Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 10:11 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

شان رسالت میں کسی طرح کی مذموم حرکت ناقابل برداشت: کاظمی

 

یاسرعثمانی

دیوبند،14جنوری (ایس ٹی بیورو)بی ایس پی نوجوان لیڈر ہارون کاظمی نے کہا کہ شان رسالت میں کسی طرح کی مذموم حرکت ناقابل برداشت ہے لہذا اس طرح کی گھناؤنی اور مذہبی دل آزاری والے واقعات پر مرکزی اور ریاستی سرکار فوری طور پر سخت نوٹس لینا چاہئے اور قصورواروں کو عبرتناک سزا ملنی چاہئے تاکہ وہ مستقبل میں کسی بھی ذات و مذہب کے نام لیوا کے خلاف اس طرح مذموم حرکت کی ہمت نہ کرسکیں ، اور چراغ ملک نامی لڑکے کی حرکت سے نہ صرف مسلمانوں کے مذہبی جذبات بر انگیختہ ہوئے ہیں بلکہ ایک سازش کے تحت اس گنگا جمنی تہذیب کے شہر کو فرقہ وارانہ فساد میں جھونکنے کی منظم سازش رچی جارہی ہے جس کو ہمیں سمجھنا چاہئے ۔مسٹر ہارون کاظمی آج یہاں محلہ محل مولانا مدنی روڈ پر واقع گیسٹ ہاؤس میں نامہ نگاروں سے گفتگو کر رہے تھے ۔انہوں نے صاف لفظوں میں کہا کہ مذہب کے نام پر سیاست افسوسناک ہے اور یہ کھیل بی جے پی اور سماجوادی پارٹی ملکر کھیل رہی ہے ، انہوں نے نوجوانوں سے خاص طور پر اپیل کی کہ وہ حالات کی نزاکت کو سمجھیں اور ہوش مندی کا مظاہرہ کریں اور اس مثالی شہر کی تہذیب و ثقافت کو برقراررکھیں ، ایک دیگر سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ رریاست کی موجودہ سرکار کی ملی بھگت سے صوبے بھر میں آئے دن فرقہ وارانہ فساد کی آگ میں لوگ جل رہے ہیں اور پورا نظام درہم برہم ہے ، انہوں نے سوالیہ لہجہ میں کہا کہ کیا وجہ ہے کہ اعلی افسران اور حکومت اس پر قابو پانے میں یکسر ناکام ثابت ہوئی ہے ، نوجوان لیڈر نے توہین رسالت کے مرتکب کے بابت زوردیکر کہا کہ اسکول کے ذمہ داران اور تربیت کنندگان کو ذمہ دار قراردیا ۔اوراس گھناؤنی حرکت کے پس پردہ کونسی طاقیتں کارفرما ہیں کی اعلی تفتیش کی جانی چاہئے ۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ وہ اس شہر کی مثالی اور تاریخی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو کسی بھی قیمت پر داغدار نہیں ہونے دیں گے۔ہارون کاظمی نے مزید کہا کہ مذہب اور توہین آمیز کارٹوں کو لیکر سابق وزیر یعقوب قریشی بی ایس پی لیڈر کو ایک سازش کے تحت پھنسانے کی کوشش کی جارہی ہے اور انکے کئی سال پرانے اعلان کو دوسرا رخ دیا جا رہا ہے جس کو اقلیتی طبقہ اور قریشی سماج کسی صورت میں برداشت نہیں کریگی اور ضرورت پڑنے پر ہم سینئر لیڈر کی حمایت پر سڑکوں پر اترنے کیلئے بھی تیارہیں ۔ ۔اس موقع پر بی ایس پی لیڈر شہزادقریشی نے کہا کہ تاریخ شاہد ہے کہ اس ملک کی آزادی میں ہمارے علماء نے نمایاں کردار ادا کیا ہے اور جمہوریت اور باہمی یگانگت کی بقاء کیلئے جو انہوں نے ہمیں درس دیا ہے مسلمان آج بھی اس پر عمل پیراں ہے ، انہوں نے دعوی کے ساتھ کہا کہ آج تک مسلمانوں نے کسی بھی مذہب یا ذات کے ماننے والے لوگوں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانا تو دور کی بات کبھی اس جانب سوچا بھی نہیں ہے ، انہوں نے دیوبند میں پیش آئے توہین رسالت کو مذہبی جذبات سے جڑا معاملہ قراردیا اور اس کے خلاف سخت عملی کاروائی کی مانگ کی ۔اس موقع پر کاشف قریشی ، فیضی صدیقی ، اعظم صدیقی ، وغیرہ موجود رہے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment