Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 02:40 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

آٹھ لڑکیوں سمیت 24بچے قومی بہادری ایوارڈ سے سرفراز


نئی دہلی،17جنوری (یو این آئی) ملک کے مختلف حصوں سے آٹھ لڑکیوں سمیت کل 24بچوں کو بہادری کی مثال پیش کرنے کے لیے سال 2014کے قومی بہادری ایوارڈ کے لیے منتخب کیا گیا ہے جنہیں 24جنوری کو وزیر اعظم نریندر مودی اعزاز سے نوازیں گے ۔انڈین کونسل فار چائلڈ ویلفیر (آئی سی سی ڈبلیو) کی صدر گیتاسدھارتھ نے آج یہاں ان بچوں کو میڈیا سے روبرو کرایا۔ انھوں نے بتایا کہ 24میں سے چھ بچوں کو خصوصی اعزاز اور 18بچوں کو عمومی ایوارڈ سے نواز ا جائے گا۔ ان میں سے چار بچوں کو بعد از مرگ یہ ایوارڈ دیا جائے گا۔تیزاب حملے کی متاثرہ اترپردیش کی 16سالہ ریشم فاطمہ کو اعلی بھارت اعزاز سے نوازا جائے گا۔ وہیں آسام کی 13سالہ گنجن شرما کو گیتا چوپڑا اعزاز اور اترپردیش کے 16سالہ دیویش کمار کو سنجے چوپڑا اعزاز دیا جائے گا۔اروناچل کے 13سالہ رومو موتی ،اترپردیش کی ریا چودھری اور اترکھنڈ کی مونیکا کو بعد ازمرگ باپو گیادھانی اعزاز سے نوازا جائے گا۔اس کے علاوہ گورو کمار بھارتی(اترپردیش) لابھانشو(اتر اکھنڈ) مون بینی ایجنگ(ناگالینڈ) میسک ریمناللنگاکا (میزورم ) اسٹیوینسن لارینیانگ (میگھالیہ) ریپا دس(تریپورا) بلرام ڈنسینا (چھتیس گڑھ) راجدیپ داس (جھارکھنڈ) ساہنیش آر(کرناٹک) اشونی بنڈو اگھڈے (مہاراشٹر) جیل جیتیندر مراٹھے ہیرل، جیتو بھائی ہلپتی گورو بھارتی بعد ازمرگ (سبھی گجرات) برین سن سنگھ ،تولدیوشرما(دونوں منی پور) اور انجت پی ، عاقل محمد ، این کے متھن، پی پی(سبھی کیرلا) کو جان کی بازی لگاکر بہادری کا مظاہرہ کرنے کے لیے ایوارڈ سے نوازا جائے گا۔اترپردیش کے لکھنؤکی ریشم کے اوپر اس کے رشتے کے ماموں نے گذشتہ سال ایک فروری کو شادی کی تجویز نامنظور کرنے کی وجہ سے تیزاب پھینک دیا تھا جس سے ان کا چہرہ ، سر اور ہاتھ بری طرح جھلس گیا۔یو این آئی سے بات چیت میں ریشم نے لڑکیوں کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ لڑکیوں کو اپنی حفاظت کی ذمہ داری خود اٹھانی ہوگی اور بغیر کسی دباؤ میں آئے ہوئے غلط چیزوں کو نہ کہنے کی عادت ڈالنی ہوگی۔ریشم نے زندگی میں بڑی ہوکر سول سروسز میں جانے کا ارادہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ میں سماج میں تبدیلی لانا چاہتی ہوں۔ اور لڑکیوں کے تئیں لوگوں کا نظریہ بدلنا چاہتی ہوں۔ اس کے لیے ہاتھوں میں طاقت کی ضرورت ہو گی جس کے لیے میں آئی اے ایس بننا چاہتی ہوں۔اسکول بس میں سوار اپنے دوستوں کو اغوا کاروں کے چنگل سے آزاد کرانے والی آسام کی گنجن شرما اور خاتون کی چین کھینچ کر بھاگ رہے بدمعاشوں کو گولی لگنے کے بعد دبوچنے والے دیویش کمار نے بھی اپنی بہادری کا مظاہرہ کیا۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment