Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 02:58 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

حیات بخش دواؤں کی قیمتوں میں اضافہ کی خبریں بے بنیاد:حکومت

 

نئی دہلی، 18 دسمبر: حیات بخش دواؤں کی قیمتوں میں اضافہ کے الزام کو مسترد کرتے ہوئے آج حکومت نے کہا کہ عام آدمی کو سستی اور بہتر دوا مہیا کرانے کے لئے ملک بھر میں تین ہزار حیات بخش دوا کے مراکز کھولے جائیں گے۔ لوک سبھا میں حیات بخش دواؤں کی قیمتوں میں اضافہ اور جعلی دواؤں کی وجہ سے صحت کے سنگین مسائل سے پیدا شدہ صورتحال پر ایک قابل توجہ تجویز کا جواب دیتے ہوئے کیمیکل اور کھاد کے وزیر اننت کمار نے کہا کہ اپوزیشن کے کچھ بڑے لیڈر دوائی کے دام بڑھنے کا پروپیگنڈہ کر رہے ہیں۔انہوں نے دعوی کیا کہ نئی حکومت کے اقتدار میں آنے کے بعد سے کسی بھی دوا کی قیمتوں میں اضافہ نہیں ہوا ہے۔ البتہ کچھ دواو کی قیمتوں میں کمی ضرور ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ منشیات کی قیمتوں اور ان کی معیار کا تعین کے لئے ایک نظام قائم کیا گیا ہے۔ اس کے مطابق ہر دوا کمپنی کو سہ ماہی کی بنیاد پر اپنی ایک رپورٹ حکومت کو دینی ہوتی ہے۔ جس دوا کی قیمت، تیار مقدار، تقسیم اور معیار کی معلومات ہوتی ہے۔ مسٹر کمار نے کہا کہ کہا جا رہا ہے کہ کینسر کی دوا کی قیمت آٹھ ہزار روپے سے بڑھ کر ایک لاکھ آٹھ ہزار روپے ہوگئی ہے۔ اصلی حالت یہ ہے کہ اس دوا کی قیمت نئی حکومت کے آنے کے بعد سے چند سو روپے کم ہو گئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ پچھلی حکومت کے وقت میں قیمت کنٹرول دواو کی تعداد 440 تھی جو کہ اب 670 ہو گئی ہے۔ اس فہرست میں مزید نئی دوائیں کینسر، ذیابیطس اور دل سے متعلق بیماری کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دواو کی قیمت کا تعین اور معیار کے تعین میں حکومت کا کوئی مداخلت نہیں ہے۔ ان کا تعین ایک آزاد ادارے کی طرف سے کیا جاتا ہے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment