Today: Tuesday, September, 25, 2018 Last Update: 07:12 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

بجلی کمپنیوں میں ہے ستیش اپادھیائے کی حصہ داری

 

کجریوال نے پریس کانفرنس کرکے بی جے پی کے ریاستی صدرپرلگایا الزام،کہا،سات مہینے میں بھی مودی سرکارنے وعدہ کے مطابق کم نہیں کی بجلی کی شرح،اپادھیائے کاجوابی حملہ،کجریوال کے خلاف ہتک عزت کے مقدمہ کی دھمکی
نئی دہلی 14جنوری(آئی این ایس انڈیا) عام آدمی پارٹی کے رہنما اروند کیجریوال نے دہلی میں بجلی سپلائی کرنے والی کمپنیوں اور بی جے پی کے لیڈروں کے درمیان کاروباری تعلقات اور رابطہ کا الزام لگا یا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جس کمپنی میں بی جے پی کے صدر ستیش نائب صدر اور ان کی اہلیہ کی حصہ داری ہے، وہ بجلی کمپنی بی ایس ای ایس کے لئے میٹر لگانے اور تبدیل کرنے کا کام کرتی ہے۔کیجریوال نے کہا کہ دہلی بی جے پی کے نائب صدر آشیش سود بھی اس کمپنی میں ڈائریکٹر رہ چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی نے بجلی کی شرح میں 30 فی صدکٹوتی کا اعلان کیا تھا لیکن سات مہینے سے دہلی کا اقتدار اس کے پاس ہے اور اس نے شرح میں کمی کی بجائے اضافہ کیا ہے ۔پریس کانفرنس میں انہوں نے کہاکہ ستیش اپادھیائے کی چھ کمپنیاں ہیں، جن میں سے ایک این سی ایل انفو میڈیا پرائیویٹ لمیٹڈ بی ایس ای ایس کے لئے میٹر لگانے اور تبدیل کرنے کا کام کرتی ہے۔دہلی میں لوگ مسلسل ان میٹروں کی شکایت کرتے رہے ہیں۔یہ چونکانے والی بات ہے کہ یہ میٹر دہلی بی جے پی کے صدر کی کمپنیوں نے لگائے ہیں۔دہلی کے عوام کو اس کا جواب چاہئے۔کیجریوال نے سوال کیاکہ بجلی کمپنیوں کو مال سپلائی کرنے والے لوگوں کو دہلی بی جے پی کا صدر اور نائب صدر کیوں بنایا گیا؟ کیا یہ براہ راست مفادات کے ٹکراؤ کا معاملہ نہیں ہے؟۔آپ لیڈرنے کہا کہ حکومت نے بجلی کمپنی کے مالک انل امبانی کو حفظان صحت مشن کا برانڈایمبیسڈر بنایا ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی کی عوام جاننا چاہتی ہے کہ بجلی کمپنیوں سے بی جے پی کا کیا تعلق ہے؟۔آپ لیڈر نے الزام لگایا کہ ہماری حکومت نے بجلی کمپنیوں کا کیگ سے آڈٹ کروانا شروع کروایا تھا، لیکن بی جے پی کی حکومت کی مدت کار میں کمپنیاں کیگ کو بھی اکاؤنٹ نہیں دے رہی ہیں۔بی جے پی حکومت نے آڈٹ کو ٹھنڈے بستے میں ڈال دیا ہے۔کیجریوال نے سوال کیا کہ آخر بی جے پی بجلی کمپنیوں کی مدد کیوں کر رہی ہے۔دوسری طرف ایک پریس کانفرنس منعقد کرکے دہلی بی جے پی کے صدر ستیش اپادھیائے نے لگے ہاتھ کیجروال کی تردید کی ہے ۔انہوں نے کہا ہے کہ اروند کیجریوال نے جو الزام ان پر لگائے ہیں وہ بے بنیاد ہیں۔ اپادھیائے بدھ کی شام میڈیا کے سامنے آکر عام آدمی پارٹی کے لیڈر کیجریوال کے الزامات کو سرے سے خارج کر دیا اور کہا کہ کیجریوال جھوٹ بول رہے ہیں۔انہوں نے کیجریوال کو ثبوت پیش کرنے کا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ وہ 24 گھنٹے میں الزام ثابت کریں یا سیاست چھوڑدیں۔ اپادھیائے نے کیجریوال کے الزامات کے ہر ایک نقطہ پر جواب دیا۔اپادھیائے نے کہا کہ کیجریوال نے جن دوکمپنیوں کا نام لیکر ان پر الزام لگائے ہیں، وہ موجود ہی نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر کمپنیاں ان کی نکلی تو وہ سیاست چھوڑدیں گے۔اپادھیائے نے یہ بھی کہا کہ وہ کیجریوال کے خلاف مجرمانہ ہتک عزتی کا مقدمہ کریں گے۔اپادھیائے نے کہا کہ گھرچلانے کے لئے کاروبار کرنا کوئی گناہ نہیں ہے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ کیجریوال صرف الزام لگانے کی سیاست کرتے ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment