Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 11:10 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

لدھیانہ میں فتنہ قادیانیت اور مرکزی حکومت کے خلاف احرار کا زبردست احتجاجی مظاہرہ

 

مودی حکومت نے چھ ہزار غداران وطن کو ویزا دیکر ملک کی سرکشا کو خطرے میں ڈال دیا ۔شیر اسلام مولانا حبیب الرحمن لدھیانوی کا بیان
لدھیانہ 26دسمبر (پریس ریلیز ) مرکزی حکومت کی جانب سے قادیانی جماعت کے چھ ہزار پاکستانی قادیانیوں کو بھارت کا ویزا دئے جانے کے خلاف آج یہاں تحریک تحفظ ختم نبوتؐ کی علمبردار جماعت مجلس احرار اسلام ہند کی جانب سے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا ، ہزاروں مسلمانوں نے احرار کے قومی جنرل سکریٹری مولانا محمد عثمان رحمانی لدھیانوی کی قیادت میں مودی حکومت اور قادیانی جماعت کا فیلٖڈ گنج چوک میں پتلا نظر آتش کیا اور ودیش منترالہ کی وزیر شرمتی ششما سوراج کے خلاف نعرے بازی کی ، اس دوران مظاہرین کی بڑی تعداد کو دیکھتے ہوئے دو اے پی سی افسران کے ساتھ بھاری پولیس فورس موجو د تھی ، احتجاجی مظاہرہ کے بعد لدھیانہ ایس ڈی ایم مسٹر پرمجیت سنگھ جامع مسجد پہنچے جہاں صدر احرار و پنجاب کے شاہی امام حضرت مولانا حبیب الرحمن ثانی لدھیانوی نے قابل احترام صدر جمہوریہ شری پرنب مکھر جی کے نام ایس ڈے ایم کو میمورنڈم دیا ، اس موقعہ پر پریس کانفرنس کو خطاب کرتے ہوکہا کہ یہ بات ہر خاص و عام کو پتا ہے کہ قادیانی جنگ آزادی کے غدار ہیں اور قادیانی جماعت کے لوگ پچھلے دس پندرہ سالوں سے دہشت گردانی کاروائیوں میں بھی ملوث ہیں اس کے باوجود قادیان میں ہو رہے ان غداروں کے جلسہ کیلئے مودی حکومت نے چھ ہزار سے زائد ویزے جاری کرکے ملک کی سلامتی کو خطرہ میں ڈال دیا ہے ، مولانا حبیب الرحمن لدھیانوی نے کہا کہ ہماری ودیش منتری محترمہ ششما سوراج یہ کیوں بھول گئیں کہ ابھی قادیان سے قادیانیوں کے نام نہاد مبلغ اسلحہ سمیت گرفتار ہوئے جن پر حکومت پنجاب نے آئی ایس آئی کے ایجنٹ ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے غداری کا مقدمہ درج کیا ، شاہی امام مولاناحبیب الرحمن نے کہا کہ ودیش منتری نے باہری دباؤں اور سیاسی فائدہ حاصل کرنے کیلئے بیک مشت چھ ہزار پاکستانی قادیانیوں کو بنا کسی تفتیش کے ویزا جاری کردیا ، ہندوستان آ رہے ان قادیانیوں میں پاکستانی دہشت گردوں کے ایجنٹ بھی شامل ہو سکتے ہیں جو کی بھارت میں ریکی کر کے جا کر اپنے آقاؤں کو بتائیں گے کہ کس طرح ہمارے ملک میں دہشت گردی کی جائے ، مولانا حبیب الرحمن ثانی لدھیانوی نے کہا کہ یہ بات حق ہے کہ قادیانی اسلام سے اس لئے خارج ہیں کیونکہ مرزا قادیانی نے جھوٹی نبوت کا دعویٰ کیا تھا لیکن اس کے ساتھ ساتھ یہ بات بھی حق ہے کہ قادیانیت کے خلاف مسلمانوں کا احتجاج ملک کی سالماتی کیلئے ہے کیونکہ قادیانی جماعت ہمارے ملک میں مذہب کی آڑ لیکر دہشت گردی میں ملوث ہے، اور انگریز کے دور میں بھی قادیانی آزادی کے متوالوں کے خلاف تھے ، مولانا حبیب الرحمن لدھیانوی نے کہا کہ بڑی حیرت کی بات ہے کہ پاکستان میں بیٹھے ہزاروں ضعیف لوگ جن کی عمر 80سال سے بھی ذیادہ ہے اک مرتبہ اپنی جائے پیدائش دیکھنے کیلئے انڈیا آنا چاہتے ہیں ایسے لوگوں کو ودیش منترالہ ویزا دینے کیلئے کڑی شرائط رکھتا ہے اور دوسری طرف غداران وطن دہشت گرد قادیانیوں کو بنا تحقیق کہ ہزاروں کی تعداد میں ویزا دیا جا رہا ہے ، انہوں نے کہا کہ یہ ملک کی سا لمیت کے ساتھ کھلواڑ ہے جسے کسی قیمت پر برداشت نہیں کیا جا سکتا ،انہوں نے کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ غدار قادیانیوں کو فورا پاکستان واپس بھیجا جائے اور اس بات کی انکوائری کی جائے کہ وہ کون سے افسران اور لیڈران ہیں جو کہ ودیش منترالہ میں بیٹھ کر غداروں کی پشت پناہی کر رہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ قادیانیوں کو ملک میں سیاسی پناہ دینے والوں کے خلاف بھی احرار تحریک چلائیں گے انہوں نے کہا کہ قادیانیوں کے عزائم ملک اور اسلام کیلئے سنگین خطرہ ہیں اس فتنہ کی سرگرمیوں کو نظر انداز کرنا حکومت کیلئے بڑی غلطی ہوگی ، قابل ذکر ہیکہ مجلس احرار اسلام ہند کی جانب سے آج کئے گئے مظاہرے میں شہر بھر سے مسلمان کثیر تعداد میں شامل ہوئے فرزندان اسلام جذبہ تحفظ ختم نبوتؐ سے سرشار نظر آرہے تھے اور فضاء اللہ اکبر ختم نبوتؐ،زندہ آباد، مودی حکومت مردآباد ، فتنہ قادیانیت مردآباد کے نعروں سے گونج رہی تھی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment