Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 11:01 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

دہلی کی 40سیٹوں پر لڑے گی شیو سینا


پارٹی نے کہا کہ’ ہمیں اس کی فکر نہیں ہے کہ بی جے پی کا کیا ہوگا‘، اگر وہ چاہتے ہیں کہ ہم نہ لڑیں تو 9سیٹوں پر بی جے پی ہمیں حمایت دے
ممبئی17 جنوری (ایجنسیاں )دہلی کے دنگل میں بی جے پی کیلئے بری خبر اس کے اتحادی سے آ رہی ہے، شیوسینا دہلی اسمبلی انتخابات لڑنے کا من بنا رہی ہے۔پارٹی سربراہ ادھو ٹھاکرے نے ممبئی میں کہا کہ شیوسینا دہلی اسمبلی کے انتخابات میں اپنے امیدوار اتار سکتی ہے۔ماتوشری میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے ادھو نے کہا ہم دہلی اسمبلی انتخابات لڑنے کے بارے میں سوچ رہے ہیں، اس بارے میں حتمی فیصلہ جلد ہی لیا جائے گا۔ہمارے پاس وہاں اچھے کارکن ہیں، ان کے بارے میں سوچ کر کس کو کس سیٹ سے لڑوانا ہے اس بارے میں فیصلہ لیا جائے گا، قابل امیدواروں کو میدان میں اتارا جائے گا۔اگرچہ اس بارے میں انتخابات سے پہلے کسی پارٹی کے ساتھ اتحاد کے بارے میں کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔خبروں کے مطابق شیوسینا کی دہلی یونٹ پہلے ہی شیوسینا کے10امیدواروں کی فہرست کا اعلان کر چکی ہے۔اب ادھو کے اس اعلان سے پارٹی کے امیدواروں کو انتخابات میں پارٹی کے میدوار کے لئے پارٹی کا اے اوربی فارم ملنے کا راستہ بھی صاف ہو گیا ہے۔دہلی انتخابات میں شیوسینا مشتعل ہندوتو کے مسئلے کو اٹھا کر بی جے پی کے لیے پریشانی کھڑی کر سکتی ہے۔کیونکہ اگر کچھ ووٹ بھی شیوسینا کے کھاتے میں گئے تو یقینی طور پر یہ ووٹ بی جے پی کا ہی کٹے گا۔اگرچہ شیوسینا کے الیکشن لڑنے کے سوال سے پہلے سب سے بڑا تذبذب اسی بات پر ہے کہ کیا دہلی انتخابات میں شیوسینا پارٹی سربراہ ادھو ٹھاکرے، انتخابی مہم کے لئے جائیں گے۔فی الحال شیوسینا کے 18رہنما اور مہاراشٹر میں 63ممبران اسمبلی ہیں، پارٹی دہلی کے دنگل میں تشہیر کے لئے اپنے تمام رہنماؤں کو میدان میں اتار سکتی ہے۔ویسے شیوسینا نے یوپی کا الیکشن بھی لڑا تھا، لیکن اپنے اسٹار پرچارک کے بغیر وہ یوپی میں بی جے پی کو کچھ خاص پریشان نہیں کر پائی تھی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment