا رہے ہیں۔انہوں نے کہا تھا کہ یہ مشکل ہے، صرف ہم ہی نہیں بلکہ باقی ٹیموں کو بھی پریشانی آ رہی ہے،کریز پر جمنے کے بعد رفتار اور اچھال سے واقف ہو چکے بلے باز ہی رنز بنا سکتے ہیں۔دھونی نے نچلے بلے بازوں کا دفاع کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر بہتر بلے بازوں کو رفتار اور اچھال کا سامنا کرنے میں دقت آ رہی ہے تو ان کے بعد آنے والے کھلاڑیوں کی ملامت ٹھیک نہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر بلے باز کریز پر جمع ہوا ہے تو آپ اسے شاٹس لگانے کیلئے کہہ سکتے ہیں،جیسے کہ جب میں جڈیجہ کے ساتھ کریز پر تھا تو ہم تیزی سے رن بنا رہے تھے۔اشون یا سمیع کیلئے 8، 9یا 10رنز فی اوور کے اوسط سے رن بنانا مشکل ہے۔گروپ لیگ مرحلے میں اب ویسٹ انڈیز سے بڑا مقابلہ رہ گیا ہے اور ہندوستانی کپتان نے امید ظاہر کی کہ اس وقت تک یہ مسئلہ حل ہوجائے گا۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment