Today: Thursday, November, 22, 2018 Last Update: 02:23 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

الیکشن کیلئے دہلیوالوں کو کرنا ہوگا مزید انتظار

 

فرضی رائے دہندگان کے معاملہ میں کمیشن کو ہائی کورٹ کانوٹس*میٹنگ میں صرف تیاریوں کا لیا گیا جائزہ
نثاراحمدخان
نئی دہلی، 9جنوری (ایس ٹی بیورو) دہلی اسمبلی انتخابات کی تیاریوں کا جائزہ لینے کیلئے جمعہ کو الیکشن کمیشن کی میٹنگ توہوئی، لیکن الیکشن کی تاریخ کا کوئی اعلان نہیں ہوسکا۔ قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ شاید اس میٹنگ کے بعد الیکشن کے پروگرام کا اعلان ہوسکتا ہے، تاہم کمیشن نے میٹنگ کے بعد کہا کہ فی الحال تاریخ کاا علان نہیں کیاجارہا ہے۔ الیکشن کمیشن کی آج تقریباً 11بجے شروع ہوئی میٹنگ میں صرف الیکشن کی تیاریوں کا جائزہ لیاگیا۔ میٹنگ کے بعد کمیشن نے کہاکہ کوئی جلد بازی نہیں ہے، ایک دودن میں دیکھیں گے، آج کچھ نہیں۔ دوسری جانب فرضی رائے دہندگان کے معاملے میں دہلی ہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن کو نوٹس بھیج کر جواب طلب کیاہے۔ اس سے قبل ہائی کورٹ نے پیر کے روز کمیشن پر تنقید کرتے ہوئے دریافت کیاتھا کہ قومی راجدھانی دہلی کے مختلف اسمبلی حلقوں میں بڑی تعداد میں فرضی رائے دہندگان کی موجودگی کے الزام پر اس نے کیاکارروائی کی؟ الیکشن کمیشن کے ذرائع کے مطابق دہلی الیکشن میں ووٹنگ کی تاریخ 10یا 10فروری رکھی جائے گی۔ دونوں میں سے ایک ہی دن دہلی کے تمام 70اسمبلی نشستوں کیلئے ووٹنگ کے نظام پر میٹنگ میں کمیشن کے ممبران نے غوروخوض کیا۔ دونوں ہی تاریخوں میں سے ایک میں ووٹنگ کرائے جانے کا اعلان کمیشن کی جانب سے ہفتہ کو کیاجاسکتاہے۔ کمیشن کی جانب سے حالانکہ میٹنگ کے بعد سرکاری طور پرالیکشن کی تاریخ سے متعلق کوئی اعلان نہیں ہوا ہے، کہاجارہا ہے کہ کچھ دوسرے پہلوؤں پر غور کرنے کی ضرورت کے مدنظر اعلان نہیں کیا گیا۔ غورطلب ہے کہ دہلی میں گذشتہ اسمبلی الیکشن 2013میں ہوا تھا۔ الیکشن کے بعد کسی پارٹی کو اکثریت نہیں ملی تھی اورکانگریس کی حمایت سے عام آدمی پارٹی کی سرکار بنی تھی اور اروند کجریوال دہلی کے وزیراعلیٰ بنے تھے۔ کجریوال کے ذریعہ 14فروری کو وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دینے کے سبب اسمبلی معطل ہوگئی، جسے 4نومبر 2014کو تحلیل کردیا گیاتھا۔دہلی الیکشن کیلئے سبھی پارٹیاں تقریباً تیار ہیں۔ عام آدمی پارٹی جہاں اپنے تمام 70امیدواروں کااعلان کرچکی ہے وہیں کانگریس نے بھی اپنی روایت کے برعکس 24امیدواروں کااعلان کردیا ہے اورایک دو روز میں 30امیدواروں پرمشتمل دوسری فہرست آنے کاامکان ہے جبکہ بی جے پی کل وزیراعظم نریندرمودی کی ہونے والی ریلی کے بعد امیدواروں کاانتخاب کرے گی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment