Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 09:08 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

معالجین کے مشورے کے بغیر دوا لینا جسم انسانی پر منفی اثرات کا سبب

 

جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج میں انٹرنیشنل سمپوزیم آن سیف میڈیسن اینڈ سیف پیشینٹ اور سوپی کان کی14
ویں سالانہ کانفرس میں انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے قومی صلاح کار ڈاکٹر ایس ایس اگروال کا اظہار خیال

فہمیدہ پروین

علی گڑھ، یکم دسمبر(ایس ٹی بیورو) علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج کے فارماکولوجی شعبہ کے زیرِاہتمام منعقدہ انٹرنیشنل سمپوزیم آن سیف میڈیسن اینڈ سیف پیشینٹ اور سوپی کان کی14ویں سالانہ کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے انڈین میڈیکل ایسو سی ایشن کے قومی صلاح کار ڈاکٹرا یس ایس اگروال نے کہا کہ بغیر معالجین کے مشورے کے دوا نہیں لینا چاہئے کیونکہ اس سے انسانی جسم پر منفی اثرات بھی پڑ سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس سیمینار سے نہ صرف معالجین بلکہ فارماسسٹ اور نرسوں کو بھی فائدہ پہونچے گا۔نمس یونیورسٹی جے پور کے وائس چانسلر پروفیسر کے سی سنگھل نے کہا کہ اس سیمینار میں ادویات سے متعلق محفوظ نکات سامنے آئیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس موضوع پر ملک بھر میں بڑے پیمانے پر سیمینار منعقد کئے جانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کی حفاظت سب سے ا ہم ہے اور یہ ضروری ہے کہ ادویات کے زیادہ استعمال سے بچا جائے۔نیدر لینڈ سے آئے ڈاکٹر ایزن وین زین بروک نے کہا کہ یہ سیمینار بہت صحیح وقت پر منعقد کیاگیا ہے اس سے فارماکووجیلینس پر ایک لائحۂ عمل طے کرنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ ایجوکیشنل سسٹم کو بھی بنانے میں مدد ملے گی اور میڈیکل پیشہ سے وابستہ سبھی افراد اپڈیٹ رہیں گے۔وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل ضمیر الدین شاہ ( ریٹائرڈ) نے کہا کہ ادویات کے منفی اثرات کی رپورٹ ہونا بہت ضروری ہے اور میڈیکل پیشہ سے وابستہ تمام افراد کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس پر نظر رکھیں۔پرو وائس چانسلر برگیڈیئر ایس احمد علی ( ریٹائرڈ) نے کہا کہ یہ سمپوزیم خیالات کے تبادلہ میں معاون ثابت ہوگااور شرکاء اس سے کافی مستفیض ہوں گے۔میڈیسن فیکلٹی کی ڈین پروفیسر شاہ جہاں بانو نے کہا کہ ا دویات کے منفی اثرات موت کا سبب بھی بن سکتے ہیں اور اس کو فارماکووجیلینس کے ذریعہ ہی چیک کیا جا سکتاہے۔جے این میڈیکل کالج کے پرنسپل ا ور سی ایم ا یس پروفیسر طارق منصور نے کہا کہ ادویات کے منفی اثرات کو سامنے لایا جائے تاکہ مستقبل میں ان پر بہتر سے بہتر کام ہوسکے۔آرگنائزنگ سکریٹری ڈاکٹر ایس ضیاء الرحمن نے حاضرین کا شکریہ ادا کیا جبکہ ڈاکٹر سلمان شاہ نے نظامت کے فرائض انجام دئے۔اس موقعہ پر سوپی کے سکریٹری ڈاکٹر سندیپ اگروال، خازن ڈاکٹر گووند موہن اور آرگنائزنگ کمیٹی کے صدر پروفیسر راحت علی خاں بھی موجود تھے۔

...


Advertisment

Advertisment