Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 06:11 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

وراٹ اور ڈیولیئرس کے دھماکے پر رہیں گی نگاہیں

 

میلبورن، 19 فروری (یو این آئی ) ہندستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان اتوارکو ہونے والے ورلڈ کپ مقابلے سے پہلے تمام بحث اس بات پر سمٹ گئی ہے کہ دونوں ٹیموں کے دو دھماکہ خیز بلے بازوں وراٹ کوہلی اور اے بی ڈیولیرس میں سے کس کا بلا زیادہ دھماکے کرے گا۔آئی سی سی کی عالمی ون ڈے رینکنگ میں ڈیولیرس اس وقت نمبرایک بلے باز ہیں جبکہ وراٹ تیسرے نمبرپر ہیں۔دونوں کو موجودہ وقت میں دنیا کا سب سے خطرناک بلے باز مانا جاتا ہے اور دونوں ٹیموں کی کامیابی کا دار و مدار ان بلے بازوں پر منحصر کرے گا۔وراٹ نے عالمی کپ میں تیز طرار آغاز کرتے ہوئے اپنی 22 ویں سنچری بناکر ہندوستان کو روایتی حریف پاکستان کے خلاف بہترین جیت دلائی تھی۔ڈیولیرس نے اگرچہ زمبابوے کے خلاف 25 رنزبنائے تھے لیکن ان کے نام ون ڈے میں سب سے تیز سنچری بنانے کاریکارڈ درج ہے جو انہوں نے جنوری میں ویسٹ انڈیز کے خلاف جوہانسبرگ میں صرف 31 گیندوں میں بنایاتھا۔کیریئرز اعداد و شمار کے لحاظ سے بھی دونوں بلے بازوں میں کافی مماثلت ہیں۔ڈیولیرس نے 180 میچوں میں 51.97 کے اوسط اور 97.03کے اسٹرائک ریٹ سے 7484 رنز بنائے ہیں جس میں 19 سنچری اور 43نصف سنچری شامل ہیں۔دوسری طرف وراٹ نے 151 میچوں میں 51.95 کے اوسط اور 90.08 کے اسٹرائک ریٹ سے 6339 رنز بنائے ہیں جس میں 22سنچری اور 33 نصف سنچری شامل ہیں۔وراٹ کا گھریلو میچوں کا اوسط 55.29،غیر ملکی زمین پراوسط 47.88 اور غیر جانبدار مقام پر اوسط 58.35 ہے ۔اسی ترتیب میں ڈیولیرس کا اوسط بالترتیب 50.74،58.91 اور 43.47 ہے ۔ہندوستان کی جیت میں وراٹ کا اوسط انتہائی متاثر کن 69.35 ہے جبکہ جنوبی افریقہ کی جیت میں ڈیولیرس کا 63.41 اوسط ہے ۔ہندوستان کی شکست میں وراٹ کا اوسط 33.33 اور اپنی ٹیم کی شکست میں ڈیولیرس کا اوسط 34.50 ہے ۔ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے وراٹ کا اوسط 64.26 اورڈیولیرس کا اوسط 57.15 آتا ہے ۔ان اعداد و شمار سے یہی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ دونوں ٹیم اپنی کامیابی کے لئے ان دوبڑے بلے بازوں پر کتنا انحصار کرتی ہیں۔سنچریوں کی بنیاد پر دیکھا جائے تو وراٹ اپنے جنوبی افریقی حریف سے کہیں آگے نظر آتے ہیں۔ دنیا کی ٹاپ آٹھ ٹیموں کے خلاف وراٹ نے 17 سنچری بنائی ہیں جبکہ ڈیولیرس نے 14 سنچری بنائی ہیں۔وراٹ نے ملکی اور غیر ملکی زمین پر نونو سنچری بنائی ہیں۔ڈیولیرس کے لئے یہ بالترتیب چھ اور آٹھ کا ہے ۔اتوار کے اس طویل انتظار والے مقابلے میں گزشتہ چمپئن ہندستان کوکوہلی سے وراٹ دھماکے کا انتظار رہے گا تاکہ ہندستان کے عالمی کپ میں جنوبی افریقہ کے خلاف شکست کا تعطل توڑ سکے ۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment