Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 01:58 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

ہندوستان کواب اپنے پٹاخے چھوڑنے ہوں گے

 

جنوبی افریقہ کے خلاف ہونے والے مقابلے کیلئے دکھانی ہوگی طاقت ،عالمی کپ میں اب جنوبی افریقہ سے اپنے تینوں مقابلو ں میں ٹیم انڈیا کوکرنا پڑا ہے شکست کا سامنا
میلبورن، 18فروری (یو این آئی) ہندوستان کے ہاتھوں عالمی کپ میں مسلسل چھٹی شکست کے بعد اپنے روایتی حریف پر پہلی فتح حاصل کرکے پٹاخے پھوڑنے کا پاکستان کا ارمان دل ہی میں رہ گیا تھا لیکن اب ہندوستان کو بھی جنوبی افریقہ کے خلاف اپنے پٹاخے چھوڑنے کی انتظام کرلینے ہوں گے ۔موجودہ چمپئن ہندوستان اور ‘چوکرس ’ جنوبی افریقہ کے درمیان اتوار کو عالمی کپ کا ایک اور سنسنی خیز اور اعصاب شکن مقابلہ ہونے جارہا ہے ۔ ہندوستان نے اپنے پہلے میچ میں پاکستان کو 76رن سے ہرایا تھا جب کہ جنوبی افریقہ نے زمبابوے کو 62رن سے شکست دی تھی۔ہندوستان عالمی کپ میں اس سے قبل 1992 ، 1999 اور 2011 میں جنوبی افریقہ سے تین بار کھیلا ہے اور تینوں بار اسے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ ہندوستان کو جنوبی افریقہ کے ساتھ عالمی کپ میں اپنے چوتھے مقابلے میں یہ تعطل توڑنا ہوگا۔جنوبی افریقہ بین الاقوامی کرکٹ میں واپسی کے بعداسے 1992 میں آسٹریلیا نیوزی لینڈ میں منعقد ہوئے عالمی کپ میں کھیلنے کا موقع ملا اور ایڈیلیڈ میں 15مارچ کو کھیلے گئے اس میچ میں بارش کے سبب اووروں کی تعداد گھٹاکر 30-30 کردی گئی۔ ہندوستان نے کپتان محمد اظہرالدین کے 79 اور کپل دیو کے 42 رنوں کی اننگز کی مدد سے چھ وکٹ پر 180 رن بنائے مگر جنوبی افریقہ نے پیٹرکرسٹن (84)اور اینڈریو ہڈسن (53) کی نصف سنچریوں سے 29.1 اوور میں چار وکٹ پر 181ر ن بناکر میچ جیت لیا۔دونوں ٹیمیں 1999 کے انگلینڈ میں ہوئے عالمی کپ میں دوسری بار ایک دوسرے کے خلاف صف آرا ہوئی اور اس میچ میں ہندوستان نے سوربھ گانگولی (97) اور راہل دراوڈ(54) کی شاندار نصف سنچریوں کی بدولت 50اوور میں 253رن کا اسکور کھڑاکیا لیکن عظیم ترین اور کرشمہ ساز آل راؤنڈر جیکس کیلس کی 96 ررن کی اننگز نے ہندوستان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا اور جنوبی افریقہ نے 47.2 اوور میں چھ وکٹ پر 254 رن بناکر جیت اپنے نام کرلی۔ 2011 میں ہوئے پچھلے عالمی کپ میں دونوں ٹیمیں تیسری بار ایک دوسرے کے مقابل نظر آئیں اور یہ سنسنی خیز مقابلہ بھی جنوبی افریقہ نے دو گیندیں باقی رہتے ہوئے تین وکٹ سے جیتا۔ہندوستان نے ماسٹر بلاسٹر سچن تیندولکر (111) کے سنچری اور وریندر سہواگ (73) اور گوتم گمبھیر (69) کی نصف سنچریوں کی مدد سے 48.4 اوور میں 296رن بنائے لیکن اس بار بھی کیلس ہندوستان کے آڑے آگئے ۔ کیلس کے 60، ہاشم آملہ کے 61 اور اے بی ڈیویلیئر س کے 62 رنوں کی بدولت جنوبی افریقہ نے 49.4 اوور میں سات وکٹ پر 300 رن بناکر ہندوستان کے خلاف عالمی کپ میں جیت کی ہیٹ ٹرک مکمل کی۔چوتھے مقابلے میں ہندوستان کو سچن تیندولکر کی خدمات حاصل نہیں ہے جب کہ عظیم آل راؤنڈر کیلس بھی جنوبی افریقہ کی ٹیم کا حصہ نہیں ہے لیکن دونوں ٹیموں کے پاس وراٹ کوہلی اور ڈیویلیئر کے شکل میں دو ایسے دھماکہ خیز بلے باز ہیں جن کے بلے سے چھوٹتی ہوئی آتش بازی میچ کا رخ بدل سکتی ہے ۔ اب یہ دیکھنا ہے کہ ہندوستانی شائقین کو پٹاخے چھوڑ کر خوشیاں منانے کا موقع ملتا ہے یا پھر انہیں جنوبی افریقہ کے خلاف عالمی کپ میں جیت کا انتظار کرنا ہوگا۔
 

 

...


Advertisment

Advertisment