Today: Thursday, November, 15, 2018 Last Update: 04:01 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

جموں وکشمیر اسمبلی انتخابات: چوتھے مرحلے کی رائے دہی آج

 

سکورٹی کے سخت انتظامات، سابق وزراء اعلیٰ سمیت 182امیدواروں کی قسمت کا ہوگا فیصلہ

سری نگر،13 دسمبر (یو این آئی) ریاست جموں وکشمیر کے پانچ مرحلوں پر محیط اسمبلی انتخابات کے سلسلے میں کل چوتھے مرحلے کی پولنگ کے تحت 18 اسمبلی حلقوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔ پولنگ کے پرامن انعقاد اور رائے دہندگان کو پرامن ماحول فراہم کرنے کیلئے وادی کشمیر کے پولنگ والے تینوں اضلاع سری نگر، اننت ناگ اور شوپیان اور جموں خطے کے ضلع سانبہ میں سیکورٹی کے وسیع انتظامات کئے گئے ہیں۔ انتخابات کے چوتھے مرحلے کے تحت کل14 لاکھ 73 ہزار 50 رائے دہندگان 182 امیدواروں کی سیاسی قسمت کا فیصلہ کریں گے جن میں وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ، سابق وزیر اعلیٰ مفتی محمد سعید ، تین کابینی وزراء علی محمد ساگر، پیرزادہ محمد سعید، غلام احمد میر، اسمبلی اسپیکر مبارک گل، بعض سابق وزراء اور متعدد ممبران بھی اسمبلی شامل ہیں۔ نیشنل کانفرنس، پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی، کانگریس نے سبھی18 حلقوں کیلئے اپنے اپنے امیدواروں کو میدان میں اتارا ہے تاہم بی جے پی نے عیدگاہ کی نشست کو چھوڑ کر دیگر سبھی نشستوں کیلئے امیدواروں کو انتخابی میدان میں اتارا ہے۔ رائے دہندگان میں 50 ہزار کشمیری مائیگرینٹ بھی شامل ہیں ۔ضلع سری نگر میں 30 ہزار 364 جبکہ ضلع اننت ناگ میں 19 ہزار مائیگرینٹ رائے دہندگان رجسٹر ہیں۔ ضلع سرینگر کے 8 اسمبلی حلقوں میں 6 لاکھ 25 ہزار 801 افراد ، ضلع اننت ناگ کے 6 اسمبلی حلقوں میں 4 لاکھ 95 ہزار 52 افراد، ضلع شوپیان کے 2 اسمبلی حلقوں میں 1 لاکھ 61 ہزار 573 افراد اور جموں خطے کے ضلع سانبہ کے 2 اسمبلی حلقوں میں 1 لاکھ 90 ہزار 624 افراد ووٹ ڈالنے کے اہل ہیں۔ اس مرحلے کی پولنگ کے ساتھ ہی وادی کشمیر میں ووٹ ڈالنے کا سلسلہ اختتام کو پہنچ جائے گا۔ تاہم پانچویں مرحلے کے تحت 20 دسمبر کو جموں خطے کے 20 اسمبلی حلقوں میں ڈالے جائیں گے۔ الیکشن کمیشن نے رائے دہندگان کیلئے مجموعی طور پرایک ہزار 890 پولنگ اسٹیشن قائم کئے ہیں ۔ مائیگرینٹ رائے دہندگان کیلئے ادھم پور، جموں اور نئی دہلی میں پولنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ چوتھے مرحلے کیلئے جن 18 اسمبلی حلقوں میں ووٹ ڈالے جائیں گے اْن میں وسطی کشمیر کے ضلع سری نگر کے آٹھ اسمبلی حلقے حضرت بل، جڈی بل، خانیار، حبہ کدل، امیرا کدل، سونہ وار اور بتہ مالو ،جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ کے چھ اسمبلی حلقے اننت ناگ، ڈورو، ککر ناگ، شانگس، بجبہاڑہ اور پہلگام جبکہ جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں کے دو اسمبلی حلقے وچی اور شوییاں شامل ہیں۔ اِسی مرحلے کی پولنگ کے تحت جموں خطے کے سانبہ (ایس سی ) اور وجے پور میں ووٹ ڈالے جائیں گے۔ سال2008 کے اسمبلی انتخابات میں ان 18 اسمبلی حلقوں میں سے نیشنل کانفرنس نے 9 نشستوں (حضرت بل، جڈی بل، عیدگاہ، خانیار، حبہ کدل، امیرا کدل، سونہ وار، بتہ مالو اور وجے پور)،پی ڈی پی نے 6 نشستوں (اننت ناگ، شانگس، بجبہاڑہ، پہلگام، وچی اور شوپیاں) ، کانگریس نے 2 نشستوں (ڈورو اور ککر ناگ) جبکہ نیشنل پنتھرس پارٹی نے سانبہ (ایس سی) نشست پر جیت درج کی تھی۔ انتظامیہ نے پولنگ کیلئے کئے جانے والے انتظامات کو حتمی شکل دے دی ہے ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ جن 18اسمبلی حلقوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں ، کیلئے پولنگ اسٹاف کو ووٹنگ مشین اور دیگر ضروری سامان سمیت روانہ کردیا گیا ہے۔چوتھے مرحلے کی پولنگ سے قبل وزیر اعظم نریندر مودی، بی جے پی قومی صدر امیت شاہ، وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ، پی ڈی پی سرپرست مفتی محمد سعید، اْن کی بیٹی و پارٹی صدر محبوبہ مفتی، سابق وزیر اعلیٰ غلام نبی آزاد، کانگریس پارٹی کشمیر امور کی انچارج امبیکا سونی اور دیگر سینئر لیڈران نے انتخابی ریلیوں سے خطاب کیا۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment