Today: Tuesday, November, 13, 2018 Last Update: 10:28 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

فرقہ پرستوں نے 6دسمبر کو عدلیہ، پارلیمنٹ اور جمہوری نظام کا قتل کیا تھا

 

سماج وادی پارٹی کے صدر دفتر میں پریس کانفرنس کے دوران وزیر شہری ترقیات محمد اعظم خاں کا بیان

خان اسلان

رام پور،6دسمبر(ایس ٹی بیورو) اترپردیش کے وزیرشہری ترقیات محمداعظم خاں نے کہاہے کہ 6دسمبر1992کوفاشسٹ طاقتوں نے نہ صرف بابری مسجد کو شہیدکیاتھابلکہ اس ملک کی عدلیہ ، پارلیمنٹ اورجمہوری نظام کابھی قتل کیاتھا۔ ہندوستان کے امن پسندلوگ ملک کی عدلیہ پربھروسہ رکھتے ہیں اوراب یہ معاملہ عدالت میں زیرسماعت ہے اس لئے کچھ بھی کہنامناسب نہیں ہوگا۔ انھوں نے کہاکہ بھارتیہ جنتاپارٹی کامقصدبابری مسجدکے معاملے کوگرم رکھناہے کیونکہ سبھی جانتے ہیں کہ بی جے پی نفرت کی کھیتی کرمرکزکے اقتدارپرقابض ہوئی ہے۔ کابینہ وزیرمحمداعظم خا ں باب علم واقع سماجوادی پارٹی کے صدردفترپرپریس کانفرنس کو خطاب کررہے تھے۔ انھوں نے کہاکہ ہاشم انصاری ہمارے بزرگ ہیں اوروہ عمرکے اس دورسے گزررہے ہیں جب بھولنے کامرض گھیرلیتاہے۔ اس لئے میںیہ واضح کرناچاہتاہوں کہ بابری مسجدمقدمہ میں سنی سینٹرل وقف بورڈ بھی فریق ہے۔اس لئے کسی کے پیروی کرنے یانہ کرنے سے مقدمہ پرکوئی فرق نہیں آئے گا۔انھوں نے کہاکہ اب کسی سیاسی لیڈریاحکومت کے ذمہ دارسے بات کراس مسئلے کاحل ممکن نہیں کیونکہ آج سے قبل بھی ایک وقت میں مرکزاورصوبے میں بھارتیہ جنتاپارٹی برسراقتداررہی ہے لیکن اس کامقصدنفرت کی فصل اگاناہے۔ایک سوال کے جواب میں اعظم خاں نے کہاکہ سادھوی نرنجن جیوتی نے اپنے غیرمہذبانہ ، بدبختانہ اورملک کی 68فیصدآبادی کوزلیل ورسواکرنے والے بیان پرمعافی نہیں مانگی ہے جوپارلیمنٹ کی کاروائی دیکھ کرثابت ہوتاہے لیکن افسوس کہ ملک کے وزیراعظم نریندرمودی اپنے بیان سے پارلیمنٹ اورملک کی عوام کوگمراہ کرہے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ وزیراعظم کایہ بیان کہ سادھوی نے معافی مانگ لی ہے فاشسٹوں کی سونچ اور طریقہ کارکے عین مطابق ہے۔ کہ غلط بات کو اس قدرمضبوطی سے رکھاجائے کہ اس کے سچ ہونے کاگمان ہونے لگے۔ اعظم خاں نے مرکزی وزیرمملکت مختارعباس نقوی کانام لئے بغیرکہاکہ ایک مرکزی وزیرنے رامپورمیں شوگرفیکٹری کی کوٹھیوں پرقبضہ کررکھاہے اوریہی کرداراپنے اپنے علاقوں میں دیگروزراء کابھی ہے۔ انھوں نے وزیراعظم سے رام پورشوگر فیکٹری کی مقبوضہ کوٹھیوں کوخالی کرانے کامطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ اگرصوبائی سرکارنے ان کوٹھیوں پرسے قبضہ آزاد کرایاتوہم پرزیادتی کاالزام عائدکیاجائے گا۔ انھوں نے مرکزی سرکارپرمحکمہ تعمیرات عامہ اورمحکمہ اقلیتی بہبودکومختلف منصوبوں کے تحت دی جانے والی رقم کوروکنے کابھی الزام لگایا۔

...


Advertisment

Advertisment