Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 01:33 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

SPORTS NEWS   

عالمی کپ میں کوہلی اور بھونیشور ٹاپ رینکنگ والے ہندوستانی کھلاڑی


ایڈیلیڈ12فروری(آئی این ایس انڈیا)وراٹ کوہلی اور بھونیشور کمار بالترتیب تیسرے اور13ویں مقام کے ساتھ آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ کے11ویں ٹورنامنٹ کا آغاز ٹاپ ہندوستانی بلے باز اور بالر کے طور پر کریں گے جبکہ دفاعی چمپئن ٹیم انڈیا دنیا کی دوسرے نمبر کی ٹیم کے طور پر اترے گی۔ٹاپ 25بلے بازوں میں ہندوستان کے شیکھر دھون(7)، مہندر سنگھ دھونی(9)، روہت شرما(13)اور سریش رینا(25)کو جگہ ملی ہے۔گیندبازوں میں ٹاپ 25میں بھونیشور کے علاوہ روندر جڈیجہ(14)، روی چندرن اشون(21)اور محمد سمیع(24) شامل ہیں۔دنیا کی نمبر ایک ٹیم آسٹریلیا عالمی کپ میں پانچویں خطاب کی امید کے ساتھ اتریگا جبکہ ٹورنامنٹ کے بعد ٹیم درجہ بندی میں کافی اتار چڑھاؤ دیکھنے کو مل سکتا ہے کیونکہ ٹاپ 8 ٹیموں کے درمیان صرف 26ریٹنگ پوائنٹس کا فرق ہے۔آسٹریلیا نے دفاعی چمپئن ہندوستان پر 6پوائنٹس کی برتری بنا رکھی ہے۔ہندوستان کو اپنے پہلے میچ میں یہاں اوول میں دیرینہ حریف پاکستان کا سامنا کرنا ہے۔دلچسپ حقیقت یہ ہے کہ آسٹریلیا نے برصغیر میں ہوئے 2011کے عالمی کپ کا آغاز بھی نمبر ایک ٹیم کے طور پر کیا تھا لیکن خطاب مہندر سنگھ دھونی کی قیادت والی ہندوستانی ٹیم نے ممبئی میں جیتا تھا،تب بھی ہندوستان نے ٹورنامنٹ کا آغاز آسٹریلیا سے 12پوائنٹس پیچھے دوسرے مقام سے کیا تھا۔آسٹریلیا کو ٹورنامنٹ کے پہلے دن میلبورن میں دیرینہ حریف انگلینڈ کا سامنا کرنا ہے جو فی الحال پانچویں نمبر پر ہے۔ ٹورنامنٹ کا شریک میزبان نیوزی لینڈ چھٹے مقام پر ہیں اور وہ اپنی مہم کا آغاز سابق چمپئن اور دنیا کی چوتھے نمبر کی ٹیم سری لنکا کے خلاف کرے گا۔ان دونوں ٹیموں کے درمیان صرف5 ریٹنگ پوائنٹس کا فرق ہے۔اتوار کو ہیملٹن میں دنیا کی تیسرے نمبر کی ٹیم جنوبی افریقہ کو زمبابوے کا سامنا کرنا ہے جو 10ویں نمبر کی ٹیم ہے۔ان دونوں ٹیموں کے درمیان 55پوائنٹس کا فرق ہے۔دو بار کا سابق چمپئن اور آٹھویں نمبر کی ٹیم ویسٹ انڈیز اپنی مہم کا آغاز نیلسن میں 12ویں نمبر کی ٹیم آئرلینڈ کے خلاف کرے گا۔آسٹریلیا کو اس بار اپنی سرزمین پر کھیلنے کا فائدہ ملے گا۔اس کے علاوہ ٹیم جیت کی لے میں بھی ہے اور گزشتہ سال جنوری سے اس نے 17میچوں میں جیت درج کی جبکہ پانچ میچ میں ٹیم ہاری۔اس کے علاوہ ایک میچ بے نتیجہ رہا۔یہ دبدبہ اگرچہ کھلاڑیوں کی درجہ بندی میں نظر نہیں آتا جس میں جارج بیلی(11)، آرون فنچ(12)، گلین میکسویل(17)، شین واٹسن(19)اور جیمزفاکنر(22)کے طور پر آسٹریلیا کے پانچ بلے باز اور مشیل جانسن اور مشیل ا سٹارک(7)کے طورپر ٹیم کے صرف دو گیند بازٹاپ 25میں شامل ہیں۔ آسٹریلیا کے کپتان مائیکل کلارک (27)، ڈیوڈوارنر(28) اور اسٹیون اسمتھ(29)کو ٹاپ 25میں جگہ نہیں ملی ہے۔جنوبی افریقہ کے کپتان اے بی ڈویلیرس بلے بازی کی درجہ بندی میں ٹاپ پر چل رہے ہیں جبکہ ان کے بعد ہاشم آملہ کا نمبر آتا ہے۔کونٹن ڈی کاک(10)اور فاف ڈوپلیسس(20)کو بھی ٹاپ 25میں جگہ ملی ہے۔ڈیل اسٹین تیسرے مقام کے ساتھ ٹورنامنٹ کی شروعات جنوبی افریقہ کے ٹاپ گیندباز کے طور پر کریں گے۔مورنے مورکل(10) اور عمران طاہر (11)بھی ٹاپ 25میں شامل ہیں۔گزشتہ دو ماہ میں 14میں سے نو ون ڈے جیتنے والے نیوزی لینڈ کے کین ولیمسن (6)اور راس ٹیلر (8) بلے بازوں کی فہرست میں ٹاپ 10میں جبکہ کائل ملس (20)اور ڈینل ویٹوری(23) گیندبازوں کی فہرست میں ٹاپ 25میں شامل ہیں۔چار کوالیفائنگ ٹیموں میں آئرلینڈ کے پال ا سٹرلنگ ٹورنامنٹ کا آغاز 36ویں مقام کے ساتھ ٹاپ بلے باز کے طور پر کریں گے۔افغانستان کے کپتان محمد نبی بالترتیب 31ویں اور 8ویں مقام کے ساتھ ٹاپ گیندباز اور آل راؤنڈر ہیں۔



...


Advertisment

Advertisment