Today: Tuesday, November, 13, 2018 Last Update: 10:57 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بان کی مون کی صدرجمہوریہ سے ملاقات


نئی دہلی، 13؍جنوری(آئی این ایس انڈیا )اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل بانکی مون نے آج راشٹر پتی بھون میں صدرجمہوریہ ہند پرنب مکھرجی سے ملاقات کی۔اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کا خیر مقدم کرتے ہوئے صدرجمہوریہ نے کہا کہ اقوام متحدہ کو اپنے اعتمادکوبرقراررکھنے اوراپنے فیصلوں کے جواز کیلئے فوری طورپراصلاح کی ضرورت ہے۔ اقوام متحدہ کو ہر طرح کی صورتحال میں مؤثررول ادا کرنا چاہئے۔ اصلاح شدہ اور مؤثر اقوام متحدہ زیادہ فیصلہ کن طریقے سے دنیا کو پیش آنے والے بحران کے سلسلے میں کارروائی کرنے کا اہل ہوگا۔ پشاوراور پیرس میں حال ہی کے دہشت گردانہ واقعات کی طرف توجہ مبذول کراتے ہوئے جناب پرنب مکھرجی نے کہا کہ دہشت گردی اب صرف بحث کا ہی معاملہ نہیں رہ گیا ہے۔ دہشت گردمن مانے طریقے سے تباہی برپا کررہے ہیں اور وہ سرحدوں اور اقدارکا بھی احترام نہیں کرتے۔ بین الاقوامی برادری کو اس سلسلے میں کارروائی کرنی ہوگی اوردہشت گردی کے مسئلے سے نمٹنا ہوگا۔ اس سلسلے میں اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کو پہل کرنی چاہئے۔ صدرجمہوریہ نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ بین الاقوامی برداری پائیدارترقی کے مقاصد اور 2015 کے بعد کی جامع ترقی کے ایجنڈے کو حتمی شکل دینے کیلئے کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلوبل وارمنگ اور آب وہوا کی تبدیلی سے مقابلہ کرنے کیلئے ملکی سطح پر سنجیدہ کارروائی کے ساتھ ساتھ حقیقی بین الاقوامی تعاون کی بھی ضرورت ہے۔ اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے کہا کہ ہندوستان ایک بہت ہی اہم عالمی طاقت ہے۔ اسی وجہ سے اقوام متحدہ اورہندوستان مستحکم پارٹنرشپ کیلئے وہ اس ملک کا دورہ کرتے رہتے ہیں۔انہوں نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ دہشت گردی کے معاملے میں عالمی برادری کو سخت کارروائی کرنی چاہئے۔ دریں اثنا اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی۔مون نے آج ہندوستان سے کہا ہے کہ وہ اس سال کے آخر میں پیرس میں ایک ’معنی خیز‘ماحولیاتی تبدیلی کے معاہدے تک پہنچنے میں ایک قائدانہ کردار ادا کرے۔اقوام متحدہ کی ماحولیاتی کانفرنس اس سال 30 نومبر سے 11 دسمبر تک پیرس میں منعقد کی جانی ہے۔اس دوران گرین ہاؤس گیسوں کا اخراج کم کرنے کے لئے بنے ایک عالمی معاہدے کو حتمی شکل دی جائے گی۔بان نے یہاں نامہ نگاروں کو بتایا، ’ ماحولیاتی تبدیلی کے مسائل پر جاری ہماری کوششوں کے لئے میں، ہندوستان کی قیادت پر اعتماد کرتا ہوں، میں امید کرتا ہوں کہ اقوام متحدہ کے ایک انتہائی اہم رکن کے طور پر اور ایک انتہائی تیز رفتار سے ترقی ہوتی معیشت کے طور پر ہندوستان کو موسمیاتی تبدیلی پر ذمہ دار ہونا چاہئے تاکہ وہ دسمبر میں پیرس میں ایک عالمگیر اور معنی خیز ماحولیاتی تبدیلی کے معاہدے تک پہنچ سکیں۔‘ اسے ایکنئی اور سیاسی ذمہ داری ‘ بتاتے ہوئے انہوں نے کہا، ’ فطرت ہمارا انتظار نہیں کرتی، وہ ہمارے ساتھ سودے بازی نہیں کرتی، انسانوں کو ہی پائیدارترقی کو یقینی بنانے کے لئے آگے بڑھ کر آنا ہوگا، ماحولیاتی تبدیلی ہمارے دور کا ایک اہم مسئلہ ہے۔‘ہندوستان کی سب سے زیادہ گرین ریٹیڈ’سبز ماحول کے پیمانے پر سب سے زیادہ کھری اترنے والی عمارت‘’’اندرا پریاورن بھون‘‘ کا دورہ کرنے والے بان نے یہ بھی کہا کہ وہ ’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی حکومت ہند کے مضبوط عزم سے پُر جوش ہیں۔‘ شمسی توانائی کو فروغ دیے جانے اور اسمارٹ سٹی بنانے کی ہندوستان کی کوششوں کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا، ’ میں نے ’وائبرنٹ گجرات سمٹ‘میں خود دیکھا،میں امید کرتا ہوں کہ دنیا کے کئی ملک ہندوستان کی ایسی کوششوں کواپنائیں گے۔‘ ماحولیاتی وزیر پرکاش جاوڑیکر نے موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے پیدا ہوئے چیلنجوں سے نمٹنے کی سمت میں ایک مشن کے طور پر کام کرنے کے جذبہ کے لئے اقوام متحدہ کے اعلی افسران کی تعریف کی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment