Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 06:05 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

ہمارے کندھوں پر لاکھوں لوگوں کوجواب دینے کا بوجھ ہے

 

حلال کمیٹی جمعیۃ علماء مہاراشٹرا (ارشد مدنی) کی طر ف سے دہلی آفس میں منعقد ٹریننگ ورکشاپ برائے ذابحین آف سلاٹر ہاؤسیز میں علماء اور ٹرینرس کا اظہار خیال

نئی دہلی،29ستمبر(ایس ٹی بیورو) ’’ہم سب سے پہلے مسلمان ہیں اور مسلمان ہونے کی حیثیت سے یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم حلال غذا لوگوں تک پہنچائیں۔اس لئے کہ لوگ ہم پر اعتماد کرکے بیٹھے ہیں کہ جمعیۃ علماء مہاراشٹرا کی حلال کمیٹی ہمارے لئے تو حلال غذا اور گوشت فراہم کرنے کی ذمہ دار ہے تو ہمیں پھر فکر کی کیا ضرورت ہے۔ہمارے کندھوں پر لاکھوں لوگوں کوجواب دینے کا بوجھ ہے۔‘‘ ان خیالات کا اظہار جمعیۃ علماء اتر پردیش کے نائب صدر اورجمعیۃ علماء ہندکے مجلس عاملہ کے مدعو خصوصی مفتی اشفاق احمد اعظمی نے حلال کمیٹی جمعیۃ علماء مہاراشٹرا کی طر ف سے دہلی آفس میں منعقد ٹریننگ ورکشاپ برائے ذابحین آف سلاٹر ہاوئسز میں ذابحین کو خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ’جمعیۃ علماء ہند اپنے قیام سے ہی قوم کی خدمت کے لئے سرگرم عمل ہے۔حلال کمیٹی کے قیام کا مقصد پیسہ کمانا نہیں ہے بلکہ لوگوں تک حلال غذا کو پہنچانا ہے۔یہ ہمارے اکابر کی دور رس نگاہیں تھیں کہ انہوں نے اس ضرورت کو1982میں ہی بھانپ لیا تھا اور امت کی اس اہم ضرورت کو پورا کرنے کے لئے حلال کمیٹی کی بنیاد رکھی اور اس کی ذمہ داری جمعیۃ علماء مہاراشٹرا کے سپرد کی ،اور آج بھی حلال کمیٹی کے چیئرمین اور جمعیۃ علماء ہند کے صدر حضرت مولانا سید ارشد مدنی دامت برکاتہم کی قیادت اورجنرل سیکریٹری حلال کمیٹی گلزار اعظمی کی رہنمائی میں یہ کمیٹی پوری ذمہ داری سے اپنے فرائض انجام دے رہی ہے۔ ذابحین کو ان کی ذمہ داری یاد دلاتے ہوئے کہا کہ’ حلال غذا کی فراہمی میں سب سے اہم کردار آپ کا ہے۔آپ کی تھوڑی سی غفلت لوگوں تک حرام غذا کے پہنچے کا سبب بن سکتا ہے۔اس لئے اپنی ذمہ داری کو سمجھئے اور پوری مستعدی سے اس کو پورا کرنے کی فکر کیجئے۔دوران ٹریننگ ذابحین سے ان کے تجربات سنے گئے اور عمل ذبح میں مزیدبہتری لانے کے حوالے سے ان سے تجویز رکھنے کے لئے کہا گیا۔اسی دوران حلال کمیٹی کے چیئرمین اور جمعیۃ علماء ہند کے صدر حضرت مولانا سید ارشد مدنی دامت برکاتہم بھی تشریف لائے اور انہوں نے اپنی نیک تمنائیں اور مبارکباد شرکاء ٹریننگ کوپیش کیں۔حلال کمیٹی کے آپریشن منیجر اشفاق خان نے سلاؤٹرنگ کے میکانیکل پہلو پر گفتگو کی۔انہوں نے ویڈیو کے ذریعہ انہیں یہ بتایا کہ کس طرح عمل ذبح کو اور اچھا اورآسان بنایا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا شریعت کی پابندی کے ساتھ ان چیزوں کو سہارا لیا جاسکتا ہے جو عمل ذبح کو آسان بناتے ہیں تاکہ جانور کو کم سے کم تکلیف ہو اور لوگوں تک حلال غذا پہنچ سکے۔النفیس ایکسپورٹس میں حلال کمیٹی کی طرف سے متعین سینئر سپروائزر مولانا ارشد نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور انہوں ٹریننگ کی غرض و غایت پر روشنی ڈالی اور کہا کہ ہمیں معلوم ہے کہ آپ لوگوں میں اکثر حافظ اور عالم ہیں اور آپ لوگوں کچھ ایسے بھی ہیں جن کا تجربہ ذبح کے حوالے سے چھ چھ سال ہے اور ماشاء اللہ آپ لوگ بحسن خوبی اپنی ذمہ داری بھی نبھا رہے ہیں۔لیکن یہ ٹریننگ اور اجتماع اس لئے ہے کہ تاکہ ہمیں اپنی اہمیت اور ذمہ داری کا احساس ہوجائے کہ عمل ذبح میں آپ کی حیثیت سب سے اہم ہے۔اخیر میں حلال کمیٹی دہلی آفس جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے کوآرڈ ینیٹر مفتی محمدیحییٰ قاسمی نے’’حلال غذا کی فراہمی میں ذابحین کی ذمہ داری‘‘ کے عنوان سے اپنے بات پیش کی۔انہوں نے اجزائے بد ن کی تر کیب وساخت میں غذا کی اہمیت، غذا کے انتخاب میں شریعت کے احکامات، صحت کے حوالے سے حلا ل غذا کی اہمیت، قرآنی حکم ’حلال طیب‘ میں صحت کا راز مضمر، حلال اور حرام جانور،حلال جانور اور اسلامی ذبیحہ ،ذبح کا اسلامی طریقہ،ذابح کے شرائط،ذبح کے واجبات،ذبح کے سنن،ذبح کے مکروہات اور ذابح کی ذمہ داری جیسے اہم پہلوؤں کو اجاگر کیا۔ انہوں نے ذابحین کو ان کی ذمہ داری کے حوالے سے کہا کہ’ اگرلوگوں تک ہمارے واسطے سے حرام گوشت پہنچا اور قیامت کے دن انہوں نے سوال کرلیا تو ہمارے پاس کیا جواب ہوگا؟اس لئے ہمیں بہت محتاط رہنا ہے اور اپنی ذمہ داری میں ذرہ برابر کوتاہی نہیں کرنی ہے۔نوکری کی فکر بعد میں کیجیے پہلے اپنی ذمہ داری خلوص نیت کے ساتھ نبھائیے کیوں کہ یہ بہت اہم ذمہ داری ہے لاکھوں لوگوں تک آپ کا ذبح کیاہوا گوشت پہنچتا ہے۔آپ کی چھوٹی سی غلطی لاکھوں لوگوں کے حرام کھانے کا سبب بن سکتا ہے۔ ‘‘اخیر میں شرکاء ٹریننگ کوعارضی سرٹیفیکٹ سے نوازا گیا۔اور دعا ء پر ٹریننگ کا اختتام ہوا۔

...


Advertisment

Advertisment