Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 01:16 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

آرایس ایس اور بجرنگ دل کے لیڈران ملک کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی کیلئے خطرہ

 

شاملی میں سیکڑوں کانگریسی کارکنان نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے وزیراعظم کے نام میمورنڈم دیکر فرقہ پرست تنظیموں پر پابندی کا کیامطالبہ

شاملی،22؍دسمبر(ایس ٹی بیورو) زبردستی تبدیل مذہب اور ملک کو ہندو راشٹر بنانے کے نام پر پھیلائی جارہی فرقہ پرست کے خلاف آج یہاں شاملی میں مظفرنگر تیراہے پر کانگریس کے سیکڑوں کارکنان نے احتجاجی جلوس نکال کر مظاہرہ کرتے ہوئے آر ایس ایس ،بجرنگ دل جیسی تنظیموں پر پابندی عائد کرنے کے لئے وزیر اعظم کے نام میمورنڈم اے ڈی ایم کو سونپا۔ احتجاجیوں نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیاہے وہ فرقہ پرستوں پر قدغن لگانے کے لئے خاطر خواہ اقدامات کریں بصورت دیگر ملک کاماحول خراب ہو جائے گا اور جس کے لئے مرکزی حکومت ذمہ داری ہوگی ۔اس موقع پر کانگریس کے سینئر لیڈر و لوک سبھا صدر چودھری مظفرعلی نے کہاکہ جب سے مرکزمیں بی جے پی کی حکومت اقتدار میں آئی اسی وقت سے ملک میں فرقہ پرستوں کا بول بالا ہے جس کے سبب آج ملک میں فرقہ پرست تنظیموں کے کارکنان اور فرقہ پرست لیڈران ملک کاماحول خراب کرنے کے لئے زبردستی تبدیل مذہب اور ملک کو ہندو راشٹر بنانے جیسے سنگین مدعے اٹھاکر ملک کے آپسی بھائی چارے اور امن وامان کے لئژ خطرات پیدا کررہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ آر ایس ایس اور بجرنگ دل کے لیڈران مسلسل مسلمانوں اور عیسائیوں کے خلاف زہرافشانی کررہے ہیں جس سے نہ صرف یہاں کی اقلیتیں خوف زدہ ہیں بلکہ یہ ملک کی سالمیت ، فرقہ وارانہ ہم آہنگی اور جمہوریت کے لئے بڑا خطرہ ہے،جس پر اگر بروقت کارروائی نہیں کی گئی تو ملک کاماحول خراب ہوجائے گا، جس کے لئے کلی طورپر مرکزی حکومت ذمہ دار ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ صوبہ کی ایس پی حکومت ان فرقہ پرست تنظیموں کو شہ دے رہی اور ان کے خلاف کوئی بھی سخت اقدام نہیں کررہی ہے جس کے سبب انہیں مزید تقویت مل رہی ہے۔انہوں نے مرکزی حکومت اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے ان فرقہ پرستوں کی زہر افشانی پر پابندی لگائی جائے۔ کانگریس کے قومی جنرل سکریٹری منیش ٹھاکر نے بھی آر ایس ایس اور بجرنگ دل جیسی فرقہ پرست تنظیموں کی زہر افشانی پر قدغن لگانے کی مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ان فرقہ پرست تنظیموں کے عمل سے ملک کی جمہوریت اور یہاں کی گنگا جمنی تہذیب کو خطرہ ہے اسلئے ضروری ہے کہ ان تنظیموں پر پابندی عائد کی جائے۔ دریں اثناء کانگریسیوں نے وزیر اعظم کے نام میمورنڈم اے ڈی ایم کوسونپا ۔میمورنڈم میں مطالبہ کیا گیاہے کہ موہن بھاگوت ،آر ایس ایس اور بجرنگ دل جیسی تنظیموں اور لیڈران سے ملک کی سالمیت کو خطرہ ہے اسلئے ان تنظیموں اورفرقہ پرستی پھیلانیوالے لیڈران پر پابندی عائد کی جائے۔میمورنڈم دینے والوں اور احتجاج کرنیوالوں میں سینئر کانگریسی لیڈر چودھری مظفرعلی،شاملی اسمبلی حلقہ صدردیپک سینی، گنگوہ اسمبلی حلقہ صدر وجے شرما،لوک سبھا سکریٹری تنویر جنگ،امجد ،خالد،منور، فرقان، صدام، دھرمیندر، مہربان سمیت سیکڑوں کانگریسی شامل رہے۔

...


Advertisment

Advertisment